آئندہ لوک سبھاالیکشن سے پہلے این آرسی لگاکرگھس پیٹھیوں کوباہرکریں گے,امت شاہ کاراہل گاندھی کوترقی پر چیلنج،ایک بھی بدعنوانی کاداغ نہ ہونے کادعویٰ

Source: S.O. News Service | Published on 2nd December 2019, 10:56 PM | ملکی خبریں |

رانچی،2/دسمبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) بی جے پی کے قومی صدر اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے پیر کو کانگریس کے لیڈر راہل گاندھی کو چیلنج کیا کہ وہ جھارکھنڈ کی ترقی پر بحث کریں۔ جھارکھنڈ کے چکدرہار پور میں انتخابی اجلاس سے مذہب کاکارڈکھیلتے ہوئے امت شاہ نے رام مندر کے مسئلے کاحوالہ دیتے ہوئے کہاہے کہ ایودھیا میں جلد ہی ایک عظیم الشان رام مندرکی تعمیرکی جائے گی۔ اسی کے ساتھ ہی،2024 کے لوک سبھاالیکشن سے پہلے پورے ملک میں این آرسی لگاکرگھس پیٹھیوں کی شناخت کی جائے گی۔ پسماندہ ذاتوں کے ریزرویشن کے بارے میں، جھاڑ کھنڈ حکومت، جو بیک فٹ پر ہے،نے کہا ہے کہ اگر نئی حکومت تشکیل دی گئی، تو آبادی کے حساب سے ریزرویشن بنانے کی کوشش کرنے کے لیے ایک کمیشن تشکیل دیا جائے گا۔انھوں نے دعویٰ کیاہے کہ رگھوبرداس کی حکومت کے تحت گذشتہ پانچ سالوں کے دوران کوئی اسکینڈل نہیں ہوا تھا اور ان کے خلاف بدعنوانی کے کوئی الزامات عائد نہیں ہوئے تھے۔ تقریر کے دوران، شاہ نے پیر کو جھارکھنڈ کے سمڈیگا میں راہل گاندھی کے انتخابی اجلاس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ آج راہل بابا بھی جھارکھنڈ میں ہیں اور میں انھیں چیلنج کرتا ہوں کہ وہ اپنی کانگریس پارٹی کی55 سالہ حکمرانی اور آخری پانچ سالوں کے اقتدار کے کام کے بارے میں بات کریں۔در حقیقت، امت شاہ کی کوشش یہ ہے کہ اگرچہ جھارکھنڈ میں علیحدہ ریاست کے قیام کے بعد اکثران کی حکومت برسر اقتدار رہی، لیکن اس پسماندگی کا الزام کانگریس پارٹی پرلگایا جائے۔ امیت شاہ نے میٹنگ میں بی جے پی کے سینئر رہنما اور اب جھارکھنڈ مشرقی سے باغی امیدواررائے کے ذریعہ جھارکھنڈ کے وزیراعلیٰ رگھوور داس پر لگائے گئے الزامات کا نام نہیں لیا لیکن انہوں نے دعویٰ کیاہے کہ گذشتہ 5 سالوں کے دوران ریاست میں بدعنوانی پر قابو پالیا گیا ہے۔ اس میں کوئی بڑا اسکام نہیں تھا۔ امت شاہ نے کہا کہ وزیراعلیٰ رگھوور داس کے خلاف کسی قسم کے بدعنوانی کے الزامات نہیں لگائے گئے ہیں۔ ہم آپ کو بتادیں کہ سریو رائے نے رگھوور داس پر بدعنوانی کے الزامات عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ رگھوور داس نہیں ہیں لیکن رگھوور داغ ہیں جسے امت شاہ کے صابن اورنریندرمودی کی واشنگ مشین میں بھی صاف نہیں کیا جاسکتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بابری مسجد معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلہ سے ناخوش پاپولر فرنٹ کی طرف سے بھی نظر ثانی کی عرضی داخل

بابری مسجد حق ملکیت معاملے میں سپریم کورٹ کی آئینی بنچ کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے، پاپولر فرنٹ آف انڈیا نارتھ زون کے سکریٹری انیس انصاری نے بھی 9/ڈسمبر بروز پیر کو سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی عرضی داخل کی ہے۔ پی ایف آئی کی جانب سے جاری کردی پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ رویو ...