اتر پردیش: بے رحم باپ نے 4 معصوم بیٹیوں کو ندی میں پھینکا، 3 کی موت

Source: S.O. News Service | Published on 1st June 2020, 9:17 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

سنت کبیرنگر،یکم جون(ایس او نیوز؍یو این آئی) اترپردیش کے ضلع سنت کبیر نگر میں دھنگھٹا علاقے میں ایک والد نے اپنی چار معصوم بیٹوں کو زندہ ندی میں پھینک دیا۔ اڈیشنل سپرنٹندنٹ آف پولیس نے استی شریواستو نے پیر کو یہاں بتایا کہ دھنگھٹا علاقے کے دیپ پور ڈیہوا گاؤں باشندہ سرفراز نامی شخص نے اتوار کی رات اپنے ایک دوست کے ساتھ ملک کر اپنی تین بیٹوں کو زندہ گھاگھرا ندی میں پھینک دیا۔

اطلاع ملنے کے بعد موقع پر پہنچی پولیس نے لاشوں کا پتہ لگانے کے لئے این ڈی آر ایف اور مقامی غوطہ خوروں کو تعینات کیا ہے۔ پولیس نے سرفراز اور اس کے دوست کو گرفتار کرلیا ہے۔ کلیدی ملزم سرفراز 20 دن پہلے اپنی بیوی اور چار بیٹیوں کے ساتھ ممبئی سے واپس آیا ہے تھا۔ وہ ممبئی میں ٹرک ڈرائیوری کا کام کرتا تھا۔ لیکن لاک ڈاؤن کی وجہ سے وہ گاؤں واپس آگیا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ وہ ڈرگس کا عادی ہے۔

ذرائع کے مطابق اس کے اس انتہائی قدم کے پیچھے گھریلو تنازع اصل سبب ہے۔ پولیس کے مطابق جن لڑکیوں کو ندی میں پھینکنے کی وجہ سے موت ہوگئی ہے ان کی شناخت ثنا (7)، سبا (04) اور شمع(02) کی حیثیت سے ہوئی ہے۔ تاہم چوتھی بیٹی جو تقریباً 7 مہینے کی ہے، کسی طرح بچ گئی۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا انفیکشن نے پھر بنایا ریکارڈ، 24 گھنٹوں میں ملے 22,771 نئے کیس، 442 لوگوں کی موت

ملک میں کورونا وائرس روز بروز شدید شکل اختیار کرتا جارہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس کے ریکارڈ 22،771 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد بڑھ کر 6.48 لاکھ ہوچکی ہے۔

ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔

دہلی میں کورونا کے معاملات 94000سے زیادہ، 2900سے زیادہ لوگو ں کی موت

کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور راجدھانی میں کل 2520نئے معاملے سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد جمعہ کو بڑھ کر 94000سے زیادہ ہوگئی ہے اور 59مزید لوگوں کی موت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 2923ہوگئی ہے۔

بھٹکل میں نجی اسپتال کی نرس کو لگ گیا کورونا کا مرض۔ایس ایس ایل سی کی طالبہ نرس کی بیٹی کو کیا گیا ہوم کوارنٹین

ایک نجی اسپتال میں خدمات انجام دینے والی نرس کو کووِڈ کا مرض لاحق ہونے کے بعدایس ایس ایل سی کا امتحان دے رہی اس کی بیٹی کو امتحان سے باز رکھتے ہوئے ہوم کوارنٹین کیا گیا ہے۔

کورونا پر قابو پانا عوام کے اپنے ہاتھ میں ہے۔ بھٹکل میں قائم کیے جارہے ہیں ’مِنی فیور کلینک‘۔ اسسٹنٹ کمشنر کا بیان

اسسٹنٹ کمشنر بھرت ایس نے بھٹکل میں بگڑتی ہوئی کووِڈ کی صورت حال پر ایک پریس کانفرنس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وباء کو قابو میں کرنا اب عوام کے اپنے ہاتھ میں ہے۔اور اگر عوام اس کو سنجیدگی سے لیں تو یہ کوئی مشکل کام بھی نہیں ہے۔