کشمیر سے مواصلاتی پابندیاں ہٹائی جانی چاہئیں: امریکی کانگریس کمیٹی

Source: S.O. News Service | Published on 9th October 2019, 6:22 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،9؍اکتوبر (ایس او نیوز؍یواین آئی) سیاحوں کو کشمیر چھوڑنے سے متعلق جاری ایڈوائزری کو ہٹانے کے جموں و کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک کی ہدایت کے کچھ ہی گھنٹوں بعد غیر ملکی معاملات کی امریکی کانگریس کمیٹی نے ہندوستان سے وادی میں ’مواصلاتی پابندیوں‘ کو ہٹانے کی یہ کہتے ہوئے اپیل کی ہے کہ اس سے لوگوں کی زندگی پر ’تباہ کن اثرات‘ مرتب ہو رہے ہیں۔ کمیٹی نے ٹوئٹ کیا ’’کشمیر میں ہندوستان کی مواصلاتی پابندیوں سے کشمیریوں کی روزمرہ زندگی پر تباہ کن اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ ہندوستانی کے لئے یہ وقت ان پابندیوں کو ہٹانے اور دیگر ہندوستانی شہریوں کی طرح ہی كشميریوں کو مساوی حقوق اور خصوصی مراعات فراہم کرنے کا ہے۔

واضح رہے کہ مرکزی حکومت نے پانچ اگست کو جموں کشمیر کو خصوصی درجہ دینے والے آرٹیکل 370 منسوخ کر دیا اور ریاست کو دو مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں تقسیم کر دیا۔ اس کے بعد سے کشمیر میں ہڑتال جا ری ہے اور احتیاطی طور پر مواصلات کے ذرائع پر پابندی عائد کی گئی ہے۔ ہندوستان ہمیشہ سے یہ کہتا آیا ہے کہ آرٹیکل 370 کو منسوخ کرنے کا فیصلہ ہندوستان کا ’اندرونی معاملہ‘ ہے۔ ہندوستان کا کہنا ہے کہ گڑبڑی پھیلانے سے پاکستان کو روکنے کے لئے احتیاطاً وادی میں پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا ہندوستان کو تباہ کرنے کے درپے، ریکارڈ 27 ہزار نئے کیسز درج، مزید 519 ہلاکتیں

  ہندوستان میں کورونا وائرس کے یومیہ کیسز بہت تیزی کے ساتھ بڑھ رہے ہیں اور ایسا محسوس ہو رہا ہے جیسے کورونا نے ہندوستان کو تباہ کرنے کا عزم کر لیا ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 27،114 نئے کیسزرپورٹ ہوئے ہیں جو ایک دن میں متاثرہ افراد کی سب سے زیادہ تعداد ہے اور اسی عرصہ میں 519 افراد ...

ایمبولینس نے کورونا مریض سے 7 کلومیٹر کے لئے وصول کئے 8 ہزار روپئے، معاملہ درج

مہاراشٹر میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی صورت حال مسلسل بگڑتی جا رہی ہے۔ مریضوں کی تعداد بڑھنے کے ساتھ اسپتالوں میں بیڈ بھی کم پڑنے لگے ہیں۔ کورونا وبا کے اس بحران کی گھڑی میں بھی کچھ لوگ مریضوں کو لوٹنے سے باز نہیں آ رہے ہیں۔