کرناٹک: بغیر کابینہ کے وزیراعلی یدی یورپا کے کام کرنے پر مچا گھمسان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th August 2019, 11:18 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،14اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)کرناٹک میں صرف ایک شخص کی حکومت ہونے پر کانگریس حملہ آور ہے۔18 دن بعد بھی وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا اپنی کابینہ کا قیام نہیں کر سکے ہیں۔کانگریس نے آئین کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ گورنر کابینہ کی مشاورت پر کام کرتے ہیں تو پھر 18 دن سے کس طرح بغیر کابینہ کے حکومت چل رہی ہے۔کانگریس کی طرف سے پارٹی کے ترجمان وی اگرپا نے گورنر کی خاموشی پر بھی سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ کیا ریاست میں آئین کے قوانین کے مطابق حکومت چل رہی ہے؟ ایک وزیر اعلی کو کیسے حکومت کہا جا سکتا ہے؟ کانگریس کے ترجمان نے کہا کہ گورنر کو اس مسئلے کو نوٹس میں لے کر حکومت برخاست کرنی چاہئے۔

وزراء کی فہرست فائنل کرنے کے لئے گزشتہ سات اگست کو دہلی پہنچے یدی یورپا کو بی جے پی صدر امت شاہ یہ کہہ کر لوٹا چکے ہیں کہ ابھی سیلاب ریلیف اور بحالی پر توجہ دیں۔کابینہ سے کہیں زیادہ ضروری عوام کی حفاظت ہے۔اب ذرائع بتا رہے ہیں کہ 15 اگست کے بعد 16 اگست کو یدی یورپا بی جے پی صدر امت شاہ سے ملنے کے لئے دہلی آ سکتے ہیں۔چونکہ کرناٹک میں جنتا دل (ایس) -کاگریس حکومت گرنے کے بعد اگرچہ تعداد بی جے پی کے حق میں ہیں، مگر زمین زیادہ مضبوط نہیں ہے۔ایسے میں یدی یورپا چاہتے ہیں کہ تمام مساوات کو ذہن میں رہ کر ہی وہ کابینہ بنائیں،جس سے کابینہ کو لے کر کسی طرح کی ناراضگی نہ رہے۔اس ناطے وہ مرکزی قیادت سے اس مسئلے پر مشاورت کے بعد ہی اپنی سطح سے وزراء کی فہرست فائنل کرنا چاہتے ہیں۔

اقلیت میں آنے کے بعد جنتا دل (ایس) -کاگریس مخلوط حکومت گر گئی تھی۔کئی دنوں کی اتھل پتھل کے بعد بی جے پی نے حکومت بنائی۔26 جولائی کو بی ایس یدی یورپا نے وزیر اعلی کے عہدے کا حلف لیا۔ان کے ساتھ کسی بھی وزیر نے حلف نہیں لیا تھا،کیونکہ اب تک بی ایس یدی یورپا بی جے پی کی اعلی قیادت کے ساتھ رائے شماری کرکے وزراء کی فہرست نہیں تیار کر سکے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

  مسلم متحدہ محاذ، جماعت اسلامی ہند اور کئی تنظیموں کے ایک نمائندہ وفدکا سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا سے ملاقات اور شہریت ترمیمی بل   کی مخالفت اور دستور کے تحفظ میں تعاون کرنے کی اپیل

مسلم متحدہ محاذ، جما عت اسلامی ہند، سدبھاؤ نا منچ بورڈ آف اسلامک ایجوکیشن کرناٹک، ایف ڈی سی اے، ایس آئی او، اے پی سی آر  اور مومنٹ فار جسٹس جیسے ہم خیال تنظیموں کی قیادت میں مسلم نمائندوں کا ایک وفد 7 / دسمبر 2019  ء  بروز سنیچر، سابق وزیر اعظم شری ایچ ڈی دیوے گوڈا سے ملاقات کرتے ...

ہوناورمیں پریش میستا کی مشتبہ موت کوگزرگئے2سال۔ سی بی آئی کی تحقیقات کے باوجود نہیں کھل رہا ہے راز۔ اشتعال انگیزی کرنے والے ہیگڈے اور کرندلاجے کے منھ پر کیوں پڑا ہے تالا؟

اب سے دو سال قبل 6دسمبر کو ہوناور میں دو فریقوں کے درمیان معمولی بات پر شرو ع ہونے والا جھگڑا باقاعدہ فرقہ وارانہ فساد کا روپ اختیار کرگیا تھا جس کے بعد پریش میستا نامی ایک نوجوان کی لاش شنی مندر کے قریب واقع تالاب سے برآمد ہوئی تھی۔     اس مشکوک موت کو فرقہ وارانہ رنگ دے کر پورے ...

کاروار:ہائی وے توسیع کے لئے سرکاری زمین تحویل میں لینے پرمعاوضہ کی ادا ئیگی۔ ملک میں قانون وضع کرنے کے لئے ضلع شمالی کینرا بنا ماڈل

نیشنل ہائی وے66 توسیعی منصوبے کے لئے سرکاری زمینات کو تحویل میں لینے کے بعد خیر سگالی کے طورمعاوضہ ادا کرنے کی پہل ضلع شمالی کینرا میں ہوئی جس کی بنیاد پر نیشنل ہائی وے ایکٹ 1956میں ترمیم کرتے ہوئے ملک بھر میں تحویل اراضی پرمعاوضہ ادائیگی کا نیا قانون2017میں وضع کیا گیا ہے۔