زماٹو نے 540 ملازمین کو کیا ملازمت سے فارغ، آٹومیشن کو بتایا وجہ

Source: S.O. News Service | Published on 8th September 2019, 5:57 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،8ستمبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)آن لائن فوڈ ڈلیوری کمپنی زمیٹو نے 540 ملازمین کو نوکری سے نکال دیا ہے۔کمپنی نے یہ قدم آٹومیشن کی وجہ سے اٹھایا ہے۔ہفتہ کو کمپنی نے ایک بیان جاری کر کے بتایا کہ گزشتہ چند ماہ کے دوران بڑے پیمانے پر آٹومیشن ہوا ہے، جو ملازمین کی چھٹنی کی بڑی وجہ ہے۔گڑگاؤں میں قائم زمیٹو نے صارفین کے لئے سپرٹ ٹیم، مرچنٹس اورڈلیوری بوائے میں سے دو ماہ کے اندر اندر 540 لوگوں کو نکال دیا۔کمپنی کا کہنا ہے کہ ہمارے ٹیکنالوجی پرڈکٹس اور پلیٹ فارم میں اچھائی بہتری اور کاروبار بھی مسلسل بڑھ رہا ہے۔اس کی وجہ سے براہ راست آرڈر متعلق سپرٹ کوریج کم ہوئی ہیں۔سروس سے منسلک مسائل حل کرنے میں ہماری رفتار اضافہ ہوا ہے۔ کمپنی کے مطابق اب ہمارے صرف 7.5 فیصد آرڈرز کے لئے اسپرٹ کی ضرورت ہوتی ہے، جو مارچ میں 15 فیصد تھی،اب زیادہ تر شکایات چاباٹ سے سلجھا لی جاتی ہیں، جس کی وجہ سے رفتار میں اضافہ ہوا ہے اور کسٹمر سروس کی کوالٹی بھی۔زمیٹو کا کہنا ہے کہ 10فیصد عملے کی چھٹی کرنے کا فیصلہ لینا اتنا آسان نہیں تھا،نکالے جانے والے ملازمین کو کمپنی 2-4 مہینے کی برخاستگی تنخواہ دے رہی ہے، جو ان کی تنخواہ کے مطابق ہوگا اور ساتھ ہی نوکری تلاش کرنے میں ان کی مدد بھی کر رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سولیا: پہاڑی مہم جو ٹیم کا ایک رکن ہوگیا لاپتہ۔قریبی جنگلات میں جاری ہے تلاشی مہم 

بنگلورو کی ایک کمپنی کے ملازمین کی ٹیم سبرامنیا میں واقع پہاڑی ’کمارا پروتا‘ کو سر کرنے کی مہم پر نکلی تھی۔ لیکن واپسی کے وقت ٹیم کا ایک رکن جنگلات میں اچانک لاپتہ ہوگیا ہے، جس کی شناخت سنتوش (25سال) کے طور پر کی گئی ہے۔

سیلاب متاثرین سے وزیر اعظم کو کوئی ہمدردی نہیں منڈیا میں منعقدہ پرتیبھا پرسکار کے جلسہ سے سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا کا خطاب

ملک کے وزیر اعظم کو سیلاب متاثرین سے کوئی ہمدردی نہیں ہے۔ پچھلے ایک سو سال سے کبھی نہ دیکھا گیا سیلاب ریاست میں آیا ہے اور ہزاروں افراد کی زندگی تباہ ہوچکی ہے۔

آئی ایم اے فراڈ کیس کا ایک نیا موڑ، قدآور شخصیات راڈر پر، منصور خان نے سابق وزیر دیش پانڈے پر 5/کروڑ روپئے طلب کرنے کا الزام لگایا 

آئی ایم اے فراڈ کیس دن بدن نیا زاویہ اختیار کرتا جارہا ہے، اس کیس کے کلیدی ملزم اور آئی ایم اے کے سربراہ منصور خان نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق ریاستی وزیر اور سینئر کانگریس لیڈر آر وی دیش پانڈے نے آئی ایم اے کو 600کروڑ روپئے کا قرضہ حاصل کرنے کے لئے نو آبجیکشن سرٹی فکیٹ (این او سی) جاری ...