الیکشن کمشنر ایسا ہو،جو وزیراعظم کے خلاف کارروائی کر سکے: سپریم کورٹ

Source: S.O. News Service | Published on 23rd November 2022, 6:30 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،23؍نومبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) سپریم کورٹ نے بدھ کو زبانی طور پر کہا کہ ملک کو ایک ایسے چیف الیکشن کمشنر (سی ای سی) کی ضرورت ہے جو وزیراعظم کے خلاف بھی کارروائی کر سکے۔عدالت نے مرکزی حکومت سے گزشتہ ہفتے مقرر کیے گئےالیکشن کمشنر(ای سی) کے انتخاب کے طریقہ کار کی وضاحت کرنے کو بھی کہا۔

جسٹس کے ایم کی سربراہی میں پانچ رکنی آئینی بنچ جوزف نے کہا کہ ہمیں ایک سی ای سی کی ضرورت ہے جو وزیر اعظم کے خلاف بھی کارروائی کر سکے۔

بنچ میں جسٹس اجے رستوگی، جسٹس انیرودھا بوس، ہرشیکیش رائے اور سی ٹی روی کمار نے کہا کہ مثال کے طور پر فرض کریں کہ وزیر اعظم کے خلاف کچھ الزامات ہیں اور سی ای سی کو کارروائی کرنی ہے، لیکن سی ای سی کمزور ہے اور کارروائی نہیں کرتا ہے۔ بنچ نے مرکز کے وکیل سے پوچھا کہ کیا یہ نظام کی مکمل خرابی نہیں ہے۔

 سی ای سی کو سیاسی اثر و رسوخ سے آزاد ہونا چاہیے اور اسے خود مختار ہونا چاہیے۔  بنچ نے کہا کہ یہ وہ پہلو ہیں جن پر آپ (مرکز کے وکیل) کو غور کرنا چاہئے کہ ہمیں سی ای سی کو منتخب کرنے کے لئے ایک آزاد بڑے ادارے کی ضرورت کیوں ہے۔

 بنچ نے زبانی طور پر کہا کہ کمیٹیاں کہتی ہیں کہ تبدیلی کی اشد ضرورت ہے اور سیاستدان بھی اس کا مطالبہ کرتے ہیں، لیکن کچھ نہیں ہوتا۔ مرکز کی نمائندگی اٹارنی جنرل آر وینکٹرامانی، سالیسٹر جنرل تشار مہتا اور ایڈیشنل سالیسٹر جنرل بلبیر سنگھ نے کی۔

 بنچ نے مرکز کے وکیل سے یہ بھی کہا کہ وہ الیکشن کمشنر کی تقرری کے عمل کو ظاہر کرے۔ سابق بیوروکریٹ ارون گوئل نے 19 نومبر2022 کو اس عہدے پر تعیناتی کے بعد پیر کو الیکشن کمشنر کا عہدہ سنبھال لیا۔ سوشیل چندر کی ریٹائرمنٹ کے بعد اس سال مئی سے تین رکنی کمیشن میں الیکشن کمشنر کا عہدہ خالی پڑا تھا۔ سماعت کے دوران اٹارنی جنرل نے کہا کہ کنونشن کے مطابق الیکشن کمشنر کی تقرری کرتے وقت ریاست اور مرکزی حکومت کے تمام سینئر بیوروکریٹس اور افسران کو مدنظر رکھا جاتا ہے اور اس کی سختی سے پیروی کی گئی ہے۔

اٹارنی جنرل نے کہا کہ تقرریاں کنونشن کی بنیاد پر کی جاتی ہیں اور سی ای سی کے پاس الگ سے تقرری کا کوئی عمل نہیں ہے۔ جسٹس رستوگی نے کہا کہ الیکشن کمشنر کی تقرری میں شفاف طریقہ کار ہونا چاہیے اور طریقہ کار ایسا ہونا چاہیے کہ لوگ اس پر سوال نہ کریں۔

 انہوں نے کہا کہ آپ نے دو دن پہلے ہی کسی کو الیکشن کمیشن کے عہدے پر تعینات کیا ہے، ان کی تقرری میں اختیار کیا گیا طریقہ کار بتائیں۔اس موقع پر اے جی نے جواب دیا، تو کیا ہم کہہ رہے ہیں کہ وزراء کی کونسل پر اعتماد نہیں ہے؟ 

اس پر جسٹس رستوگی نے کہا کہ نہیں، ہم اپنے اطمینان کے لیے کہہ رہے ہیں کہ ہمیں دو دن پہلے مقرر کردہ ای سی  کے بارے میں کیا طریقہ کار دکھایا گیا ہے۔اٹارنی جرنل نےجواب دیا کہ وہ پہلے ہی بتا چکے ہیں کہ کنونشن کی پیروی کیسے کی جاتی ہے اور تقرریاں سنیارٹی کی بنیاد پر کی جاتی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

راہل گاندھی کی بھارت جوڑو یاترا اندور سے برولی پہنچی

 کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کی بھارت جوڑو یاترا چھٹے دن آج صبح اندور سے مدھیہ پردیش کے برولی گاؤں کی طرف روانہ ہوئی۔ ان کے ساتھ کانگریس کے درجنوں سینئر رہنما اورافسران کے علاوہ ہزاروں کارکنان بھی موجود ہیں۔

مہاراشٹر میں ریلوے فٹ اوور برڈج کاحصہ گرپڑا 20افراد سے زیادہ زخمی،8کی حالت تشویشناک

) مہاراشٹر کے چندر پور میں بلارشاہ ریلوے اسٹیشن پر فٹ اوور برڈج کا ایک حصہ گرنے سے ایک بڑا حادثہ پیش آیا- کئی مسافر تقریباً 60فٹ کی بلندی سے پٹری پر پل سے گر گئے- حادثے میں 20مسافر زخمی ہو گئے-8 افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے-

گجرات کے نوجوان نوکریاں دینے کے جھانسے کو سمجھ چکے ہیں: ملکارجن کھرگے

کانگریس کے صدر ملکارجن کھڑگے نے اتوار کے روز بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کے نام پر صرف جھانسہ دینے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ گجرات کے نوجوان اس کی اصلیت کو سمجھ چکے ہیں اور اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کو اس کا مناسب جواب ملے گا۔

راہل گاندھی نے 'بھارت جوڑو یاترا' میں چلائی بلیٹ موٹر سائیکل، پدیاترا میں انہیں دیکھنے کے لیے امڈا جم غفیر

مدھیہ پردیش میں کانگریس کی 'بھارت جوڑو یاترا' جاری ہے۔ پدیاترا میں کافی بھیڑ جمع ہو رہی ہے۔ روزانہ ہزاروں کی تعداد میں لوگ پد یاترا میں شامل ہو رہے ہیں۔ راہل گاندھی کو آج 'بھارت جوڑو یاترا' کے دوران بلٹ موٹر سائیکل چلاتے ہوئے دیکھا گیا۔ اس جی تصاویر اور ویڈیوز منظر عام پر آگئی ...

مدھیہ پردیش کی شیوراج سنگھ حکومت عوام کو دے رہی ’انتخابی دھوکہ‘:میناکشی نٹراجن

حال ہی میں صدر دروپدی مرمو نے مدھیہ پردیش میں دو دن کا قیام کیا۔ ریاستی حکومت کی طرف سے شہڈول ضلع کے لال پور میں برسا منڈا جینتی کے موقع پر منعقدہ ’آدیواسی گورو دیوس‘ میں مدھیہ پردیش 'پی ای ایس اے' اصول کے باضابطہ نفاذ کا اعلان کیا گیا۔