امریکا کی طرف سے بلیک لسٹ حوثیوں کے 'یوٹیوب' کے چینل بند

Source: S.O. News Service | Published on 25th January 2021, 7:41 PM | عالمی خبریں |

نیویارک، 25جنوری (آئی این ایس انڈیا) امریکی حکومت کی طرف سے یمن کے ایرانی حمایت یافتہ'حوثی ' باغیوں کو دہشت گرد تنظیم قراردیئے جانے کے بعد عالمی شہرت یافتہ ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ 'یوٹیوب' نے بھی حوثیوں کے 7 چینل بند کردیے۔ گوگل کی ملکیتی یوٹیوب نے حوثیوں کا آفیشل یوٹیون چینل'المسیرہ المباشر' اور 'الاعلام الحربی' کے یوٹیوب چینل بھی بلاک کردیے ہیں۔

یوٹیوب نے 'انصاراللہ بریگیڈ' چینل اور 'الاعلام الحربی'، زوامل انصار اللہ'، المسیرہ مباشر، ھنا المسیرہ، زوامل اناشید اور پروڈکشن یونٹ کو بند کردیا ہے۔

یوٹیوب کی طرف سے جاری کردہ بیان میں‌کہا گیا ہے کہ حوثیوں کے ملکیتی یوٹیوب چینلوں کی بندش کی وجہ کمپنی کی پالیسی کی خلاف ورزی ہے۔ ان چینلوں پر ایسا مواد پیش کیا جا رہا تھا جس میں ہمارے پالیسی اصولوں کی سنگین خلاف ورزیاں‌ کی جا رہی ہیں۔
یمنی فالورز کا کہنا ہے کہ یوٹیوب نے یمن میں حوثیوں کے مقرب دوسرے ذرائع ابلاغ کے چینل جن میں 'نیوز یمن' بھی شامل کا چینل بھی بند کر دیا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ ہفتے امریکی حکومت نے حوثی ملیشیا کو ایک دہشت گرد تنظیم قرار دیا تھا۔ گذشتہ منگل سے امریکی حکومت نے اس فیصلے پر باقاعدہ عمل درآمد شروع کردیا۔

امریکا نے حوثی ملیشیا کی امدادی تنظیموں کو بلیک لسٹ نہیں کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

تفریق کی وجہ سے دنیا میں کووڈ-19کی وبا مزید 7 سال مسلط رہ سکتی ہے: ماہرین

  اگر امیر ملکوں نے کورونا ویکسین پر اپنی اجارہ داری ختم نہ کی تو کووڈ 19 کی وبا آئندہ 7 سال تک ساری دنیا پر مسلط رہ سکتی ہے۔ یہ انتباہ عوامی صحت اور وبائی ماہرین نے دیا ہے۔خیال رہے 4 مارچ 2021 تک دنیا بھر میں کورونا ویکسین کی 28 کروڑ 36 لاکھ خوراکیں دی جاچکی تھیں۔

امریکی محکمہ خارجہ کا کشمیر پر بیان خطے کی متنازع حیثیت کے برعکس ہے، پاکستان

پاکستان نے امریکی محکمہ خارجہ کے جموں و کشمیر سے متعلق اس بیان کو خطے کی متنازع حیثیت کے برعکس قرار دیا ہے جس میں بھارتی زیر انتظام کشمیر کے لیے 'بھارت کا وفاقی علاقہ' کی اصطلاح استعمال کی گئی ہے۔