’سوورنا تریبھوجا‘ غرقابی المیہ: متاثرہ خاندانوں نے کیا سرکاری امداد قبول کرنے سے انکار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th May 2019, 12:13 PM | ساحلی خبریں |

اڈپی:12/مئی (ایس او نیوز) مالوان کے سمندر میں غرقاب کشتی پر موجود سات ماہی گیروں کے اہل خانہ کوریاستی حکومت کی طرف سے فی کس 10لاکھ روپے امداد دینے کا جو اعلان کیا گیا تھااسے قبول کرنے سے متاثرہ خاندانوں نے انکار کردیا ہے۔

خیال رہے کہ اڈپی ضلع انچارج وزیر ڈاکٹر جئے مالا نے ریاستی حکومت نے فشر مینس کیالیمٹی ریلیف فنڈسے 6لاکھ روپے اور چیف منسٹر ریلیف فنڈ سے 4لاکھ روپے متاثرہ خاندان والوں کو مشروط معاوضہ دینے کا اعلان کیا تھا جس کے مطابق معاوضے کی رقم قبول کرنے کے لئے متاثرہ افراد کو نقصان کی بھرپائی کا قرار نامہ indemnity bondدینا لازمی تھا۔یعنی اگر لاپتہ ماہی گیر زندہ واپس لوٹتے ہیں تو پھر انہیں معاوضے کی رقم سرکار کو واپس لوٹانا ہوگا۔

ملپے اور بھٹکل کے متاثرہ ماہی گیر خاندان والوں نے معاوضے کی رقم قبول نہ کرنے کی ایک وجہ یہ نقصان کی بھرپائی کا قرار نامہ ہے۔ جبکہ دوسری بڑی اور اہم وجہ یہ بتائی ہے کہ معاوضہ اس شر ط کے ساتھ دیا جارہا ہے کہ لاپتہ ماہی گیر وں کی اگر مو ت واقع ہوئی ہے، تو ہی اس معاوضے پر ان کا حق ہوگا۔ جبکہ ابھی تک کسی بھی سرکاری ایجنسی نے متعلقہ ماہی گیروں کی موت کی تصدیق نہیں کی ہے۔ اب اگر اہل خانہ اس رقم کو قبول کرتے ہیں تو اس کامطلب یہی ہوگا کہ انہوں نے لاپتہ ماہی گیروں کی ہلاکت کو مان لیا ہے۔

متاثرہ ماہی گیر خاندانوں کے اس موقف سے محکمہ ماہی گیری کے افسران کو جھنجھلاہٹ میں مبتلا کردیا ہے۔کیونکہ اب تک اس مسئلے کو اسمبلی الیکشن کے دورا ن سیا سی طور پر اچھالے جانے اور مختلف حلقوں سے دباؤ کی وجہ سے وہ پریشان تھے۔ اب حکومت کی طرف سے امداد فراہم کرکے اس مسئلے کی گرمی کرنے کی کوشش ہورہی ہے تو متاثرہ خاندان والوں نے ایک نیا بکھیڑا کردیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔

شیوپرکاش دیوراج بنے ضلع شمالی کینرا کے نئے ایس پی۔ ونائیک پاٹل کا کلبرگی تبادلہ۔ بھٹکل سب انسپکٹر کا بھی تبادلہ

ضلع شمالی کینرا کے نئے سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کے طور پر شیوپرکاش دیوراج کو تعینات کیا گیا ہے، جبکہ موجودہ ایس پی ونائیک پاٹل کا تبادلہ کلبرگی کے لئے کردیاگیا ہے۔

مرڈیشور ساحل پر ماہی گیروں اور انتظامیہ افسران کے درمیان پارکنگ جگہ کو لےکر تنازعہ: ماہی گیروں کا احتجاج  

مرڈیشور میں مچھلی شکار پیشہ کے لئے جگہ مختص کرنے اور ماہی گیر کشتیوں کو  محفوظ رکھنے کےلئے جگہ متعین کرنے کے متعلق   ماہی گیروں اور مقامی انتظامیہ کے درمیان پھر ایک بار تنازعہ پیدا ہوگیا ہے۔

بھٹکل محکمہ تحصیل کے عملے  نے   سیاہ پٹی باندھ کرانجام دیں خدمات : ’ بنگلورو چلو ‘احتجاج کی حمایت

کرناٹکا سروئیر،رونیو مینجمنٹ اور رجسٹرار ملازمین سنگھ (کرناٹکا راجیا بھوماپنا ، کندایا ووستھے متو بھو داخلیگل کاریانرواہک نوکررسنگھ  ) کی جانب سے مختلف مطالبات کو حل کرنےکی مانگ لے کر 4ستمبر کو منائی جارہی ’ بنگلورو چلو ‘ احتجاج کی حمایت میں بھٹکل کے مختلف محکمہ جات کے عملے ...