اتر پردیش کورونا کے ساتھ ساتھ ’سیاسی انفیکشن‘ کا بھی شکار: اکھلیش یادو

Source: S.O. News Service | Published on 11th June 2021, 12:06 AM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،10؍جون (ایس او نیوز؍ایجنسی) سماج وادی پارٹی (ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو نے آج کہا کہ اترپردیش کورونا انفکشن کے ساتھ سیاسی انفکشن سے بھی نبردآزما ہے۔ بی جے پی حکومت کے کچھ ہی دن بچے ہیں، ایسے میں اب وزیر اعلی کا کنٹرول بھی ڈھیلا پڑتا جا رہا ہے۔ جس طرح سے دہلی۔لکھنو کے درمیان کھینچ تان کے اشارے ہیں اس سے معلوم ہوتا ہے کہ جو دکھ رہا ہے وہ اگلے بحران کا اشارہ ہے۔ حکومت ناکام ہے اور وزیر اعلی غیر فعال ہیں۔ پھر بھی دہلی کی دوڑ کس لئے ہو رہی ہے ریاست کے عوام سچائی سے واقف ہیں۔

کورونا انفیکشن کی تعداد بھلے ہی کم ہوگئی ہے لیکن ابھی بھی اسپتالوں میں اور گھروں میں انفکشن کم نہیں ہے۔ خود پی جی آئی کی سروے رپورٹ سے انکشاف ہوا ہے کہ 80 فیصدی مریضوں پر فنگس حملہ کر رہا ہے۔ فنگس کے مکمل علاج کی سہولیت ابھی بھی دستیاب نہیں ہے۔ کورونا انفکشن میں اب دوسری بیماریوں کے آثار بھی دکھائی پڑنے لگے ہیں۔ مریض تڑپ رہے ہیں۔ ڈاکٹر اپنے انتظامی افسر چھینے جانے سے پریشان ہیں۔ کنٹراکٹ پر تعینات پیرامیڈیکل اسٹاف شٹل بنے ہوئے ہیں۔

ماہرین بتا رہے ہیں کہ تیسری لہر بھی آنے والی ہے۔ بچوں کے صحت کے سلسلے میں تشویش کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ ٹیکہ کاری کی رفتار دھیمی ہے۔ ویکسین کی تقسیم کے سلسلے میں ریاستوں اور مرکز کے درمیان الزامات کا دور چل چکا ہے۔ ریاست کو ہرایک کو مفت ٹیکہ لگانے کی مہم تو زور و شور سے کیا گیا ہے لیکن آن لائن ۔ آف لائن کے جھمیلے میں گاؤں والے پریشان ہیں۔ ریاست کی آبادی کو دیکھتے ہوئے ٹیکہ کاری کی رفتار سست ہے۔

بی جے پی اقتدار میں صرف سماج وادی حکومت کے وقت شروع کی گئی طبی خدمات کو برباد کیا گیا ہے، اور جب کورونا کی آفت آئی تو وہی سہولیات کام آئیں۔ لکھنو میں کینسر اسپتال، اودھ شلپ گرام کے علاوہ اس وقت بنے میڈیکل کالج اور ایمبولنس خدمات سے ہی بی جے پی حکومت کو کام چلانا پڑا۔

ایک نظر اس پر بھی

 جموں و کشمیر کے راجوری میں گئو رکشکوں کے ذریعے 20 سالہ نوجوان کا پیٹ پیٹ کر قتل! محبوبہ مفتی نے متاثرہ کنبہ کے حق میں اٹھائی آواز

جموں و کشمیر کے راجوری ضلع میں ایک 20 سالہ نوجوان اعجاز ڈار کو کچھ نامعلوم افراد نے اس وقت قتل کر دیا جب وہ اپنی بھینس لے کر جا رہے تھے۔ یہ واقعہ مراد نگر گاؤں کے نزیک پیر کے روز پیش آیا۔

وجے مالیا، نیرو مودی اور میہل چوکسی کے ضبط شدہ 9371 کروڑ روپے سرکاری بینکوں کو منتقل

سرکاری بنیکوں سے اربوں روپے کے قرض لیکر فرار کاروباریوں وجے مالیا، نیرو مودی اور میہول چوکسی کے ملک و بیرون ملک میں ضبط 18170.02 کروڑ روپے اور املاک میں 9317.17 کرور روپے بینکوں اور حکومت کو منتقل کر دیئے گئے ہیں۔