دیوگوڑا پر یدی یورپا کا طنز، 7 سیٹ پر لڑ رہے ہیں اور بنناچاہتے ہیں وزیر اعظم

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 19th April 2019, 10:38 PM | ریاستی خبریں |

بنگلور :19 /اپریل(ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا) حال ہی میں سابق وزیر اعظم اور جنتا دل (سیکولر) کے سربراہ ایچ ڈی دیوگوڑا نے کہا تھا کہ انتخابات کے بعد اگر راہل گاندھی وزیر اعظم بنتے ہیں تو وہ ان کا ساتھ دیں گے۔ان کے اسی بیان پر طنز کستے ہوئے بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر بی ایس یدی یورپا نے کہا ہے کہ دیوگوڑا سات سیٹوں پر لڑ رہے ہیں لیکن خواب وزیر اعظم یا وزیر اعظم کے مشیر بننے کی رکھتے ہیں۔ایچ ڈی دیوگوڑا نے کہا تھاکہ مجھے اس بات کی فکر ہے کہ مودی پارلیمنٹ پہنچیں گے،میرے اندر اتنی ہمت ہے کہ میں یہ پی ایم کے سامنے یہ بات کہہ سکوں،مجھ میں ہمت ہے،اگر راہل گاندھی وزیر اعظم بنتے ہیں تو میں ان کے ساتھ بیٹھوں گا۔وزیر اعظم بننا ضروری نہیں ہے،میرا کوئی خواب نہیں ہے لیکن میں نے ہمیشہ کہا ہے کہ میں فعال سیاست سے ریٹائرمنٹ نہیں لوں گا۔ غور طلب ہے کہ ان کے بیٹے ایچ ڈی کمارسوامی نے کہا تھا کہ اگر رضامندی ہوئی تو دیوگوڑا کو وزیر اعظم کے عہدہ کا امیدوار بنایا جا سکتا ہے۔اب دیوگوڑا کے اسی بیان کا جواب دیتے ہوئے کرناٹک کے سابق وزیر اعلی اور بی جے پی لیڈر بی ایس یدی یورپا نے کہا ہے کہ وہ صرف سات سیٹوں پر انتخاب لڑ رہے ہیں اورخواب وزیر اعظم یا وزیر اعظم کا مشیر بننے کی رکھتے ہیں۔غور طلب ہے کہ ایچ ڈی دیوگوڑا 1996 سے 1997 تک ہندوستان کے وزیر اعظم رہے ہیں۔آپ کو بتا دیں کہ کرناٹک میں کانگریس اور جے ڈی یس اتحاد کی حکومت ہے اور دیوگوڑا کے بیٹے ایچ ڈی کمارسوامی وزیر اعلی ہیں۔لوک سبھا انتخابات میں بھی دونوں پارٹیاں ساتھ الیکشن لڑ رہی ہیں۔اس اتحاد میں ریاست کی 28 لوک سبھا سیٹوں میں سے 21 پر کانگریس اور سات پر جے ڈی ایس انتخابات لڑ رہی ہے۔ایچ ڈی دیوگوڑا اور ان کے دو پوتے بھی الیکشن میں اترے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

 کورونا مریضوں کی تعداد پر قابو پانے کے لئے سخت اقدامات کیے جائیں۔ضلع انتظامیہ کو وزیر اعلیٰ ایڈی یورپا کی ہدایت

وزیراعلیٰ ایڈی یورپا نے ریاست کے 30اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں، ضلع پنچایت سی ای او اور اعلیٰ پولیس افسران کے ساتھ ویڈیو کانفرنس کرتے ہوئے کورونا کی بڑھتی ہوئی تعداد پرفوری قابو پانے کے لئے سخت اقدامات کرنے کی تاکید کرتے ہوئے کہا وہ ذاتی طور پر مکمل لاک ڈاؤن کرنے کے حق میں نہیں ہیں، ...

کرناٹک میں کورونا وائرس کا قہر جاری، کیس 41 ہزارسے متجاوز، 2738 نئے کیس،73؍اموات، بنگلورو میں47 لوگوں کی موت

کرناٹک میں کورونا وائرس کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے۔ گزشتہ24 گھنٹوں کے دوران ریاست میں مزید 2738 معاملے سامنے آئے جس کے ساتھ ہی کرناٹک میں اس مہلک وائرس کی زد میں آنے والوں کی تعداد41581 ہوچکی ہے۔

اُترکنڑا میں کورونا کے پھر 37 معاملات؛دکشن کنڑا میں 131 اور اُڈپی میں 53 پوزیٹیو؛ کیا پھر لاک ڈاون ہوگا ؟

اُترکنڑا میں آج کورونا کے پھر 37 نئے معاملات سامنے آئے ہیں جس میں صرف بھٹکل سے ہی 20 پوزیٹیو کیسس ہیں۔اُڈھر پڑوسی ضلع اُڈپی میں 53، جبکہ دکشن کنڑا میں 131 کیسس سامنے آئے ہیں۔

کوویڈ کے نام پر نجی اسپتالوں میں بدعنوانی اور سرکاری اسپتالوں کی بدنظمی کے خلاف کارروائی کا مطالبہ؛ اقدامات نہ کرنے کی صورت میں ایس ڈی پی آئی نے دیا احتجاج کا انتباہ

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کرناٹک کے ریاستی نائب صدر اڈوکیٹ مجید خان نے منگلور پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔