یوپی: بی جے پی کو زوردار جھٹکا، یوگی کابینہ میں وزیر سوامی پرساد موریہ کا استعفیٰ، سماجوادی پارٹی میں شامل

Source: S.O. News Service | Published on 11th January 2022, 10:33 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،11؍جنوری (ایس او نیوز؍ایجنسی) اتر پردیش اسمبلی انتخاب سے ٹھیک پہلے بی جے پی کو زوردار جھٹکا لگا ہے۔ یوگی کابینہ میں وزیر برائے محنت و کو آرڈنیشن سوامی پرساد موریہ نے استعفیٰ دے دیا ہے۔ گورنر کو بھیجے استعفیٰ میں سوامی پرساد موریہ نے بڑھتی بے روزگاری، دلتوں و پسماندوں کے تئیں بی جے پی حکومت کے رویہ اور کاروباروں کو نظر انداز کیے جانے کو اپنے استعفیٰ کی وجہ بتایا ہے۔ اس کے ساتھ ہی سوامی پرساد موریہ نے بی جے پی سے بھی استعفیٰ دینے کا اعلان کر دیا، اور کچھ ہی دیر بعد سماجوادی پارٹی میں شمولیت اختیار کر لی۔

گورنر آنندی بین پٹیل کو بھیجے گئے اپنے استعفیٰ میں سوامی پرساد موریہ نے کہا کہ ’’وزیر کی شکل میں برعکس حالات و نظریات میں رہ کر بھی بہت ہی دلچسپی کے ساتھ ذمہ داری نبھائی ہے، لیکن دلتوں، پسماندوں، کسانوں، بے روزگار نوجوانوں اور اسمال-مائیکرو و میڈیم کلاس کے کاروباریوں کو نظر انداز کرنے والے رویہ کی وجہ سے اتر پردیش کابینہ سے میں استعفیٰ دیتا ہوں۔‘‘

سوامی پرساد موریہ کے کابینہ وزیر کے عہدہ سے استعفیٰ دینے کے بعد سماجوادی پارٹی اور قومی سربراہ اکھلیش یادو نے ان کے ساتھ ایک تصویر شیئر کی اور لکھا ’’سماجی انصاف اور برابری کی لڑائی لڑنے والے مقبول لیڈر سوامی پرساد موریہ جی اور ان کے ساتھ آنے والے دیگر سبھی لیڈروں، کارکنان اور حامیوں کا سماجوادی پارٹی میں باعزت دلی استقبال۔‘‘

میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ کئی دنوں سے بات چیت چل رہی تھی کہ سوامی پرساد موریہ بی جے پی کا دامن چھوڑ کر اکھلیش یادو کی سائیکل پر سوار ہو سکتے ہیں۔ کہا جا رہا ہے کہ سوامی پرساد موریہ کے جوائننگ معاملے کو سیدھے اکھلیش یادو دیکھ رہے تھے اور باتیں ان کی سطح پر ہی ہو رہی تھی۔ سوامی پرساد موریہ کے استعفیٰ کو بی جے پی کے لیے زوردار جھٹکا مانا جا رہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں پٹرول کے دام 96.72 روپے فی لیٹر پر برقرار

 تیل کی بین الاقوامی قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے درمیان، جمعرات کو گھریلو بازار میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی، جس سے ایندھن کی قیمتیں مسلسل 40ویں دن مستحکم رہیں۔

جی ایس ٹی کی مار: پیک شدہ گوشت، پنیر، مچھلی، دہی مہنگی

وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن کی صدارت میں منعقدہ جی ایس ٹی کونسل کی دو روزہ میٹنگ میں حکومت نے کئی اہم فیصلے لیے ہیں۔ ان میں جہاں کچھ چیزوں پر ٹیکس عائد کر کے عام آدمی کی جیب پر بوجھ بڑھایا گیا ہے، وہیں کچھ شعبوں کو بڑی راحت بھی دی گئی ہے۔ تاہم، ریاستوں کو معاوضہ اور آن لائن گیمنگ ...