میسورو کے ڈپٹی کمشنر راجندر کے تبادلہ کے بعد کھڑا ہوگیاسیاسی تنازعہ

Source: S.O. News Service | Published on 6th July 2024, 5:39 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،6/جولائی(ایس او نیوز/ایجنسی) کرناٹک کی کانگریس حکومت کی طرف سے میسورو کے ڈپٹی کمشنر کے وی راجندر کے تبادلے نے سیاسی تنازعہ کھڑا کر دیا ہے۔ میسور و اربن ڈیولپمنٹ اتھارٹی (ایم یو ڈی اے) میں سائٹ الاٹمنٹ میں بے ضابطگیوں سے متعلق گھوٹالے کو بے نقاب کرنے کی وجہ سے مسٹر راجندر کا ڈپٹی کمشنر کے عہدے سے تبادلہ کردیا گیا ہے۔

یہ معاملہ ایم یو ڈی اے کے ذریعہ 50:50 اسکیم کے تحت زمین کھونے والوں کو متبادل جگہوں کی الاٹمنٹ میں بے ضابطگیوں سے متعلق ہے، لیکن یہ پتہ چلا کہ قانون کوسابقہ طورپر لاگو کیا گیاتھا۔

اس کے علاوہ، زمین کھونے والوں سے حاصل کی گئی جائیداد کے مقابلے زیادہ مارکیٹ اور رہنمائی کی قدر والے علاقوں میں معاوضے کی جگہیں تقسیم کی گئیں۔ فائدہ اٹھانے والوں میں سے ایک وزیر اعلیٰ سدارامیا کی اہلیہ ہیں اور اس لیے اس معاملے نے سیاسی رنگ بھی اختیار کر لیا ہے۔

راجندر کے تبادلے نے سیاسی ماحول کو گرما دیا ہے، خاص طور پراس لئے کیونکہ اس میں وزیر اعلیٰ سدارامیا اور ان کی اہلیہ پاروتی شامل ہیں۔

مسٹر راجندر کو بنگلورو میں سیاحت کا نیا ڈائریکٹر مقرر کیا گیا ہے اور انڈین ایڈمنسٹریٹو سروس (آئی اے ایس) کے سینئر افسر جی لکشمی کانت ریڈی ان کی جگہ میسور کے ڈپٹی کمشنر ہوں گے۔

مسٹر راجندر ان 21 آئی اے ایس افسران میں سے ایک ہیں جن کا تبادلہ کیا گیا ہے اور پہلی نظر میں ان کا تبادلہ ‘باقاعدہ’ لگتا ہے جو کہ ایسا نہیں ہے لیکن جاری الزامات کے پیش نظر ان کا دوبارہ تبادلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ جب مسٹر راجندر کو الزامات کا علم ہوا تو انہوں نے ایم یو ڈی اے کے عہدیداروں کو خط لکھ کر وضاحت طلب کی۔ لیکن جب بار بار یاد دہانی کے باوجود کوئی جواب نہیں ملا تو انہوں نے اس مسئلہ کو آگے بڑھاتے ہوئے شہری ترقیات کے سکریٹری کی توجہ مبذول کرائی جنہوں نے تحقیقات کا حکم دیا۔

بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما آر اشوک کے الزامات کے بعد سیاسی تنازعہ شدت اختیار کر گیا۔ مسٹر اشوک نے دعویٰ کیا کہ شہری ترقی کے وزیر براتی سریش نے وزیر اعلیٰ اور ان کی اہلیہ سے جڑے الاٹمنٹ سے متعلق فائلوں کو ایم یو ڈی اے دفتر سے ہٹا دیا اور معاملے کو چھپانے کی کوشش میں انہیں بنگلورو لے گئے۔

ان سنگین الزامات کے ساتھ ساتھ مسٹر راجندر کے تبادلے نے موجودہ انتظامیہ کی ایمانداری اور شفافیت کو سوال کھڑا کردیاہے نیزسیاسی لیڈراور عوام ملوث افراد سے جواب اور جوابدہی کا مطالبہ کررہے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بینگلورو: دھوتی میں ملبوس کسان کو داخلہ نہ دینے کا معاملہ : حکومت نے دیا سات دن کے لئے مال بند کرنے کا حکم 

دو دن قبل بینگلورو کے ایک مال میں ایک عمر رسیدہ کسان اور اس کے اہل خانہ  کو اس وجہ سے داخلہ دینے سے انکار کیا گیا تھا کہ وہ کسان دھوتی میں ملبوس تھا ۔ اس واقعے کی ویڈیو کلپ وائرل ہونے کے بعد اس کے خلاف آوازیں اٹھنے لگی تھیں اور مال کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا تھا ۔ 

کرناٹک پرائیویٹ فرموں میں کناڈیگاس کے لیے 100فیصد کوٹہ لازمی کرنے والا بل منظور

کرناٹک کی کابینہ نے ایک بل کو منظور کیا ہے جس میں کننڈیگاس کو گروپ سی اور ڈی کے عہدوں کے لیے نجی شعبے میں 100 فیصد ریزرویشن لازمی قرار دیا گیا ہے،  وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہا۔یہ فیصلہ پیر کو ہونے والے کابینہ کے اجلاس میں کیا گیا۔

اگر میرے بیٹے نے کوئی جرم کیا ہے تو پھانسی دے دو ؛پرجول ریونا کے والد ایچ ڈی ریونا کا بیان

جے ڈی ایس ایم ایل اے اور سابق وزیر ایچ ڈی۔ ریونا نے کہا ہے کہ ان کے بیٹے پرجول ریوانا، جو کئی خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزامات کا سامنا کر رہے ہیں، اگر اس نے کوئی جرم کیا ہے تو اسے پھانسی دی جانی چاہیے۔