بھٹکل میں پایا گیا کورونا پوزیٹیو کا ایک اور مریض؛چھوٹے بھائی کے بعدآج بڑے بھائی کی بھی رپورٹ آئی پوزیٹو؛ کئی لوگوں کو کیا گیا انجمن کورنٹائن سینٹر منتقل

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 31st March 2020, 8:39 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 31/مارچ (ایس او نیوز)چھوٹے بھائی کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو موصول ہونے کے بعد آج اسی کے بڑے  بھائی کی رپورٹ بھی پوزیٹیو موصول ہوئی جس کے ساتھ ہی بھٹکل یا اُترکنڑا میں کورونا سے متاثرہ لوگوں کی تعداد بڑھ کر آٹھ ہوگئی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ دونوں بھائی 20مارچ کو  دبئی سے گوا ائرپورٹ ہوتے ہوئےایک ہی کار پر سوار ہوکر بھٹکل پہنچے تھے، ان دونوں نے بھٹکل آنے کے دوران کاروار کے ایک ہوٹل میں رک کر چائے اور ناشتہ بھی لیا تھا۔ بھٹکل پہنچنے کے بعد جب چھوٹے بھائی کو کھانسی کی شکایت ہوئی تو دونوں بھائی سرکاری اسپتال پہنچے۔  بتایا گیا ہے کہ ڈاکٹروں نے اُس وقت چھوٹے بھائی کے سویپ کے نمونے لے کر جانچ کے لئے روانہ کئے البتہ بڑے بھائی سے کہا کہ چونکہ اُس میں کورونا کے کوئی اثرات نظر  نہیں آرہے ہیں اس لئے  اُس کے سویپ کے نمونے جانچ کے لئے بھیجنا ضروری نہیں ہے۔

یادرہے کہ چھوٹے بھائی( مریض نمبر 62 ) کی  رپورٹ 26مارچ کی شام کو پوزیٹیو موصول ہوئی تھی جس کے اگلے ہی روز  اس کے ساتھ دبئی سے لوٹنے والے بڑے بھائی سمیت ماں اور بھٹکل میں رہنے والے چھوٹے  بھائی کے سویپ کے سیمپل بھی جانچ کے لئے روانہ کئے گئے اور تینوں کو اپنے گھر پر ہی کورنٹائن یعنی الگ تھلگ رہنے  کی ہدایت دی گئی۔ تینوں اُس وقت سے  اپنے گھر پر ہی کورنٹائن پر تھے، آج منگل کو تینوں کی رپورٹ موصول ہوئی ہے جس میں  دبئی سے لوٹے ہوئے  بڑے بھائی کی رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے جبکہ بھٹکل میں رہنے والی ان کی ماں اور  چھوٹے بھائی کی رپورٹ نیگیٹیو آئی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ آج جس  خاتون اور اُس کے بیٹے کی رپورٹ نیگیٹو آئی ہے انہیں بھٹکل سرکاری اسپتال کے گراونڈ فلور پر  مشاہدے پر رکھا گیا ہے۔جبکہ اس کے  26سالہ بڑے بیٹے   جس کا نمبر 98 ہے، رپورٹ کورونا پوزیٹو آنے کی بنا پر کاروار لے جانے کی تیاری  کی جارہی ہے۔ مریض نمبر 98  گذشتہ تین سالوں سے دبئی میں ایک پرائیویٹ کمپنی میں ملازمت کرتا ہے۔ رپورٹ پوزیٹیو آنے کے بعد اسے اب عارضی طور پر  بھٹکل سرکاری اسپتال کے  پہلے مالہ پر رکھا گیا ہے، بتایا جارہا ہے کہ  اسے اور اس سے پہلے ایڈمٹ کے گئے کورونا متاثرہ مریض کو ایک ساتھ کاروار پتنجلی اسپتال شفٹ کیا جائے گا۔

گھروں میں کورنٹائن لوگ انجمن سینٹر منتقل: انجمن انجینرنگ کالج کے ہوسٹل کو کورنٹائن سینٹر میں منتقل کرنے کے بعد آج منگل کو گھروں میں کورنٹائن  کئی لوگوں کو انجمن کورنٹائن سینٹر منتقل کیا گیا۔ جس میں چار پانچ فیملییس بھی شامل  ہیں۔ قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم کی طرف سے گھروں میں کورنٹائن لوگوں کو انجمن کورنٹائن سینٹر منتقل  کرنے  کے بعد جناب امتیاز اُدیاور نے بتایا کہ  بعض لوگوں کو چھوڑ کر  تقریباً سبھی لوگوں کو انجمن سینٹر منتقل کیا گیا ہےمزید لوگوں کو بھی بہت جلد منتقل کیا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

بیرون ریاست سے بھٹکل آنے والوں کو سرکاری طور پر مقرر کردہ مراکز میں کیا جائے گا کوارنٹین۔ اسسٹنٹ کمشنر بھرت کا بیان

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر بھرت ایس نے بتایاہے کہ جو بھی افراد بیرون ریاست سے بھٹکل آئیں گے انہیں نئے پروٹو کول کے مطابق سرکار کی طر ف سے مقرر کردہ مراکز میں ہی کوارنٹین کیا جائے گا۔

کرناٹک میں کورونا کے اب تک کے سب سے زیادہ معاملات؛ ایک ہی دن سامنے آئے 515 معاملات؛ صرف اُڈپی میں ہی 204 کورونا پوزیٹو

ملک بھر میں لاک ڈاون میں  ڈھیل دی جارہی ہے اور پورے ملک میں لاک ڈاون کے بعد اب  اگلے چند دنوں میں  حالات نارمل ہونے کے امکانات  نظر آرہے ہیں مگر دن گذرنے کے ساتھ ہی کرناٹک میں کورونا کے معاملات میں کمی آنے کے بجائے  اُس میں مزید اضافہ ہی دیکھا جارہا ہے۔

بھٹکل میں ایک خاتون کی رپورٹ آئی کورونا پوزیٹو؛ یلاپور کے چھ اور کاروار سے ایک کی رپورٹ بھی کورونا پوزیٹو

کافی دنوں کے وقفے کے بعد آج بھٹکل میں ایک اور کی رپورٹ کورونا پوزیٹو آئی ہے، جبکہ ضلع اُترکنڑا کے یلاپور سے چھ اور کاروار سے ایک کورونا کے معاملات بھی سامنے آئے ہیں۔ یاد رہے کہ بھٹکل سے کورونا کا آخری معاملہ 17 مئی کو سامنے  آیا تھا اور وہ شخص  یکم جون کو  ڈسچارج ہوگیا ...

کیرالہ سے داخل ہوتے ہوئے ساحلی کرناٹکا میں مانسون نے دی دستک۔ کرناٹکا میں پوری طرح مانسون شروع ہونے میں ہوسکتی ہے تاخیر

حسب معمول جون کے آغاز میں ہی مانسون نے کیرالہ میں داخلہ لیااور پھر وہاں سے ہوتے ہوئے دودن پہلے ساحلی کرناٹکا میں دستک دی۔ جس کے ساتھ ہی مینگلور، اُڈپی، بھٹکل، کمٹہ اور کاروار وغیرہ علاقوں میں  موسلادھار بارش، طوفانی ہواؤں اور بادلوں کی گھن گھرج کے ساتھ مانسون نے اپنی آمد کا ...

اُڈپی میں کوویڈ کے بڑھتے معاملات پر بھٹکل کے عوام میں تشویش؛ پڑوسی علاقہ سے بھٹکل داخل ہونے والوں پر سخت نگرانی رکھنے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ

بھٹکل کورونا فری ہونے کے بعد اب پڑوسی ضلع اُڈپی میں روزانہ پچاس اور سو کورونا معاملات کے ساتھ  پوری ریاست میں اُڈپی میں سب سے  زیادہ کورونا کے معاملات سامنے آنے پر بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عوام اس بات کو لے کر پریشان ہیں کہ اُڈپی سے کوئی بھی شخص آسانی کے ساتھ ...