اتر کنڑا حلقے میں 11 امیدواروں کی ضمانت ضبط ؛ لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی اور کانگریس اُمیدوار کے بعد تیسرے نمبر پر رہا نوٹا

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 7th June 2024, 10:30 PM | ساحلی خبریں |

    کاروار 7 / جون (ایس او نیوز) اتر کنڑا حلقے میں لوک سبھا انتخابات کے نتائج کا جائزہ لینے پر معلوم ہوتا ہے کہ یہاں پر مسلسل تیسری مرتبہ بی جے پی اور کانگریس کے بعد تیسرے نمبر پر ووٹوں کی سب سے زیادہ تعداد 'نوٹا' کے حصے میں آئی ہے ۔

    اس مرتبہ لوک سبھا سیٹ کے لئے یہاں 13 امیدوار میدان میں اترے تھے ۔ ان میں قومی پارٹیوں کے دو علاقائی پارٹیوں کے تین اور آٹھ آزاد امیدواروں تھے ۔ بی جے پی اور کانگریس کے امیدواروں کو چھوڑیں تو بقیہ 11 امیدواروں نے ایک تو 'نوٹا' سے بھی کم ووٹ حاصل کیے اور جتنے ووٹ ان کو ملے وہ ان کی ضمانت کی رقم بچانے کے لئے بھی ناکافی رہے ۔

    یاد رہے کہ الیکشن کمیشن کی ہدایت کے مطابق عام زمرے کے امیدوار کو الیکشن نامزدگی فارم کے ساتھ 25 ہزار روپے اور درج فہرست ذات اور قبائل سے تعلق رکھنے والے امیدوار کے لئے  12500 روپے زرِ ضمانت جمع کرنا پڑتا ہے ۔ الیکشن کے دوران جتنے ووٹ پول ہوئے ہیں ان کا کم از کم 1/6 (چھٹا) حصہ حاصل کرنے میں اگر کوئی امیدوار کامیاب رہتا ہے تو اس کی ضمانت کی رقم واپس ملتی ہے ورنہ وہ بحق سرکار ضبط ہو جاتی ہے ۔ 

    جملہ 12,63,871 ووٹوں والے اتر کنڑا حلقے میں کسی بھی امیدوار کو  اپنی ضمانت بچانے کے لئے کم از کم 2,10,645 ووٹ ملنا ضروری تھا ، مگر اس الیکشن میں  بی جے پی اور کانگریس  کےدو امیدواروں کے سوا بقیہ 11 امیدواروں میں سے کوئی بھی اس نشانے کے قریب بھی نہیں پہنچ سکا جس کی وجہ ان کی ضمانت ضبط ہوگئی ۔

    ووٹنگ مشین میں  'نوٹا' کا آپشن  سال 2014  کے لوک سبھا انتخابات کے دوران جاری مہیا کیا گیا تھا ۔ اُس وقت اتر کنڑا حلقے میں 16,277 ووٹ نوٹا کے زمرے میں پول ہوئے تھے ۔ 2019 میں نوٹا کے کھاتے میں 16,017 ووٹ آئے ۔ مگر اس بارہ یہ تعداد کم ہو کر 10,176 پر آ گئی ، یعنی بی جے پی اور کانگریس اُمیدوار کے بعد نوٹا تیسرے نمبر پر رہا۔

ایک نظر اس پر بھی

اتر کنڑا میں نیشنل ہائی وے پر حادثے میں موت ہونے پر افسران کے خلاف درج ہوگا مقدمہ - نومنتخب رکن پارلیمان کاگیری نے دی وارننگ

نومنتخب رکن پارلیمان وشویشورا ہیگڑے کاگیری نے محکمہ جاتی افسران کے ساتھ منعقدہ اپنی پہلی میٹنگ میں ضلع پولیس سپرنٹنڈنٹ کو سخت ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ اگر ضلع اتر کنڑا میں غیر سائنٹفک انداز میں کیے گئے نیشنل ہائی وے کے تعمیراتی کام کی وجہ سے حادثہ رونما ہوتا ہے اور اس میں عام ...

بھٹکل تعلقہ ہاسپٹل رکھشا سمیتی کی میٹنگ میں وزیر منکال وئیدیا نے دیا تیقن : 250 بستروں والا اسپتال جلد ہوگا منظور

بھٹکل تعلقہ ہاسپٹل کے ہال میں ایڈمنسٹریٹیو میڈیکل آفیسر ڈاکٹر سویتا کامت کی صدارت میں منعقدہ ہاسپٹل رکھشا سمیتی کی میٹنگ میں ضلع انچارج وزیر منکال وئیدیا نے تیقن دیا کہ یہاں 250 بستروں والا ہاسپٹل جلد ہی منظور ہو جائے گا

بھٹکل پولیس گراونڈ میں راستے پر لگے بیریکیڈس - اسسٹنٹ کمشنر نے دیا 'جوں کی توں حالت' برقرار رکھنے کا حکم

پولیس میدان سے گزرنے والے عام پیدل راستے پر پولیس کی طرف سے لگائی گئی رکاوٹوں کے سلسلے میں بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر ڈاکٹر نئینا نے اس زمین کا سروے مکمل ہونے تک جوں کی توں حالت برقرار رکھنے کے احکام جاری کیے

منگلورو میں طلباء کے والدین کو دھمکی والے فون کالس - پولیس کمشنر نے کہا : پولینڈ اور پاکستان کے کوڈ کا ہوا ہے استعمال

منگلورو شہر کے علاوہ سورتکل میں 11 اور 12 جون کو کالجوں میں زیر تعلیم طلباء کے والدین کو ان کے بچوں کے اغوا یا سنگین جرائم میں گرفتاری کی بات کہتے ہوئے تاوان کی رقم طلب کرنے کے  جو دھمکی والے فون کالس آئے تھے اس کے سلسلے میں پولیس کمشنر نے انوپم اگروال نے بتایا کہ فریب کاروں نے فون ...

بھٹکل میں وزیر منکال وئیدیا نے افسران سے کہا : کام کرنا ہے تو رہیں ورنہ دوسری جگہ چلے جائیں 

اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر میں مانسون اور قدرتی آفات سے متعقلہ معاملات سے نمٹنے کے اقدامات کا جائزہ لینے کے لئے کل جو میٹنگ منعقد ہوئی تھی اس میں افسران سے خطاب کرتے ہوئے ضلع انچارج وزیر منکال وئیدیا نے کہا جن لوگوں کو کام کرنے میں دلچسپی ہے وہ لوگ یہاں رہیں اور جنہیں دلچسپی نہیں ہے ...

منگلورو : بی جے پی کارکنان کے خلاف کیس داخل کرنے میں کانگریس کا ہاتھ ہے ۔ کیپٹن چوتا کا الزام

دکشن کنڑا حلقے سے بی جے پی کے نومنتخب رکن پارلیمان کیپٹن برجیش چوتا نے کانگریس پر الزام لگایا کہ اس کے دباو کی وجہ سے بولیار چاقو زنی معاملے میں پولیس نے بی جے پی کارکنان پر کیس داخل کیا ہے ۔