بھٹکل انجینرنگ کالج کے شاندار نتائج؛ تین شعبوں میں ملی صد فیصد کامیابی؛ 122 طلبہ امتیازی نمبرات سے کامیاب

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 24th October 2020, 12:53 AM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 23 اکتوبر (ایس او نیوز) بھٹکل انجمن انجینرنگ کالج کے فائنل سمسٹر میں  طلبہ نے بہترین پرفارمینس پیش کرتے ہوئے شاندار کامیابی درج کرتے ہوئے  کالج کا نام روشن کردیا ہے۔ 

کالج کی شاندار کامیابی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ ویسویسوریا ٹیکنالوجیکل  یونیورسٹی سے ملحق انجمن انجینرنگ کالج بھٹکل کے  جملہ 149 طلبہ میں سے  122 طلبہ امتیازی نمبرات یعنی ڈسٹنکشن لے کر کامیاب ہوئے ہیں، 18 طلبہ فرسٹ کلا س سے اور دو سکینڈ کلاس سے کامیاب ہوئے ہیں۔

انجمن انجینرنگ کالج  جسے اب انجمن انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی اینڈ مینجمنٹ کا نام دیا گیا ہے۔ اس بار کالج کے تین ڈپارٹمنٹ  الیکٹرانکس اینڈ کمیونیکشن، الیکٹریکل اینڈ الیکٹرونیکس اور انفارمیشن سائنس میں طلبہ نے صد فیصد کامیابی حاصل کی ہے جبکہ کمپوٹر سائنس میں کامیابی کا اوسط 97.2 فیصد، میکانیکل انجینرنگ میں 96 فیصد اور سیول انجینرنگ میں کامیابی کا اوسط 89 فیصد ریکارڈ کیا گیا ہے۔

سیول انجینرنگ کی طالبہ اسنیہا پانڈو نائیک نے700 میں 658 مارکس کے ساتھ پوری کالج میں ٹاپ کیا ہے، اس کو  9.65 SGPA  مارکس ملے ہیں۔

کمپوٹرسائنس میں نشاد جعفر نے 635 مارکس، الیکٹرونکس اینڈ کمیونیکشن میں یوگیتا پرمیشور بھنڈاری نے 625 مارکس، الیکٹریکل اینڈ الیکٹرانکس میں وشال پیٹر نے 624 مارکس، میکانیکل انجینرنگ میں رویسٹن ایم لوئیس نے 622 مارکس اور انفارمیشن سائنس اینڈ انجینرنگ میں ساجدہ ایچ ایم قاسم نے 559 مارکس کے ساتھ  انجینرنگ کے الگ الگ شعبوں  میں ٹاپ پر ہیں۔

انجمن انجینرنگ کالج کے اس  شاندار نتائج پر انجمن انتظامیہ سمیت کالج پرنسپال اور دیگر اسٹاف نے تمام طلبہ کو مبارکباد پیش کی ہے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: دیواروں پر اشتعال انگیزتحریر کے سلسلے میں کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا۔ پولیس کی وضاحت 

کل 3 دسمبر کو میڈیا میں یہ خبر عام ہوگئی تھی کہ چند دن پہلے منگلورو شہر میں دو مقامات پر لشکر طیبہ اور طالبان کی حمایت میں جو اشتعال انگیزپیغام لکھنے کے الزام میں منگلورو سٹی پولیس نے تیرتھ ہلّی کے محمد نذیر نامی ایک شخص کو گرفتار کرلیا ہے۔

سرسی : وشوناتھ کی طرف سے ظاہری طورپر بیان دینا ٹھیک نہیں ہے: وزیر جگدیش شٹر

اگرکسی کو لیڈران کے خلاف عدم اطمینا ن ہے کوئی شکایت ہے تو وہ ریاستی پارٹی صدر کے ساتھ بات کرے ۔ اس طرح سب کے سامنے ظاہری طورپر  بیان بازی  اچھی روایت نہیں ہونے کا وزیر برائے بڑی اور متوسط صنعت کاری جگدیش شٹر نے خیال  ظاہر  کیا۔

کاروار:وزیر داخلہ بسوراج بومائی کا کاروار دورہ : رات کےکرفیو کے متعلق اگلے دودنوں میں فیصلہ ہوگا

’مراٹھا ترقی بورڈ‘ کے  قیام کے خلاف مختلف تنظیموں کی جانب سے اعلان کئے گئے 5دسمبر کے بند کے دوران اگر  زبردستی بند کرایا گیا تو ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی، اس بات کا انتباہ   ریاستی وزیر داخلہ بسوراج بومائی نے  دیا۔

منی پال : خصوصی اساتذہ اور غیر تدریسی عملے کی تنخواہوں کو دوگنا کرنے کی مانگ لے کر علامتی احتجاج

ریاست کے خصوصی اسکولوں (معذور واپاہج اسکول) کے معذور و اپاہج اساتذہ اور غیر تدریسی عملہ اپنے اعزازیہ کو دوگنا کرنےسمیت کئی مطالبات کو لےکر کرناٹکا راجیہ  خصوصی اساتذہ سنگھ اُڈپی ضلع شاخ کی جانب سے منی پال میں واقع ڈپٹی کمشنر دفترکے سامنے ایک دن کا علامتی احتجاج درج کیا۔