شہریت ترمیمی بل کے خلاف امریکی ادارہ آیا سامنے، امت شاہ پر پابندی لگانے کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | Published on 10th December 2019, 8:33 PM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

واشنگٹن،10/دسمبر(ایس او نیوز/یو این آئی) شہریت ترمیمی بل کے لوک سبھا سے منظور ہونے کے بعد جہاں ایک طرف ملک میں حزب اختلاف کی جماعتیں اور عوام سراپا احتجاج ہیں اور حکومت کو ہدف تنقید بنا رہی ہیں وہیں دوسری طرف بین الاقوامی سطح پر بھی ہندوستان کی بدنامی ہونے لگی ہے۔ امریکہ کے ایک ادارے نے تو امت شاہ پر پابندی تک عائد کرنے کا مطالبہ کر ڈالا ہے۔ امریکہ کے فیڈرل کمیشن برائے عالمی مذہبی آزادی کا کہنا ہے کہ ہندوستان میں شہریت ترمیمی بل منظور ہونے کے بعد امریکی حکومت ہندوستان کے وزیرداخلہ امت شاہ پرپابندی عائد کرے۔

میڈیا رپورٹوں کے مطابق امریکہ کے فیڈرل کمیشن برائے عالمی مذہبی آزادی نے ہندوستانی لوک سبھا میں شہریت کے متنازع ترمیمی بل کی منظوری پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا اس متنازع بل کی ہندوستان کے ایوان میں منظوری تشویش کا باعث ہے اور امریکی حکومت کو چاہئے کہ وہ بل کو پیش کرنے والے ہندوستانی وزیرداخلہ امت شاہ پرپابندی لگائے۔

امریکی کمیشن کا کہنا ہے کہ مذہب کی بنیاد پرمسلمانوں کوبل میں شامل نہیں کیا گیا اور یہ بل غلط سمت میں خطرناک قدم ہے ۔ نیز حکومت ہند ایک عشرے سے کمیشن کی رپورٹوں کو نظراندازکررہی ہے۔ ادھر، ہندوستانی وزارت خارجہ کی جانب سے امریکی ادارے ’فیڈرل کمیشن برائے عالمی مذہبی آزادی‘ کے بیان کو یکسر مسترد کر دیا گیا ہے۔ وزارت خارجہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ شہریت ترمیمی بل سے متعلق یو ایس سی آئی آر ایف کا بیان درست نہیں ہے اور یہ بلاضرورت دیا گیا بیان ہے۔

وزارت خارجہ نے مزید کہا، شہریت ترمیمی بل پڑوسی ممالک سے ہندوستان میں موجود مظلوم مذہبی اقلیتوں کو فوری طور پر راحت فراہم کرنے کے لئے ہے۔ یہ ان کی موجودہ مشکلات کو دور کرنے اور ان کے بنیادی انسانی حقوق کی فراہمی کرنے کی کوشش کرتا ہے۔ نیز نہ تو شہرت ترمیمی بل اور نہ ہی این آر سی (قومی شہریت رجسٹر) عمل کسی بھی عقیدے کے ہندوستانی سے اس کی شہریت چھیننے کی کوشش نہیں کرتے۔ امریکہ سمیت ہر ملک کو اپنی شہریت دینے اور توثیق کرنے کا حق ہے اور اس کے لئے مختلف پالیسیاں بنائی جا سکتی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا سے 95542 افراد ہلاک، متاثرین کی تعداد 60.74 لاکھ

 ملک میں گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران متاثرہ افراد کے 82 ہزار سے زیادہ نئے معاملے سامنے آنے سے متاثرین کی تعداد 60.74 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے جبکہ کورونا کے انفیکشن سے 74 ہزار سے زائد افراد صحت مند ہوچکے ہیں جس کے نتیجے میں صحت مند افراد کی تعداد 50.16 لاکھ ہوگئی ہے۔

بہار اسمبلی انتخابات میں ٹکٹ کے لئے بی جے پی کے دفتر میں ہنگامہ

بہار اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے بعد سے ٹکٹ کے دعویداروں کی سرگرمیاں اس قدر بڑھ گئی ہیں کہ ان کے حامی کارکنان ہنگامہ آرائی اور ہاتھاپائی کرنے تک آمادہ ہیں اور کل ایسا ہی نظارہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ریاستی دفتر میں دیکھا گیا۔

بالاسبرامنیم اس ملک کے موسیقی اورلسانی ثقافت کی ایک عمدہ مثال تھے: سونیا گاندھی

کانگریس  کی  چیئرپرسن سونیا گاندھی نے موسیقی کی دنیا کی ایک عظیم ہستی بالاسبرامنیم کے انتقال پراپنے گہرے رنج  وغم  کا اظہار کرتےہوئے کہا ہے کہ وہ ملک کی  موسیقی اور لسانی  ثقافت کے عمدہ مثال تھے اور ان کے نہیں رہنے  سے آرٹ اور کلچرل کی دنیا پھیکی پڑگئی ہے۔

بحرین کی اسرائیل سے ڈیل،علاقائی سلامتی کو تقویت ملے گی: شیخ سلمان کی نیتن یاہو سے گفتگو

بحرین کے ولی عہد شیخ سلمان بن حمد آل خلیفہ نے اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو سے ٹیلی فون پر بات چیت کی ہے۔انھوں نے عالمی سلامتی اور امن کو مضبوط بنانے اور امن ، استحکام اور خوش حالی کے فروغ کے لیے مسلسل کوششیں جاری رکھنے کی ضرورت پر زوردیا ہے۔

ایردوآن نے یو این میں اٹھایا مسئلہ کشمیر، ’اندرونی معاملات میں دخل نہ دے ترکی‘ انڈیا کی تاکید

 جموں و کشمیر کے حوالہ سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوآن کے بیان پر اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ ٹی ایس ترومورتی نے سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کو دوسرے ممالک کی خودمختاری کا احترام کرنا سیکھنا چاہئے۔