بیلتھنگڈی: نفرت انگیز تقریر معاملےمیں رکن اسمبلی ہریش پونجا اور منتظم کے خلاف معاملہ درج

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 26th May 2023, 1:19 AM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بیلتھنگڈی: 25؍ مئی (ایس اؤ نیوز) بیلتھنگڈی پولس نے نفرت انگیز تقریر کرنے کے الزام میں رکن اسمبلی ہریش پونجا اور ایک شخص کے خلاف کیس درج کرلیا ہے۔ رکن اسمبلی ہریش پونجا نے اپنی ایک حالیہ تقریر میں وزیر اعلیٰ سدرامیاپر 24ہندوؤں کو قتل کرنے کا الزام لگایا تھا۔

بیلتھنگڈی کی نمیتا کے پجاری کی شکایت پر بیلتھنگڈی کی پولس نے اشتعال انگیز ی اور دو طبقات کے درمیان مذہبی اور نسلی نفرت پیدا کرنے کے الزام میں ہریش پونجا اور پروگرام کے منتظم جینت کوٹیان کے خلاف دفعہ 153،153(A) اور 505کے تحت کیس درج کرلیاہے۔

بیلتھنگڈی میں بی جے پی کی جانب سے 22مئی کو منعقدہ تہنیتی پروگرام میں رکن اسمبلی نے اپنی تقریر کے دوران بی جےپی کے سابق ضلعی یونٹ نگراں کار ستیہ جیت سورتکل کی طرف سے مخالف تشہیری مہم چلائے جانے پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا تھا۔مبینہ طورپر  رکن اسمبلی نے کہاتھا کہ ’’ستیہ اناّ اگر میں نےہندوتوا کے ساتھ دھوکہ کیاہوتا اور تم میرے خلاف مہم چلاتے تو مجھے قبول تھا۔ میں اس وقت بھی راضی رہتاجب میں ہندوتوا نظریے کی خلاف ورزی کیا ہوتا۔ لیکن آج میں تم سے پوچھتا ہوں کہ تم نے سدرامیا کے حق میں آخر ووٹ کیسےمانگا، جو 24ہندوؤں کے قاتل ہیں؟۔ تم کیسے کانگریس کے حق میں ووٹ مانگتے ہو ، جس نے بجرنگ دل پر پابندی عائد کرنےکی بات کی ہے۔ بیلتھنگڈی کے عوام تم سے سوال کررہے ہیں کہ تم کس طرح کے  ہندوتوا پر عمل پیرا ہو ‘‘۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں ووٹر بیداری مہم؛ سرکاری افسران نے طلبہ کے ساتھ نکالی ریلی؛ سو فیصد ووٹنگ کویقینی بنانے کی کوششیں

بھٹکل میں  صد فیصد ووٹنگ کا ٹارگٹ لے کر   اُترکنڑاضلعی انتظامیہ،  ضلع پنچایت، بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور تعلقہ پنچایت کے زیراہتمام  بھٹکل کے سرکاری آفسران  نے کالج طلبہ کو ساتھ لے کر  ووٹنگ بیداری مہم  کے تحت شاندار ریلی نکالی اور عوام پر زور دیا کہ وہ  کسی بھی صورت میں اپنی ...

بھٹکل میں مسلم رپورٹروں کی طرف سے غیر مسلم رپورٹروں کوپیش کی گئی عید الفطر کی مٹھائیاں

ورکنگ جرنلسٹ اسوسی ایشن   بھٹکل  کے مسلم رپورٹروں کی طرف سے بھٹکل کے غیر مسلم رپورٹروں کو عید الفطر کی مناسبت سے مٹھائیاں تقسیم کی گئیں اور اُنہیں عید کے تعلق سے  معلومات فراہم کی گئیں۔

بھٹکل: پی یو سی دوم میں انجمن پی یو کالج(بوائز) کو سائنس اسٹریم میں ملی صد فیصد کامیابی

سکینڈ پی یو سی  سائنس اسٹریم میں  انجمن بوائز پی یو کالج کو صد فیصد کامیابی ملی ہے، اور 61  طلبہ میں سے سبھی 61 طلبہ کامیاب ہوگئے ہیں۔ اس بات کی اطلاع کالج پرنسپال  یوسف کولا  نے دی۔یاد رہے کہ 10 اپریل کو آن لائن کے ذریعے نتائج ظاہر کئے گئے تھے،  لیکن  اب    پی یو  بورڈ  کی طرف سے ...

کنداپور میں دستور کی حفاظت کے لئے دلت تنظیموں کی ریلی 

دیش کا دستور وضع کرنے والے ڈاکٹر بھیم راو امبیڈکر کے 133 ویں جنم دن پر  کنداپور شاستری سرکل کے پاس منعقدہ دلت تنظیموں اور دیگر ہم خیال اداروں کی مشترکہ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے سینئر دانشور پروفیسر فنی راج نے کہا کہ اس وقت ملک میں دستوری مراعات اور حقوق کو ختم کرنے کی کوشش کی جا ...

منگلورو میں وزیر اعظم مودی کا زبردست روڈ شو 

پارلیمانی الیکشن میں منگلورو حلقے سے بی جے پی امیدوار کیپٹن برجیش چوٹا اور اڈپی - چکمگلورو حلقوں سے بی جے پی امیدوار کوٹا سرینواس پجاری کے حق میں تشہیری مہم کے لئے وزیر اعظم نریندرا مودی نے منگلورو شہر میں ایک زبردست روڈ شو کیا جس میں بی جے پی کارکنان، لیڈران اور عوام کے ایک جم ...

بی جے پی نے کانگریس ایم ایل اے کو 50 کروڑ روپے کی پیشکش کی؛ سدارامیا کا الزام

کرناٹک کے وزیر اعلی سدارامیا نے ہفتہ کو بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر الزام لگایا کہ وہ کانگریس کے اراکین اسمبلی کو وفاداری تبدیل کرنے کے لیے 50 کروڑ روپے کی پیشکش کرکے 'آپریشن لوٹس' کے ذریعے انکی حکومت کو غیر مستحکم کرنے کی کوششوں میں ملوث ہے۔

لوک سبھا انتخاب 2024: کرناٹک میں کانگریس کو حاصل کرنے کے لیے بہت کچھ ہے

کیا بی جے پی اس مرتبہ اپنی 2019 لوک سبھا انتخاب والی کارکردگی دہرا سکتی ہے؟ لگتا تو نہیں ہے۔ اس کی دو بڑی وجوہات ہیں۔ اول، ریاست میں کانگریس کی حکومت ہے، اور دوئم بی جے پی اندرونی لڑائی سے نبرد آزما ہے۔ اس کے مقابلے میں کانگریس زیادہ متحد اور پرعزم نظر آ رہی ہے اور اسے بھروسہ ہے ...

تعلیمی میدان میں سرفہرست دکشن کنڑا اور اُڈپی ضلع کی کامیابی کا راز کیا ہے؟

ریاست میں جب پی یوسی اور ایس ایس ایل سی کے نتائج کا اعلان کیاجاتا ہے تو ساحلی اضلاع جیسےدکشن کنڑا  اور اُ ڈ پی ضلع سر فہرست ہوتے ہیں۔ کیا وجہ ہے کہ ساحلی ضلع جسے دانشوروں کا ضلع کہا جاتا ہے نے ریاست میں بہترین تعلیمی کارکردگی حاصل کی ہے۔

این ڈی اے کو نہیں ملے گی جیت، انڈیا بلاک کو واضح اکثریت حاصل ہوگی: وزیر اعلیٰ سدارمیا

کرناٹک کے وزیر اعلیٰ سدارمیا نے ہفتہ کے روز اپنے بیان میں کہا کہ لوک سبھا انتخاب میں این ڈی اے کو اکثریت نہیں ملنے والی اور بی جے پی کا ’ابکی بار 400 پار‘ نعرہ صرف سیاسی اسٹریٹجی ہے۔ میسور میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے سدارمیا نے یہ اظہار خیال کیا۔ ساتھ ہی انھوں نے کہا کہ ...