کانگریس کو انکم ٹیکس کیس میں راحت، کارروائی مؤخر

Source: S.O. News Service | Published on 2nd April 2024, 11:09 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 2/ اپریل (ایس او نیوز /ایجنسی) یکے بعد دیگرے انکم ٹیکس کے نوٹس سے پریشان کانگریس کو اس کے خلاف  سپریم کورٹ  سے رجوع کرنے کے  بعد بڑی راحت ملی ہے۔ عدالت میں سوالات کے گھیرے میں آنے کےبعد محکمہ انکم ٹیکس نے اپنے موقف کو تبدیل کر لیا ہے اور یقین دہانی کرائی ہے کہ24 جون تک یعنی عام انتخابات کے مکمل ہونے تک وہ کانگریس کے خلاف اس معاملے میں کوئی کارروائی  نہیں کریگا۔ واضح رہے کہ گزشتہ چند دنوں میں یکے بعد دیگرے کئی نوٹس بھیج کر  انکم ٹیکس محکمہ نے کانگریس سے مجموعی طور پر ۳؍ ہزار ۵۶۷؍ کروڑ روپے کی ادائیگی کا مطالبہ کیا ہے۔ اس  کے علاوہ وہ پارٹی کے کھاتوں سے پہلے۱۳۵؍ کروڑ نکال چکا ہے۔ کانگریس نے سپریم کورٹ میں  اسے بھی چیلنج کیا ہے۔ 

کانگریس نے انکم ٹیکس محکمہ کے ذریعہ اپنے کھاتوں کو منجمد کئے جانے اور ٹیکس گوشوارے میں واجبات کی ادائیگی کیلئے ابھی تک ساڑھے تین ہزار کروڑ روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کئے جانے کے خلاف سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا۔عدالت کی طرف سے اس معاملہ میں کسی سخت احکامات کے خدشہ کو محسوس کرتے ہوئے سالیسٹر جنرل تشار مہتا نے خود ہی عدالت کے سامنے یہ یقین دہانی کرائی کہ انکم ٹیکس محکمہ انتخابات کے دوران کسی پارٹی کیلئے کوئی مسئلہ پیدا کرنا نہیں  چاہتا۔ انہوں نے جسٹس بی وی ناگرتھناکی سربراہی  والی بنچ کے سامنے کہا کہ کانگریس سے ٹیکس کے واجبات کے طور پر اس سال ۱۳۴؍ کروڑ روپے کی ادائیگی جبکہ اضافی ۱۷۰۰؍ کروڑ روپے کا مطالبہ پہلے طے کئے گئے ضابطے کے مطابق  ہیں۔ انہوںنے مزید کہا کہ چونکہ الیکشن ہورہاہے، اس لیے جب تک الیکشن کے بعد معاملہ نہیں سنا جاتا ہم اس وقت تک رقم کی وصولی کیلئے کوئی کارروائی نہیں کریں گے۔

 مرکز کی طرف سے اس رعایت پر کانگریس کے سینئر لیڈر اور وکیل ابھیشیک منو سنگھوی نے حیرانی کا اظہار کیا ۔سالیسٹر جنرل کے بیان کے جواب میںابھیشیک منو سنگھوی نے کہاکہ وہ حیران ہیں اور ان کے پاس اس پر کہنے کیلئے کوئی لفظ نہیں ہے۔ منو سنگھوی ہی کورٹ میں پارٹی کی پیروی کررہے تھے۔ اس پر جسٹس بی وی ناگرتھنا نے  کہاکہ ’’ہمیشہ کسی کے بارے میں منفی نہیں سوچنا چاہیے۔‘‘ اس کے بعد عدالت نے سالیسٹر جنرل کے بیان کو ریکارڈ پر لیتے ہوئے معاملہ کی سماعت میرٹ پر کئے جانے کا عندیہ دیا۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز ہی تاریخی رام لیلا میدان میں اپوزیشن نے اپنی ریلی میں حکومت کے سامنے پانچ نکاتی مطالبہ پیش کرتے ہوئے تفتیشی ایجنسیوں اور انکم ٹیکس محکمہ کی زور زبردستی کی کارروائیوں پر روک لگانے کا مطالبہ کیا تھا۔

 دریں اثناء کانگریس کی جنرل سیکریٹری پرینکا گاندھی نے پارٹی پر انکم ٹیکس کے ذریعہ ساڑھے ۳؍ ہزار کروڑ روپے سے زائد کا جرمانہ عائد کئے جانے پر سوال اٹھایا۔انہوں نے نشاندہی کی کہ الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر دستیاب بی جےپی کےاکاؤنٹ کے مطابق ۲۰۱۷ء اور ۲۰۱۸ء میں ایک ہزار ۲۹۷؍ لوگوں نے نام،پتہ کے بغیر بی جےپی کو ۴۲؍ کروڑ روپے دیئے۔ سیاسی پارٹیوں کے پیسے کے حساب کتاب کے اصولوں کی خلاف ورزی کرنے پر بی جےپی کو ۴؍ہزار ۶۰۰؍کروڑ روپے کے جرمانہ کا سامنا ہے، لیکن اس پر کوئی آواز نہیں اٹھتی۔ سوال کیا جارہاہے کہ جو اصول کانگریس کیلئے ہے  وہی بی جے پی پر کیوں لاگو نہیں ہوتا؟ پرینکا گاندھی نے کہا کہ دراصل انتخابات کے وقت یہ یکطرفہ کارروائی ہماری اور۱۴۰؍کروڑ ہندوستانیوں کی آواز کو کمزور کرنے کے لیے کی جارہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی نے الیکٹورل بانڈ کے ذریعے دنیا کا سب سے بڑا گھوٹالہ کیا، وزیر اعظم بدعنوانی کے چیمپین ہیں! راہل گاندھی

راہل گاندھی نے کانگریس اور سماجوادی پارٹی کی مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی کو بدعنوانی کا چیمپین قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے الیکٹورل بانڈ کے ذریعے بھتہ خوری کی اور دنیا کا سب سے بڑا گھوٹالہ انجام دیا۔ راہل گاندھی نے سوال کیا کہ اگر ...

بی جے پی اپنی ناکامیوں سے توجہ بھٹکانے کے لیے مذہب کی سیاست کر رہی، سچن پائلٹ نے الیکشن کمیشن پر بھی اٹھائے سوال

کانگریس لیڈر سچن پائلٹ نے جموں و کشمیر میں آج انتخابی تشہیر کے دوران بی جے پی حکومت کو تو تنقید کا نشانہ بنایا ہی، الیکشن کمیشن کو بھی کٹہرے میں کھڑا کر دیا۔ انھوں نے منگل کے روز ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب اپوزیشن پارٹیوں کے اکاؤنٹس پر لین دین سے متعلق روک لگائی گئی ...

بی جے پی و آر ایس ایس آئین کو تباہ کرنا چاہتی ہیں جبکہ کانگریس اسے بچانے کی کوشش کر رہی ہے: راہل گاندھی

کیرالہ کے وائناڈ میں کانگریس کے لیڈر راہل گاندھی نے بی جے پی پر سخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی و آر ایس ایس ملک کے آئین کو ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہیں جبکہ کانگریس اسے بچانے کی کوشش میں مصروف ہے۔ یہ بیان راہل گاندھی روڈ شو کے دوران دیا جس کو سن کر عوام پورے جوش میں دکھائی دی ...

لوک سبھا انتخابات 2024: کانگریس نے امیدواروں کی نئی فہرست جاری

کانگریس نے لوک سبھا انتخاب کے پیش نظر اپنے امیدواروں کی ایک نئی فہرست جاری کر دی ہے۔ اس فہرست میں جھارکھنڈ کی تین لوک سبھا سیٹوں پر امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا گیا ہے۔ جاری فہرست کے مطابق گوڈا سے دیپکا پانڈے سنگھ، چترا سے کرشنانند ترپاٹھی اور دھنباد سے انوپما سنگھ کو ...

مرکزی وزارت داخلہ کی دوسری منزل پر آتش زدگی، زیروکس مشین، کمپیوٹر اور دیگر دستاویزات خاکستر

آگ لگنے کے واقعات یوں تو ہوتے ہی رہتے ہیں مگر جب حکومت کے دفاتر میں آگ لگنے لگے تو معاملہ کچھ زیادہ ہی سنگین ہو جاتا ہے۔ آتش زدگی کا ایسا ہی ایک واقعہ دہلی میں مرکزی وزارت داخلہ کے دفتر میں پیش آیا ہے۔ اس حادثے میں کسی شخص کے متاثر ہونے کی تو کوئی خبر نہیں ہے البتہ زیروکس ...

تیجسوی یادو کا وزیراعظم پر سخت حملہ؛ 10 سالوں میں مودی جی نے صرف غریبی، بے روزگاری، مہنگائی اور جملہ دیا

لوک سبھا انتخاب سے قبل بیان بازیوں نے رفتار پکڑ لی ہے۔ برسراقتدار طبقہ اپنی خوبیاں بیان کر رہا ہے اور اپوزیشن لیڈران حکومت کی ناکامیوں و عوام مخالف پالیسیوں کو عوام کے سامنے رکھ رہے ہیں۔ اس درمیان تیجسوی یادو نے پٹنہ میں مرکز کی مودی حکومت پر آج زبردست حملہ کیا۔