ماحول کو فرقہ وارانہ رنگ دینے کے بعد وضاحتوں سے کیا حاصل : ممتا بنرجی

Source: S.O. News Service | Published on 15th February 2020, 10:58 AM | ملکی خبریں |

کولکاتہ،15/فروری (ایس او نیوز/ایجنسی) وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ دہلی اسمبلی انتخابات میں شاہ کی قیات میں فرقہ وارانہ مہم چلائی گئی ، ماحول کو خراب کیا گیا اور شہریت ترمیمی ایکٹ کے خلاف مہم چلانے والوں کو گولی مارنے کی بات کی گئی مگر اس وقت بی جے پی کی مرکزی قیادت خاموش تماشائی رہی اور اب وہ ان بیانات سے کنارہ کررہی ہے تو اس سے کچھ بھی حاصل نہیں ہوگااور تاریخ کبھی بھی معاف نہیں کرے گی۔

خیال رہے کہ امت شاہ نے کل دہلی میں ایک پروگرام میں اعتراف کیا کہ ممکن ہے ’’ملک کے غداروں کو گولی مارو سالوں‘‘ جیسے بیانات سے نقصان ہوا ہوگا اور اس طرح کے بیانات نہیں دیئے جانے چاہییے تھے۔ ساتھ ہی انہوں نےکرنٹ لگنے والے بیان پر بھی وضاحت پیش کی ۔

اسمبلی میں گورنر کے خطاب پر تحریک شکریہ میں حزب اختلاف کے سوالوں کا جواب دیتے وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی کے ایک لیڈر گولی مارنے کی بات کرتے ہیں ، اس پر ہی بس نہیں کیا گیا بلکہ کئی اورلیڈروں نے پوری مہم کو فرقہ وارانہ بنانے کی بھر پور کوشش کی۔اس وقت اس طرح کے بیانوں کو روکنے کی کوئی کوشش نہیں کی بلکہ خود بھی اس میں شامل تھے اور اب غلطی کااعتراف کررہے ہیں ۔جو لوگ خود کو نہیں سنبھال سکتے ہیں انہیں تاریخ کبھی معاف نہیں کرے گی۔

اس سے قبل امت شاہ نےکہا تھا کہ’دہلی کے انتخاب سے متعلق میرا اندازہ غلط تھا۔ پارٹی لیڈروں کو اس طرح کے تبصرے نہیں کرنا چاہیے تھا۔ واضح رہے کہ بی جے پی نے انتخابی مہم کے دوران شاہین باغ میں شہریت ترمیمی ایکٹ کے خلاف احتجاج کررہے خواتین کے احتجاج کو پاکستان اور دہشت گردی سے جوڑنے کی کوشش کی ۔کئی بی جے پی لیڈروں نے اس طرح کے بیانانات دئیے تھے۔

ممتا بنرجی ہمیشہ سے ہی بی جے پی کی پولرائزیشن سیاست کی مخالفت کرتی رہی ہیں اور اس وقت شہریت کے قوانین ، این آر سی اور این پی آر کے خلاف ریاست بھرمیں مہم چلارہی ہیں ۔ممتا بنرجی نے دہلی انتخابات میں بی جے پی کی شکست پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ دہلی کے عوام نے نفرت انگیز مہم کو ٹھکرادیا ہے اورایک کے بعد ایک ریاستوں میں بی جے پی کی شکست ہورہی ہے ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی کی پالیسیوں کو عوام نے ٹھکرادیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

آئی آئی ایم سی انتظامیہ کی تحریری یقین دہانی طلبا کی بھوک ہڑتال ختم

ایشاء میں سرفہرست عوامی ذرائع ابلاغ کے ادارے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ماس کمیونکیشن (آئی آئی ایم سی) نئی دہلی میں ہر سال دس فیصد کے اضافے سے بڑھنے والی فیس کے خلاف تین ماہ سے جاری احتجاج کے بھوک ہڑتال میں تبدیل ہونے کے بعد آج چوتھے دن آئی آئی ایم سی انتظامیہ نے تحریری یقین ...

چین میں کورونا وائرس سے 2236 افراد لقمہ اجل

 چین میں کورونا وائرس سے مزید 118 افراد کی موت ہوجانے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 2236 ہوگئی ہے جبکہ 889 نئے معاملے آنے سے اب تک 75465 مریضوں میں اس انفیکشن کی تصدیق ہوئی ہے۔