کرناٹک میں کورونا ویکسین دینے کی مہم تقریباً ناکام، ایک ہفتے میں محض 56فیصد ہیلتھ ورکروں نے ٹیکہ لگوایا۔ مضر اثرات کا خوف بڑھنے لگا

Source: S.O. News Service | Published on 24th January 2021, 11:02 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،24؍جنوری(ایس او  نیوز) ریاست میں کورونا وائرس سے بچنے ویکسی نیشن کے لئے مہم جس جوش وخروش کے ساتھ شروع کی گئی وہ دن بدن کم ہو تی جا رہی ہے اور لوگوں نے اس پر توجہ دینا شاید چھوڑ دیا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہیلتھ کارکنوں میں بھی اس ویکسین کی طرف توجہ دینا کم کردیا ہے۔ اس کے نتیجے میں گزشتہ چار پانچ دنوں سے ویکسین لینے کے لئے حکو مت کی طرف سے جو نشانہ طے کیا گیا ہے اس کے مقابل صرف 50فیصد کے آس پاس ہیلتھ کارکن ہی ویکسین لینے کے لئے آگے آرہے ہیں۔ ویکسین دینے کی مہم شروع ہونے کے ایک ہفتہ کے بعد جو جائزہ لیا گیا ہے اس کی بنیاد پر یہ سامنے آیا ہے کہ ویکسین دینے کی مہم شاید آنے والے دنوں میں ناکامی کی طرف بڑھ سکتی ہے۔ یہ صورتحال صرف کرناٹک کی حد تک نہیں بلکہ ملک کی بیشتر ریاستوں میں ویکسین دینے کی مہم کے سست پڑجانے کی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں۔

حالانکہ کرناٹک کے بارے میں یہ کہا جا رہا ہے کہ ملک میں سب سے زیادہ یہاں ہیلتھ ورکر کورونا ویکسین لے رہے ہیں۔ اگرایک ہفتے کے دوران کرناٹک کی صورتحال میں اس قدر تبدیلی آسکتی ہے تو ملک کی دیگر ریاستیں جہاں ویکسین کا کام کافی سست روی سے جاری ہے، وہاں حالات کیا ہو سکتے ہیں۔ اس کا اندازہ بخوبی لگایا جا سکتا ہے۔ کرناٹک میں ویکسین دینے کے لئے 3944مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ ان مراکز میں گزشتہ سات دنوں کے دوران 318311لوگوں کو ویکسین دینے کے لئے نشانہ طے کیا گیا تھا، لیکن ان میں سے صرف 177022نے ویکسین لیا، اس کا اوسط56فیصد کے آس پاس ہے۔محکمہ صحت کو امیدتھی کہ بنگلورو میں ویکسین دینے کی مہم کامیاب ہو گی، لیکن راجدھانی میں اس ویکسین کے متعلق ہیلتھ ورکروں کی طرف سے کوئی توجہ نہیں دی جا رہی ہے۔

کہا جاتا ہے کہ اس ویکسین سے ہونے والے مضر اثرات کے خوف سے اکثر ہیلتھ ورکرو ں نے ویکسین نہ لگانے کافیصلہ کر کے ان کو ویکسین دینے کے لئے طے شدہ تاریخ پر ویکسین نہیں لیا۔ بنگلورو میں 1.45لاکھ ہیلتھ ورکرس کو ویکسین دینے کا نشانے طے کیا گیا تھا، ان میں سے صرف33772لوگوں نے ہی ویکسین لیا ہے۔ ایسے مرحلہ میں جبکہ ویکسین دینے کے دوسرے مرحلہ کی شروعات کی بات کی جارہی ہے، پہلے مرحلہ کے ہی ناکام ہوجانے کا خوف حکومت کے لئے پریشانی کا سبب بنا ہو ا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ٹرافک کے درمیان گذرتی گاڑیو ں کو نہ روکنے وزیر داخلہ بسوراج بومئی کی ٹریفک پولس کو ہدایات

وزیر داخلہ بسوراج بومئی نے اعلان کیا ہے کہ ٹرافک قوانین کی پامالیوں کو قابو میں کرنے کے لئے ٹرافک پولیس کی طرف سے سڑکوں کے بیچوں بیچ یا کنارے پر کھڑے ہو کر گاڑیوں کو روکنے کی ضرورت نہیں ہے۔

پلاسٹک کا استعمال کرنے والوں کیخلاف قانونی کارروائی کی جائے گی:میسورو ڈپٹی کمشنر روہنی سندوری

 ضلع کی ڈپٹی کمشنر روہنی سندوری کی صدارت میں میسور ومیں پلاسٹک کی اشیا ء کے استعمال پر کی گئی پابندی کے تعلق سے ایک میٹنگ منعقد کی گئی۔ اس موقع پر میسورو سٹی کارپوریشن کی کمشنر شلپا ناگ اور دوسرے سرکاری افسر اس موقع پر موجود تھے۔

کرناٹک کے وزیراعلیٰ یڈیورپا نے آر ایس ایس سےاپنے تعلق کو مانتے ہوئے کہا ؛میں جس مقام پر ہوں وہ آر ایس ایس کی دین ہے

کرناٹک کے وزیراعلیٰ یڈی یورپا نے اپنی زبان سے اقرار کیا کہ ان کا تعلق آر ایس ایس سے ہے،  اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے   یڈی یورپا نے بتایا  کہ   میں جس مقام پر ہوں وہ آر ایس ایس کی دین ہے۔

منڈیا میں پارک لاری سے تیز رفتار کار کی ٹکر؛ موقع پر ہی چار کی موت

سڑک کنارے پارک کی ہوئی لاری سے تیزرفتار کار کی ٹکر سے کار پر سوار چار لوگوں کی موقع پر ہی موت واقع ہوگئی۔ حادثہ سنیچر کی اولین ساعتوں میں منڈیا ضلع کے مدّور تعلقہ کے کوپّا سرکل کے قریب  بنگلور۔میسور نیشنل ہائی وے پر پیش آیا۔

رمیش جارکی ہولی سیکس سی ڈی کا شاخسانہ؛  کرناٹکا کے 6 وزراء پر طاری ہوگئی کپکپی ۔ اپنے خلاف خبروں کی اشاعت روکنے کے لئے کھٹکھٹایا ہائی کورٹ کا دروازہ

ایڈی یورپا کی قیادت والی بی جے پی حکومت میں وزارتی قلمدان رکھنے والے رمیش جارکیہولی کی سیکس سی ڈی عام ہونے کے بعد آر ٹی آئی ایکٹیویسٹ نے اعلان کیا تھا کہ اس کے پاس کچھ اور بھی وزراء کی ایسی سی ڈیز موجود ہیں جس سے سیاسی طوفان مزید تیز ہو سکتا ہے۔