اتر پردیش: بی جے پی میں یکم ستمبر سے ہوں گے تنظیم کے انتخابات

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th August 2019, 10:32 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،14اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)اتر پردیش میں بھی بی جے پی کی تنظیم انتخابات کی تیاریاں شروع ہو گئیں ہیں۔صوبہ تنظیم وزیر سنیل بنسل نے اس کے لئے مکمل پروگرام بھی جاری کر دیا ہے۔اتر پردیش میں صوبہ عاملہ سے لے کر ضلع کی سطح تک کی یونٹ کے انتخابات انتظام کے مکمل خاکہ تیار کر لیا گیا ہے۔اتر پردیش میں بی جے پی کی تنظیم وزیر سنیل بنسل کے مطابق ابھی رکنیت مہم چل رہی ہے۔آرٹیکل 370 کے بعد سے بی جے پی سے تیزی سے لوگ شامل ہورہے ہیں،جن بوتھوں پر بی جے پی کو ووٹ نہیں ملتے تھے، وہاں اب 60 سے 70 فیصد لوگ بی جے پی سے جڑ رہے ہیں۔

صوبہ تنظیم وزیر سنیل بنسل نے بتایا کہ یکم ستمبر سے پوری ریاست میں تنظیمی انتخابات شروع ہوں گے،تین دن میں بوتھ، دو دن میں منڈل اور ایک دن میں ضلع کا انتخابات کرایا جائے گا۔بی جے پی نے وزیر آشوتوش ٹنڈن کو تنظیم انتخابات انچارج اورجوائنٹ چارج کے طور پر تریمبک ترپاٹھی اور واپی سنگھ کو ذمہ داری دی ہے۔بتا دیں کہ قومی مجلس عاملہ کے انتخابات کے لیے بی جے پی نے سابق وزیر زراعت اور ایم پی رادھا موہن سنگھ کو الیکشن افسر مقرر کیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ای ڈی کی کارروائی سیاست پر مبنی ہے، چدمبرم کے وکیل ارشدیپ کا بیان

 سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم کے خلاف ای ڈی (انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ) نے آئی این ایکس میڈیا منی لانڈرنگ معاملہ میں بدھ کے روز لک آؤٹ نوٹس جاری کیا ہے۔ یہ نوٹس جاری ہونے کے بعد پی چدمبرم ملک سے باہر نہیں جا پائیں گے اور تمام ہوائی اڈوں، امیگریشن ڈیسکوں کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے۔

بی ایس پی پرنسپل اپوزیشن پارٹی بننے کے لئے کوشاں

 لوک سبھا انتخابات میں 10سیٹیں جیتنے والی بہوجن سماج پارٹی ریاست میں حکمراں جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی اسمبلی میں پرنسپل اپوزیشن پارٹی کے طور پر ابھر کر سامنے آنے کے لئے کوشاں ہے۔ پارٹی نےسماج وادی پارٹی کی جگہ لینے کے لئے کوششیں تیز کردی ہیں۔