کشمیر: میاں عبد القیوم کی رہائی جمعرات کو ممکن

Source: S.O. News Service | Published on 29th July 2020, 10:33 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،29؍جولائی(ایس او نیوز؍ایجنسی) جموں و کشمیر انتظامیہ نے سپریم کورٹ کو بدھ کے روز آگاہ کیا ہے کہ جموں و کشمیر ہائی کورٹ بار اسوسی ایشن کے صدر میاں عبد القیوم کو جلد ہی رہا کر دیا جائے گا۔ اس درمیان عرضی گزار کو کل ہی رہا کرنے کی ان کے وکیل کی درخواست پر ریاستی انتظامیہ نے ہاں کر لی ہے۔

جموں و کشمیر انتظامیہ کی جانب سے پیش سالسٹر جنرل تُشار مہتا نے جسٹس سنسجے کشن کول کی صدارت والی بنچ کو بتایا کہ مرکز کے زیر انتظام ریاست کی انتظامیہ نے میاں عبد القیوم کو فوراً رہا کرنے کا فیصلہ کیا۔ تشار مہتا کی دلیلوں کی بنیاد پر عدالت نے ان کی رہائی کی اجازت دے دی۔ حالانکہ انہوں نے کہا ک میاں عبد القیوم سات اگست تک دہلی میں رہیں گے، کشمیر نہیں جائیں گے اور کوئی بیان بھی جاری نہیں کریں گے۔

میاں عبد القیوم کی جانب سے پیش سینیئر ایڈووکیٹ دشینت دوے نے گزارش کی ہے کہ اگر ہو سکے تو ان کے مؤکل کو کل ہی رہا کر دیا جائے تاکہ دہلی میں منتظر اہل خانہ ان کا خیر مقدم کر سکیں۔ غور طلب ہے کہ عدالت نے گزشتہ پیر کو تشار مہتا کو ریاستی انتظامیہ سے یہ ہدایت لے کر آنے کو کہا تھا کہ کیا میاں عبد القیوم کو چھ اگست سے قبل رہا کیا جا سکتا ہے۔

مرکزی حکومت نے گزشتہ پیر کو سپریم کورٹ کو مطلع کیا تھا کہ جموں و کشمیر ہائی کورٹ بار اسوسی ایشن کے صدر کو چھ اگست کے بعد رہا کر دیا جائے گا۔ اس کے بعد عدالت نے تشار مہتا سے ہدایت لے کر آنے کو کہا تھا۔ گزشتہ برس پانچ اگست کو جموں و کشمیر سے متعلق آئین کی دفعہ 370 کی زیادہ تر توضیعات اور آرٹیکل 35 اے کو رد کیے جانے کے بعد سات اگست کو میاں عبد القیوم کو حراست میں لے لیا گیا تھا۔ اس وقت سے وہ تہاڑ جیل میں قید ہیں۔ آئندہ چھ اگست کو ان کی قید بے گناہی کو ایک برس ہو جائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

راجستھان: ’جے شری رام‘ نہ کہنے پر بزرگ مسلم ڈرائیور کے ساتھ مار پیٹ، پاکستان جانے کو کہا!

 راجستھان کے سیر میں ایک 52 سالہ آٹو رکشہ ڈرائیور غفار احمد کچاوا کو ’مودی زندہ آباد‘ اور ’جے شری رام‘ نہ بولنے پر بے رحمی سے پیٹا گیا۔ پولیس نے ہفتہ کے روز یہ اطلاع دی۔ متاثرہ ڈرائیور نے بتایا کہ ان پر حملہ کرنے والے دو لوگوں نے ان کی داڑھی کھینچی اور پاکستان جانے کو کہا۔

ہندوستان: کورونا کے نئے معاملہ ایک دن میں65 ہزار سے پار، اب تک کے سب سے زیادہ

ملک میں کورونا وائرس کی دن بدن خراب ہوتی صورتحال کے درمیان سنیچر کی دیر رات تک65,156نئے معاملے سامنے آنے سے متاثرین کی تعداد 21.50لاکھ سے زیادہ ہوگئی اور 875مزید لوگو کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 43,446تک پہنچ گئی لیکن راحت کی بات یہ ہے کہ مریضوں کے صحت یاب ہونے کی شرح 69فیصد کے قریب پہنچ ...

ایئر انڈیا کا طیارہ گرنے کی ایک نہیں کئی وجوہات

ماہرین کا ماننا ہے کہ کیرالہ کے کوزی کوڈ میں جمعہ کی رات ہوئے جہاز حادثے میں تیز بارش کے ساتھ کئی وجوہات رہی ہوں گی۔ائر انڈیا ایکسریس کا بوئنگ 737-800 جہاز جب کوزی کوڈ پہنچا اس وقت وہاں تیز بارش ہورہی تھی۔ جب رن وے گیلا ہوتا ہے تو جہاز کو اترنے کے بعد رکنے کے لئے رن وے پر معمول کے ...