ہتھیار اور منشیات کا سیاہ کاروبار، انٹرنیٹ پر بنا نیا اڈہ

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 14th February 2020, 1:42 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،13فروری (آئی این ایس انڈیا)انٹرنیٹ اب ہتھیار اور منشیات کے سیاہ کاروبار کا اڈہ بنتا جا رہا ہے۔سائبر کریمنل اس کے لئے ڈارک ویب کا استعمال کر رہے ہیں۔سائبر کرائم کرنے کے لئے یہ مجرمین کا پسندیدہ اڈہ بن چکا ہے۔حال میں ڈارک ویب سے منسلک ایک کیس لکھنؤ میں سامنے آیا۔اس میں سائبر مجرمین کروڑوں روپے کا گلوبل منشیات ریکیٹ چلا رہے تھے۔ان سائبرمجرمین کے اڈے سے پولیس کو 12 ہزار ساکوٹرپک گولیاں ملے ہیں۔ان گولیاں کو یہ ادویات اور دیکھ بھال سپلمیٹ کے طور پر ڈارک ویب پر فروخت کر رہے تھے۔ڈارک ویب کو انٹرنیٹ انڈرورلڈ بھی کہا جا سکتا ہے،یہاں مہلک ہتھیار، لوگوں کے کریڈٹ کارڈ / ڈیبٹ کارڈ کی تفصیلات، ای میل ایڈریس، لوگوں کے فون نمبر، منشیات، جعلی کرنسی اور دوسری چیزیں بڑی آسانی سے مل جاتی ہیں۔یہ ساری چیزیں یہاں کافی کم قیمت پر مل جاتی ہیں۔اصل میں ہم جس انٹرنیٹ کا استعمال کرتے ہیں، وہ بہت چھوٹا حصہ ہے۔انٹرنیٹ کے بڑے حصے تک لوگوں کی رسائی نہیں ہے اور اسے ہی ڈارک ویب کہتے ہیں۔کئی سائبر سیکورٹی فارمس نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ ڈارک ویب پر اپنی ذاتی تفصیلات کو چند ہزار روپے کے قیمت میں فراہم کیا جا رہا ہے۔ان تفصیلات میں آپ کے سوشل میڈیا اکاونٹس کے پاس ورڈ، بینک ڈیٹیلس اور کریڈٹ کارڈ سے منسلک معلومات شامل ہیں۔ہیکروں عام لوگوں اور کارپوریٹس کی انفارمیشن میں نقب زنی کر کے اسے ڈارک ویب میں فروخت کرتے ہیں۔ہیکروں کے لئے دھندے کا یہ ایک بڑا اڈہ ہے۔

ڈارک ویب دراصل امریکہ کی دین ہے۔امریکی آرمی نے اسے جاسوسی کے لئے بنایا تھا۔اسے اس لیے بنایا تھا کہ سرکاری جاسوس گمنام طور پر اطلاعات لے دے سکیں۔اسے بنانے کا مقصد دوسرے ممالک کی جاسوسی کرنا تھا۔وہیں ڈارک ویب میں منشیات یا دوسری چیزیں فروخت کرنے والے زیادہ تر لوگ بیرون ملک ہوتے ہیں۔ادائیگی کرنے پر یہ کوریئرز یا اپنے ایجنٹس کے ذریعے لوگوں تک چیزیں پہنچاتے ہیں۔ڈارک ویب انٹرنیٹ کا وہ سیکشن ہے جس میں یوزر کی شناخت خفیہ رہتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شاہین باغ: مظاہرین اور مذاکرات کاروں کی بات چیت بے نتیجہ،شہریت قانون واپس لینے تک ڈٹے رہنے کا عزم

شاہین باغ میں گزشتہ68 دنوں سے شہریت ترمیمی قانون، این آر سی و این پی آر کے خلاف جاری عالمی شہرت حاصل کر چکے دھرنا و مظاہرہ میں 19فروری کا دن بہت خاص رہا کیونکہ سپریم کورٹ کے ذریعہ مقرر کردہ مذاکرہ کار سنجے ہیگڈے اور سادھنا رام چندرن بات چیت کرنے پہنچے-

آسام: زبیدہ بیگم کے پاس15دستاویزات موجود شہریت ثابت کرنے میں پھر بھی ناکام!

پورے ہندوستان میں این آر سی لگائے جانے اور اس کے اثرات پر بحث جاری ہے- آسام میں این آر سی سے پیدا مشکلات کو سامنے رکھ کر لوگ پورے ملک میں این آر سی لگائے جانے کی مخالفت کر رہے ہیں - آسام میں کئی معاملے سامنے آ چکے ہیں جس میں برسوں سے وہاں رہ رہے لوگوں کو شہریت ثابت کرنے میں مشکل پیش ...

جس طرح سے سی وی سی کی تقرری ہوئی اس طرح تو چپراسی کی بھی تقرری نہیں ہو سکتی: کانگریس

کانگریس نے چیف ویجلنس کمشنر (سی وی سی) اور ویجلنس کمشنر (وی سی ) کی تقرری کو اداروں کو تباہ کرنے کی ایک اور مثال قرار دیتے ہوئے اسے غیر قانونی قرار دیا اور الزام لگایا کہ اس میں طریقہ کار پر عملدرآمد ہی نہیں کروایا گیا ہے۔

تملناڈو میں بس اور کنٹرینر ٹرک کے درمیان بھیانک ٹکر، 20 کی موت 24 زخمی

ضلع تریپور کے اویناشی میں  بس اور کنٹینر ٹرک کے درمیان ہوئی بھیانک ٹکر میں 20 لوگوں کی موت واقع ہوگئی جبکہ 24 لوگ شدید زخمی ہوگئے۔ حادثہ جمعرات کی اولین ساعتوں میں  اس وقت پیش آیا جب تیز رفتار کنٹرینر ٹرک کا ایک پہیہ پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ٹرک بے قابو ہوکر تیز رفتاری کے ساتھ  ...