حکومت بچوں کی فیس معاف اور ٹیچروں کو مالی تعاون فراہم کرے: اجے کمار للو

Source: S.O. News Service | Published on 29th July 2020, 10:29 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،29؍جولائی(ایس او نیوز؍ایجنسی)اترپردیش کانگریس صدر اجے کمار للو نے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کو خط لکھ کر کورونا وبا میں پرائیویٹ اسکولوں میں بچوں کی فیس معافی اور ٹیچروں و دیگر ملازمین کے لئے مالی مدد کا مطالبہ کیا ہے۔ للو نے کہا کہ گزشتہ چار ماہ سے عالمی وبا کووڈ۔19 کی وجہ سے روزگار پر کافی اثر پڑا ہے جس کی وجہ سے مڈل کلاس کے والدین کو اپنے بچوں کی فیس جمع کرنے میں کافی دقتوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ریاست میں چلنے والے یوپی بورڈ، سی بی ایس ای بورڈ، آئی سی ایس ای بورڈ اور دیگر بورڈوں کے طلبہ کے چار مہینے کی فیس معاف کی جائے، جبکہ ان منظورشدہ یا غیر منظور شدہ تعلیمی اداروں میں کام کرنے والے ٹیچروں اور ملازمین کو حکومت کم سے کم آٹھ ہزار روپئے فی ماہ کے حساب سے مالی تعاون فراہم کرے۔

کانگریس لیڈر نے کہا کہ کورونا کی وجہ سے پیدا حالات کی وجہ سے نئے سال کی نصابی کتب میں تبدیلی نہ کی جائے اور بچوں کی اسکولی ڈریس بار بار نہ بدلی جائیں۔ انہوں نے کہا کہ والدین اور تعلیمی شعبہ سے وابستہ ملازمین کی پریشانیوں کو مد نظر رکھتے ہوئے سبھی کے مطالبات کو ہمددردانہ طریقہ سے نافذ کیا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا کا خاتمہ جولائی تک نہیں ہوگا: ایکسپرٹ

جس طرح کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد میں کمی درج ہو رہی ہے اس سے یہ امید بنی ہے کہ ہندوستان میں کورونا کی دوسری لہر کا خاتمہ جلد ہو جائے گا لیکن وبائی بیماریوں کے ماہر شاہد جمیل کا کہنا ہے کہ بھلے ہی ابھی کچھ ریاستوں میں کورونا کے کیس کم ہوتے نظر آ رہے ہوں لیکن دوسری لہر کا ...

سادگی کے ساتھ عید منائیں اور چھوٹی جماعت کے ساتھ عید کی نماز ادا کریں ، سرکردہ مسلم رہنماوں کی مسلمانوں سے اپیل

آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے صدر مولانا رابع حسنی ندوی ۔ جمعیت علماءہند کے صدر مولانا ارشد مدنی ۔ جماعت اسلامی ہند کے امیر سید سعادت اللہ حسینی سمیت دیگر سرکردہ علماء اور مسلم قائدین مسلمانوں نے اپیل کی ہے کہ وہ کرونا کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر احتیاط کریں اور مختصر جماعت ...

لاک ڈاؤن پر ہو سختی سے عمل: اشوک گہلوت

راجستھان میں عالمی وبا کورونا کی دوسری لہر کی چین توڑنے کے لئے آج صبح 5بجے سے لے کر 24 مئی تک سخت لاک ڈاؤن نافذ ہوگیا ہے۔ اس مدت کے دوران، ہنگامی اور ضروری خدمات، میڈیکل، دودھ اور دیگر ضروری خدمات کے لئے رعایت رہے گی۔