اگر میں پاکستان نواز ہوں تو مودی حکومت نے مجھے کیوں دیا پدم وبھوشن: شرد پوار

Source: S.O. News Service | Published on 9th October 2019, 1:41 PM | ملکی خبریں |

ممبئی،9؍اکتوبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) حال ہی میں وزیر اعظم نریندر مودی نے اپنے مہاراشٹر دورے کے دوران این سی پی سربراہ شرد پوار پر حملہ کرتے ہوۓ کہا تھا کہ ان کو (شرد پوار) پاکستان کی مہمان نوازی اتنی کیوں پسند ہے۔ این سی پی سربراہ شرد پوار نے وزیر اعظم کے اس بیان کا سخت نوٹس لیتے ہوۓ کہا ہے کہ "اگر میں پاکستان نواز ہوں تو مودی حکومت نے مجھے پدم وبھوشن کیوں دیا۔"

سی این این نیوز 18 کو حال ہی میں دیئے گئے ایک انٹرویو میں شرد پوار نے کہا کہ "مجھے ایک بات سمجھ میں نہیں آتی کہ وزیر اعظم مودی کا عہدا ایک شخص کا نہیں بلکہ وہ ایک ادارہ ہوتا ہے اور اس ادارہ کے پاس صحیح معلومات حاصل کرنے کے لئے بہت سے ذرائع ہوتے ہیں۔ مجھے اچھا لگتا اگر وزیر اعظم مودی یہ بیان صحیح معلومات حاصل کر کے دیتے۔ میرا کہنے کا مقصد یہ ہے کہ اگر وزیر اعظم مودی بغیر تصدیق کیے بیان دیتے ہیں اور اگر ان کا کہنے کا یہ مطلب ہے کہ میرے مفادات پاکستان میں ہیں اور میں اپنے ملک کے مفادات کے خلاف ہوں تو پھر حکومت نے مجھے پدم وبھوشن کیوں دیا۔"

شرد پوار نے کہا "پدم وبھوشن بھارت رتن کے بعد ملک کا دوسرا سب سے بڑا اعزاز ہے اور اگر بی جے پی حکومت نے مجھے یہ اعزاز دیا ہے تواس نے یہ ضرور سوچا ہوگا کہ میں نے کچھ تو قومی خدمات انجام دی ہوں گی۔ پھر یہ تضاد کیوں ہے کہ ایک جانب تو اعزاز دیتے ہیں دوسری جانب آپ کہتے ہیں کہ میرے مفادات پاکستان میں ہیں۔ اس طرح کے متضاد بیان بھی ملک کے سب سے بڑے عہدے پر بیٹھے شخص کی جانب سے دیئے جا رہے ہیں۔"

اپنے بیان کے تعلق سے شرد پوار نے کہا کہ انہوں نے پارٹی کی ایک اندرونی میٹنگ میں کہا تھا کہ "پاکستان حکومت اور فوج اپنے مفاد کے لئے ہندوستان مخالف موقف اختیار کرتے ہیں جبکہ میں وہاں کے عام لوگوں سے ملتا ہوں جو اپنے عزیزوں سے لکھنؤ اور حیدرآباد میں ملنے آتے ہیں تو مجھے حیرانی ہوتی ہے کہ ان کو کیسے دعوت نامہ مل جاتا ہے اور وہ کیسے آ جاتے ہیں۔ اس لئے عوام کے مسائل الگ ہیں اور رہنماؤں کے مسائل الگ ہیں۔ رہنما ہندوستان مخالف ماحول بناتے ہیں۔ اس میں کہاں سے پاکستان نوازی کی بات نظر آتی ہے‘‘۔

ایک نظر اس پر بھی

شاہین باغ احتجاج پرسپریم کورٹ نےکہا، ماحول نہیں ہےسازگار، سماعت23مارچ تک ملتوی

دہلی کے شاہین باغ سے این اے سی اے اور این آر سی مخالف مظاہرین کو ہٹانے کے لئے درخواستوں پر سپریم کورٹ میں سماعت ہوئی۔ اس کیس کی سماعت جسٹس سنجے کشن کول اور جسٹس کے ایم جوزف پر مشتمل بینچ کررہی ہے۔

دہلی تشدد: امن کی اپیل کرتے ہوئے سونیا گاندھی نے کہا ’فرقہ پرست طاقتوں کا منصوبہ ناکام بنائیں‘

کانگریس صدر سونیا گاندھی نے دہلی کی عوام سے فرقہ وارانہ خیر سگالی بنائے رکھنے اور ملک کو مذہب اور ذات-پات کی بنیاد پر تقسیم کرنے والی فرقہ پرست طاقتوں کے غلط منصوبوں کو ناکام کرنے کی اپیل کی ہے۔

مدھیہ پردیش ملک کی پہلی ریاست جہاں یونیفائیڈ ڈرائيونگ لائسنس اور رجسٹریشن کارڈ جاری ہوا

مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ کمل ناتھ نے آج یہاں ’یونیفائیڈ ڈرایيونگ لائسنس اور رجسٹریشن کارڈ‘ کا افتتاح کرتے ہوئے نئے نظام کا آغاز کیا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق مدھیہ پردیش ملک کی پہلی ریاست بن گئی ہے، جس نے یونیفائیڈ ڈرائيونگ لائسنس اور رجسٹریشن کارڈ کا ایک ساتھ افتتاح کیا ہے۔

بہار میں این آر سی لاگو نہیں ہوگا: نتیش کمار

  بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار نے آج اسمبلی میں قومی شہری رجسٹر ( این آر سی) کو غیر ضروری بتایا اور کہا کہ قومی مردم شماری رجسٹر ( این پی آر ) کے حالیہ خاکہ سے مستقبل میں این آر سی کے نفاذ پر کچھ لوگوں کو خطرات لاحق ہوں گے اسی کو دیکھتے ہوئے ان کی حکومت نے این پی آر 2010 کے پرانے خاکہ کی ...

دہلی تشدد، سی اے اے داخلی معاملہ، ہندوستان میں مسلمانوں سے تفریق نہیں ہوتی: ڈونلڈ ٹرمپ

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ہندستان میں مسلمانوں سے تفریق کئے جانے کے الزامات کو سرے سے خارج کرتے ہوئے شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور دہلی میں فرقہ وارانہ تشدد کو ہندستان کاداخلی معاملہ قرار دیتے ہوئے اس پر تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔