کاروار: 13 سال قبل ضبط کیا گیا میگنیز بالآخر چین کے لئے رفت

Source: S.O. News Service | Published on 29th May 2023, 11:43 PM | ساحلی خبریں |

کاروار، 29/ مئی (ایس او نیوز) میگنیز کی غیر قانونی رفت پر روک لگانے کے دوران محکمہ فوریسٹ نے سال 2010میں بڑی مقدار میں میگنیز ضبط کرنے کے بعد کاروار بندرگاہ میں ذخیرہ کرکے رکھا تھا ۔ اب مقامی عدالت سے اجازت ملنے کے بعد اسے نیلام کیا گیا اور اس میں سے 37,320 میٹرک ٹن میگنیز کی کھیپ چین کے لئے روانہ کی گئی ہے۔
    
خیال رہے کہ ضبط کیے گئے میگنیز کے ذخیرے سے مبینہ طور پر 50 ہزار میٹرک ٹن میگنیز چوری ہوگیا تھا۔ اس سلسلے میں پولیس کے پاس شکایت درج کی گئی تھی اور کھدائی کرنے والی کمپنیوں نے بندرگاہ میں موجود بقیہ میگنیز کو فروخت کرنے کی عدالت سے اجازت مانگی تھی۔ عدالت نے 32 ہزار میٹرک ٹن میگنیز فروخت کرنے کی اجازت دی مگر کوئی بھی خریدار آگے نہیں آیا اور یہ ذخیرہ یونہی بندرگاہ میں پڑا رہا۔
    
بتایا جاتا ہے کہ حال ہی میں مہاراشٹرا کی ایک کمپنی نے اس میں دلچسپی دکھائی اور اب اس نے یہ میگنیز خرید کر چین کو رفت کرناشروع کردیا ہے۔ کاروار پورٹ کے ڈائریکٹر سی سوامی نے بتایا کہ صرف راج محل مائننگ کمپنی کے حصے کا میگنیز ابھی نیلام ہوا ہے جسے ایکسپورٹ کیاگیا ہے۔ ابھی ویدانتا کمپنی کا میگنیز ایکسپورٹ ہونا باقی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ صرف وہی میگنیز ایکسپورٹ کیا جا رہا ہے جو کہ کاروار بندرگاہ میں پڑاہواہے۔ اور جو میگنیز بیلیکیری میں ذخیرہ ہے اس کا مسئلہ حل ہونے تک وہ یونہی پڑا رہے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار: بس کو اوور ٹیک کرنے کی کوشش میں بائک سوار اُسی بس کی زد میں آکر ہلاک

  بس کو اوورٹیک کرنے کی کوشش میں اُسی بس کی زد میں آکر بائک سوار ہلاک ہوگیا جس کی شناخت  انکولہ تعلقہ کے شرگونجی  قصبہ کے رہنے والے  جیتندر گوڈا کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ حادثہ کاروار کے بینگا نیشنل ہائی وے 66 پر  جمعہ کو پیش آیا۔

بھٹکل میں ہرپل آن لائن کی جانب سے منعقد ہوا کامیاب طرحی نعتیہ مشاعرہ۔ ایک مصرع پر ١٢ شعراء کا مختلف انداز سامعین کی توجہ کا مرکز

نعت گوئی نہ صرف یہ کہ کار ثواب ہے بلکہ نعت سننا نعت پڑھنا نعت کہنا سب کچھ ذریعہ نجات بھی بن سکتا ہے۔اردو کے ایک ادیب نے غزل کے سلسلے میں جو کہا تھا کہ غزل چاول پر قل ھو اللہ لکھنے کے مترادف ہے تو مجھے محسوس ہوتا ہے کہ نعت لکھنا نعت کہنا اس سے بھی زیادہ مشکل کام ہے۔

بھٹکل میں پھیل رہا ہے ڈینگی بخار؛ کئی مریضوں کا مینگلوراسپتالوں میں ہورہا ہے علاج

شہر میں ایک طرف وقفہ وقفہ سے بارش کا سلسلہ جاری ہے وہیں ہرطرف مچھروں کی بھرمارپائی جارہی ہے، ایسے میں مچھروں سے پھیلنے والی وباء ڈینگی بخار بھی تیزی کے ساتھ پھیلنے کی خبریں موصول ہورہی ہیں۔ چونکہ بھٹکل کے اکثر لوگ سرکاری اسپتال میں اپنا علاج نہیں کراتے اور پرائیویٹ اسپتالوں ...