خواتین نسلوں کی معمار ہوتی ہیں۔سید امین القادری گلبرگہ میں ختم بخاری شریف، ۷،عالمات کی ردا ء پوشی،علماء کرام کے پر مغز بیانات

Source: S.O. News Service | By MAZ Gawai | Published on 13th March 2017, 10:05 PM | ملکی خبریں | اسلام |

گلبرگہ، 13 مارچ(ایس  او نیوز/آئی این ایس انڈیا)شہر گلبرگہ میں عالمی تحریک سنی دعوت اسلامی شاخ گلبرگہ کا سالانہ سنی اجتماع کا کل پہلادن تھا جو خواتین کے لئے مخصوص تھا۔پروگرام کاآغازدوپہر ۲، بجے رئیس القراء قاری ریاض احمد کے تلاوت کلا م پاک سے ہوا پھر انہوں نے بارگاہ رسالت مأب صلی اللہ علیہ وسلم میں ہدیہ نعت پاک پیش کی۔ 2-30 /علامہ محمد احمد مصباحی نا ظم تعلیمات جامعہ اشرفیہ مبارکپور اعظم گڑھ یوپی،نے دارالعلوم رضائے مصطفے ٰ کی شاخ ”مدرسہ فیض مصطفےٰ للبنات“ سے فارغ ہونے والی۷، طالبات کو بخاری شریف کی آخری حدیث کا درس دیا،اس کے بعد بانی دارالعلوم رضائے مصطفے حضرت فیض الدین سرمست صاحب کی اہلیہ صاحبہ و حضرت تاج الدین بابا جنیدی صاحب کی اہلیہ محترمہ صاحبہ نے عالمات و فارغات کی رداء پوشی و گل پوشی کی یہ بڑا ہی سہانہ اور روح پرور منظر تھا جب قوم کی نو نہال بچیوں کو ردائے فضیلت سے نوازا گیا۔پھر جناب امتیاز رضوی اور صادق رضو ی صاحبان ممبئی نے انتہائی پر مغز خطاب فرماکر خواتین کو اسلام کے احکام و فرامین کے مطابق زندگی گزارنے پر زور دیا ساتھ ہی عورتوں سے متعلق حالات حاضرہ کے مسائل کو اسلامی تعلیمات کی روشنی میں پیش کیا۔بعد عصرپرنسپل جامعہ اشرفیہ مبارکپور اعظم گڑھ محقق مسائل جدیدہ مفتی نظام الدین رضوی صاحب نے خواتین کی طرف سے پوچھے جانے والے شرعی سوالات کے نہایت دلنشیں انداز میں جوابات مرحمت فرمائے۔نماز مغرب کے وقفہ کے بعد آل رسول سید امین القادری صاحب مالیگاؤں نے نصیحت آمیز خطاب فرمایا۔انہونے اپنی تقریر میں کہا: نسلیں خواتین کی گود میں پرورش پاتی ہیں یہی گود بچوں کی پہلی درسگاہ ہے ماں جیسی تربیت کرے گی نسلیں ویسی ہی پروان چڑھے گی۔آج مسلم عورتوں میں بہت سی برائیاں پنپ رہی ہیں جس سے گھر کا ماحول خراب ہورہاہے رشتوں میں دراریں آرہی ہیں حالات نازک ہوتے جارہے ہیں۔آج حالات خراب کرنے کی نہیں بنا نے کی ضرورت ہے گھر بگاڑنے کی نہیں سنوارنے کی ضرورت ہے گھر بنانا بگاڑنا عورتوں کے ہاتھوں میں ہے اس لئے گھر کو ٹوٹنے سے بچاؤ اولاد کو دینی تعلیم سے آراستہ کرو تاکہ اچھی نسل پروان چڑھے جو دین و سنت کا کام کرے سنت رسول پر عمل کرکے دنیا و آخرت کو سنوارے۔خواتین کامجمع کثیر تھا دور دراز کے علاقوں سے خواتین کی کثیر تعدادمیں گاڑیا ں بھر بھر کے آئیں تھیں جس سے میدان وسعت کے باوجود تنگ نظر آیا۔ان کی سہولت کا ہر طرح خیال رکھا گیا نماز کے وقت وقفہ دیکر نماز ادا کی گئیں پھر بیانات و خطابات اورحمدو نعت کا سلسلہ جاری رہا۔   
 

ایک نظر اس پر بھی

پارلیمانی اجلاس کا آغاز تین طلاق بل منظورکرانا حکومت کیلئے بڑا چیلنج

پارلیمنٹ کے پیر سے شروع ہونے والے اجلاس میں نئی حکومت کے سامنے جہاں تین طلاق بل سمیت دس اہم آرڈیننس کو منظور کرانے کا بڑا چیلنج ہوگا، وہیں اپوزیشن پارٹیاں حکومت کو کسانوں، بے روزگاری، سکیولرزم، الیکٹرانک ووٹنگ مشین جیسے بہت سے دیگر مسائل پر گھیرنے کی کوشش کریں گی-

عیدالفطر: فضائل و احکام ........... آز: عبدالرشیدطلحہ نعمانیؔ

جب بندہ تیس دن تک لگاتار روزے رکھتا ہے،روزے کےمطلوبہ تقاضے پورے کرتا ہے،قیام اللیل کے ذریعہ تقرب الہی کے ذرائع تلاش کرتاہے، خدمت خلق کے ذریعہ اپنےخالق و مالک کو راضی کرلیتا ہےاور اسی کی عبادت و فرماں برداری میں سارا وقت صرف کرتا ہےتو حق تعالیٰ  اس پیہم محنت و جدوجہد کے بعد ...

نئے سال کی آمد پر جشن یا اپنامحاسبہ ................ آز: ڈاکٹر محمد نجیب قاسمی سنبھلی

ہمیں سال کے اختتام پر، نیز وقتاً فوقتاً یہ محاسبہ کرنا چاہئے کہ ہمارے نامۂ اعمال میں کتنی نیکیاں اور کتنی برائیاں لکھی گئیں ۔ کیا ہم نے امسال اپنے نامۂ اعمال میں ایسے نیک اعمال درج کرائے کہ کل قیامت کے دن ان کو دیکھ کر ہم خوش ہوں اور جو ہمارے لئے دنیا وآخرت میں نفع بخش بنیں؟ یا ...

مٹھی بھر شر پسند عناصر ملک میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور قومی یکجہتی کی فضا کو خراب کرنا چاہتے ہیں : مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی

مرکزی جمعیت اہل حدیث( ہند) سے جاری ایک اخباری بیان کے مطابق مرکزی جمعیت اہلحدیث ہند کے امیر مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے امرتسر میں نرنکاری ست سنگ ڈیرہ پر ہوئے گرینیڈ حملہ جس میں تین افراد ہلاک اور پندرہ افراد زخمی ہوئے، کی پر زور مذمت کی ہے اور اسے بزدلانہ اورغیر انسانی ...

ماہ صفر مظفر اور بد شگونی ......... بقلم: محمد حارث اکرمی ندوی

فَإِذَا جَاءَتْهُمُ الْحَسَنَةُ قَالُوا لَنَا هَٰذِهِ ۖ وَإِن تُصِبْهُمْ سَيِّئَةٌ يَطَّيَّرُوا بِمُوسَىٰ وَمَن مَّعَهُ ۗ أَلَا إِنَّمَا طَائِرُهُمْ عِندَ اللَّهِ وَلَٰكِنَّ أَكْثَرَهُمْ لَا يَعْلَمُونَ ( الأعراف 131) ...

ملک کے موجودہ حالات اور دینی سرحدوں کی حفاظت ....... بقلم : محمد حارث اکرمی ندوی

   ملک کے موجودہ حالات ملت اسلامیہ ھندیہ کےلیے کچھ نئے حالات نہیں ہیں بلکہ اس سے بھی زیادہ صبر آزما حالات اس ملک اور خاص کر ملت اسلامیہ ھندیہ پر آچکے ہیں . افسوس اس بات پر ہے اتنے سنگین حالات کے باوجود ہم کچھ سبق حاصل نہیں کر رہے ہیں یہ سوچنے کی بات ہے. آج ہمارے سامنے اسلام کی بقا ...