منگلوروایئرپورٹ بم معاملہ: کمارا سوامی اور بی جے پی کے درمیان جاری ہے زبانی بمباری  

Source: S.O. News Service | Published on 22nd January 2020, 1:18 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

 منگلورو22/جنوری (ایس او نیوز) ایک طرف منگلورو ایئر پورٹ پر دھماکہ خیز مادہ (آئی ای ڈی) رکھنے والا ملزم آدتیہ راؤنے بنگلورو میں پولیس کے سامنے خودسپردگی کی ہے اور اپنا جرم قبول کرلیا ہے۔ جس کے بعد اسے گرفتار کرکے پوچھ تاچھ کی جارہی ہے۔دوسری طرف اس معاملے پر سابق وزیراعلیٰ وزیراعلیٰ کمارا سوامی اور بی جے پی کے درمیان زبردست زبانی بمباری شروع ہوگئی ہے۔

یاد رہے کہ کمارا سوامی نے اس پورے معاملے کو ہی مشکوک قرار دیتے ہوئے جلدازجلد تحقیقات مکمل کرنے کی مانگ کی تھی اور شبہ ظاہر کیا تھا کہ تحقیقات میں تاخیر سے پولیس اس معاملے کو کوئی اور رنگ دے سکتی ہے۔

کمارا سوامی کے اس موقف سے تلملائی ہوئی بی جے پی کے باضابطہ ٹویٹر ہینڈل پرایک ٹویٹ کے ذریعے کمارا سوامی پر براہ راست حملہ کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ ”انہوں نے سرجیکل اسٹرائک پر شک ظاہر کیا تھا۔انہوں نے چھیڑ چھاڑ سے تیارکی گئی سی ڈی جاری کرتے ہوئے کہا تھاکہ منگلورو میں پر امن احتجاجی مظاہرین تشدد میں ملوث نہیں تھے۔ اب انہوں نے زندہ بم کو ناکارہ بنانے کے سلسلے میں پولیس پر الزام لگایا ہے۔ کیا کمارا سوامی کے لئے خوشامدانہ سیاست کی کوئی حد بھی ہے؟وہ جہادیوں کے لئے کیوں تڑپ رہے ہیں؟“

کمارا سوامی پر بی جے پی کس حد تک بھڑکی ہوئی ہے اس کا اندازہ پارلیمانی امور کے وزیر پرہلاد جوشی کے بیان سے ہوتا ہے جس میں انہوں نے کمارا سوامی کے بیان کو ملک سے غداری کے مترادف قرار دیا ہے۔بنگلورو میں اخبار ی نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے پرہلاد جوشی نے کہاکہ ہندوستان نے بڑے پیمانے پر دہشت گردی کے خلاف محاذ کھول رکھا ہے اور پوری دنیا کے لئے ایک مثال بن گیا ہے۔ ”ہندوستان پاکستا ن کو تنہا کرنا اوراس کے دہشت گردوں کو تیار کرنے اور انہیں دوسرے ممالک میں بھیجنے کے منصوبوں کو دنیا کے سامنے کھول دینا چاہتا ہے۔ کمارا سوامی جیسے لوگوں کے بیانات ہندوستان کے دشمنوں کے لئے فائدہ مند ثابت ہوسکتے ہیں۔میرا مطالبہ ہے کہ کمارا سوامی اپنی اس کوتاہی کے لئے عوام سے فوراً معافی مانگیں۔“

ادھر کمارا سوامی نے بی جے پی پر حملہ جاری رکھتے ہوئے کہا ہے کہ جب سے بی جے پی نے اقتدار سنبھالا ہے ریاست میں تشدد اور خوف وہراس کا ماحول پیدا ہوگیا ہے۔ایسا لگتا ہے کہ ایئر پورٹ پر بم برآمد ہونا اور پھر اسے ناکارہ بنانا گویا پولیس کی طرف سے کسی مشق (mock drill) کا حصہ تھا۔میں نے دیکھا کہ بم ناکارہ بنانے پر صرف دھواں سا اٹھ رہا تھا۔اس سے سوال پیدا ہوتا ہے کہ کیا حکومت جنوبی کینرا کے عوام کو خوف زدہ کرنا چاہتی ہے۔“ 

خیال رہے کہ مشتبہ دھماکہ خیز مادہ کو ناکار بنانے میں بم اسکواڈ کو کافی وقت لگا تھا اور اس کی وجہ یہ بتائی گئی تھی کہ اسکواڈ کے پاس موجود پرانے کیبل کام نہیں کرپائے تھے اس لئے دوبارہ نئے کیبل منگوا کربم کو ناکارہ بنایا گیا تھا۔

کمارا سوامی نے کہا کہ میرا احساس ہے کہ کچھ تنظیمیں اورادارے فرقہ وارانہ غلط فہمیاں پھیلانے اور تشدد برپا کرنے میں مصروف ہیں، تاکہ ان کے خفیہ ایجنڈے پر عمل کیا جاسکے۔بی جے پی کے صدر سنجیو منٹادو رنے بیان دیا تھا کہ بنگلورو کے نمہانس میں کمارا سوامی کے دماغ کا علاج ہونا چاہیے۔ اس پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بشمول مودی اور امت شاہ ہر ایک کے دماغ کی جانچ (برین میاپنگ) کی جانی چاہیے۔کمارا سوامی نے منگلورو میں سی اے اے، این پی آر اور این آر سی کے منفی نتائج کے سلسلے میں گھر گھر جاکر عوامی بیداری لانے کی مہم کا آغاز کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلوروکے ایک دیہات میں لگا نیا پوسٹرہندو بیوپاریو! ہمارے گاؤں میں آکر تجارت کرو:منفی پروپگنڈا کرنے والوں کومنھ توڑ جواب

کورونا وائرس کی وباء کو مسلمانوں کی سازش قرار دینے اور ان کے سماجی بائیکاٹ کرنے کی جو لہر چل پڑی ہے اور مختلف مقامات پر مسلمانوں کے داخلے اور آمد ورفت پر پابندی کے جو پوسٹرس، بیانرس اور آڈیو مسیج عام ہورہے ہیں اس سے سماج میں ایک عجیب تشویش پیدا ہوگئی ہے۔

ایمرجنسی معاملات میں کیرالہ کے مریضوں کا علاج مینگلور کے ڈیرلکٹہ اسپتال میں کرنےجنوبی کینرا ڈپٹی کمشنرکی رضامندی

کورونا وائرس کی وبا ء پھیلنے کے بعد کرناٹکا نے کیرا لہ کے ساتھ لگنے والی تمام سرحدیں بند کردی تھیں، جس کی وجہ سے مینگلور سے لگے کیرالہ کے سرحدی علاقہ  کاسرگوڈ اور اطراف سے علاج کے لئے منگلورو آنے والے مریض بری طرح متاثر ہوگئے تھے۔پھر یہ تنازعہ سپریم کورٹ تک جا پہنچا تھا۔ اور ...

بھٹکل سے ایک پرائیویٹ ڈاکٹر سمیت مزید 15 مشکوک لوگوں کے سیمپل جانچ کے لئے روانہ؛ کورونا سے متاثرہ خاتون کو مینگلور منتقل کرنے کی ہورہی ہے تیاری

آج بدھ کو بھٹکل کی ایک حاملہ خاتون کورونا سے متاثر ہونے کی تصدیق ہونے کے بعد اُس کی جانچ کرنے والی ایک ڈاکٹر سمیت قریب 15 لوگوں کے تھوک کے نمونے جانچ کے لئے روانہ کرنے کی اطلاع موصول ہوئی ہے۔ ذرائع نے اس بات کی بھی خبردی ہے کہ خاتون کے رابطے میں رہنے والے پانچ قریبی رشتہ داروں کو ...

ناکہ بندی معاملہ: کرناٹک اور کیرالہ کے درمیان تنازعہ کا تصفیہ، کیس بند

سپریم کورٹ نے کورونا وائرس ’كووڈ -19‘ کے بڑھتے پھیلاؤ کے سلسلے میں جاری ملک بھر میں لاک ڈاؤن کے پیش نظر کرناٹک حکومت کی جانب سے کیرالہ سے متصل سرحد سیل کر دیئے جانے کے معاملے کی سماعت منگل کے روز اس وقت بند کر دی جب اسے بتایا گیا کہ دونوں ریاستوں کے درمیان تنازعہ کا تصفیہ ہو گیا ...

کورونا پرقابو پانے کے لئے بیدر میں خدمات انجام دینے والے ڈاکٹر محمد سہیل کے جذبے کو لوگ کررہے ہیں سلام

یدر شہر میں 10افراد کی کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق کے بعد بیدر شہر کو مکمل طورپر لاک ڈاؤن کردیا گیا ہے مگر اس دوران بیدر کے ایک ڈاکٹر محمد سہیل حسین انچارج قدیم سرکاری دواخانہ بیدر نے انسانی جذبہ ہمدردی سے سر شا رہوکر اپنے طبی عملہ کے ساتھ دن رات COVID-19 کورونا وائرس جیسے ...

منگلوروکے ایک دیہات میں لگا نیا پوسٹرہندو بیوپاریو! ہمارے گاؤں میں آکر تجارت کرو:منفی پروپگنڈا کرنے والوں کومنھ توڑ جواب

کورونا وائرس کی وباء کو مسلمانوں کی سازش قرار دینے اور ان کے سماجی بائیکاٹ کرنے کی جو لہر چل پڑی ہے اور مختلف مقامات پر مسلمانوں کے داخلے اور آمد ورفت پر پابندی کے جو پوسٹرس، بیانرس اور آڈیو مسیج عام ہورہے ہیں اس سے سماج میں ایک عجیب تشویش پیدا ہوگئی ہے۔

ایمرجنسی معاملات میں کیرالہ کے مریضوں کا علاج مینگلور کے ڈیرلکٹہ اسپتال میں کرنےجنوبی کینرا ڈپٹی کمشنرکی رضامندی

کورونا وائرس کی وبا ء پھیلنے کے بعد کرناٹکا نے کیرا لہ کے ساتھ لگنے والی تمام سرحدیں بند کردی تھیں، جس کی وجہ سے مینگلور سے لگے کیرالہ کے سرحدی علاقہ  کاسرگوڈ اور اطراف سے علاج کے لئے منگلورو آنے والے مریض بری طرح متاثر ہوگئے تھے۔پھر یہ تنازعہ سپریم کورٹ تک جا پہنچا تھا۔ اور ...

منڈیا کے گاؤں والوں نے کرنسی نوٹوں کو دھویا، مسلمانوں سے کرنسی لئے جانے کی بنا پر نوٹوں کو دھونے کی خبریں

ریاست کرناٹک  کے دیہی علاقوں میں کورونا وائرس کی وباء تا حال نہیں پہنچی مگر اس کے تعلق سے سماجی کلنک یہاں اپنی موجودگی کا احساس دلارہا ہے۔ کیمرے میں قید ایک واقعہ میں منڈیا کے کئی گاؤں والے کورونا وائرس کے خوف سے کرنسی نوٹوں کو دھوتے ہوئے نظر آرہے ہیں، جس کے تعلق سے بتایا جارہا ...

جن اضلاع میں کورونا نہیں وہاں لاک ڈاؤن میں رعایت کا امکان؛ 11/اپریل کو وزیر اعظم مودی کی ویڈیو کانفرنس کے بعد ریاستی حکومت کی طرف سے اعلان متوقع 

وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا نے اشارہ دیا ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے منظوری ملنے کی صورت میں ان اضلاع میں لاک ڈاؤن ختم کیا جاسکتا ہے جہاں کورونا وائرس کے واقعات بہت کم ہیں یا نہیں ہیں۔