صدر ٹرمپ کا ’آپریشن لیجنڈ‘کو کئی شہروں تک وسیع کرنے کا اعلان

Source: S.O. News Service | Published on 23rd July 2020, 6:02 PM | عالمی خبریں |

واشنگٹن ،23/جولائی (آئی این ایس انڈیا) امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نسلی امتیاز کیخلاف ملک میں جاری پرتشدد احتجاج روکنے اور امن و امان کی صورتِ حال پر قابو پانے کے لیے ’آپریشن لیجنڈ‘ کو کئی شہروں تک پھیلانے کا اعلان کیا ہے۔

وائٹ ہاؤس میں بدھ کو بریفنگ کے دوران صدر ٹرمپ نے کہا کہ وہ پرتشدد احتجاج کو روکنے کے لیے وفاقی سکیورٹی اہلکاروں کو متاثرہ ریاستوں میں تعینات کریں گے۔ صدر کی بریفنگ کے موقع پر اٹارنی جنرل ولیم بر بھی موجود تھے اور انہوں نے صحافیوں کو اس آپریشن پر عمل درآمد سے متعلق آگاہ کیا۔

امریکہ میں ان دنوں نسلی امتیاز کے خلاف ان ریاستوں میں احتجاج ہو رہا ہے جن میں سے بیشتر کے گورنرز کا تعلق حزبِ اختلاف کی جماعت ڈیموکریٹک پارٹی سے ہے۔ صدر ٹرمپ احتجاج کے اس سلسلے کو رواں برس نومبر میں ہونے والے صدارتی انتخاب کے لیے نقصان دہ سمجھتے ہیں۔

بدھ کو وائٹ ہاؤ س میں بریفنگ کے دوران صدر ٹرمپ نے مظاہروں کو ’جرائم‘ قرار دیا اور کہا کہ وہ امریکہ کے شہریوں کو ان 'جرائم' سے نجات دلانے کے لیے وفاقی سیکیورٹی فورسز کی تعیناتی کا اعلان کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ خون ریزی ختم ہونی چاہیے اور اسے ختم ہونا پڑے گا۔

امریکی محکمہ انصاف کے مطابق 'آپریشن لیجنڈ' کے تحت وفاقی فورسز کو مقامی پولیس کی معاونت کے لیے تعینات کیا جائے گا جو پرتشدد جرائم کی سرکوبی کریں گی۔

شکاگو شہر کے ڈیموکریٹ میئر لوری فائٹ فٹ اور نیو میکسیکو کے ڈیموکریٹ گورنر مچل لوجان کرشم کا کہنا ہے کہ وہ اپنی انتظامی حدود میں وفاقی ایجنٹس کو ریاست اوریگن کے شہر پورٹ لینڈ طرز کے کریک ڈاؤن کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے۔

ٹرمپ انتظامیہ نے پرتشدد مظاہروں کے بعد گزشتہ ہفتے پورٹ لینڈ میں وفاقی فورسز کو تعینات کیا تھا جہاں اہلکاروں نے کریک ڈا ؤن کرتے ہوئے متعدد مظاہرین کو حراست میں لے لیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

بحرین کی اسرائیل سے ڈیل،علاقائی سلامتی کو تقویت ملے گی: شیخ سلمان کی نیتن یاہو سے گفتگو

بحرین کے ولی عہد شیخ سلمان بن حمد آل خلیفہ نے اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو سے ٹیلی فون پر بات چیت کی ہے۔انھوں نے عالمی سلامتی اور امن کو مضبوط بنانے اور امن ، استحکام اور خوش حالی کے فروغ کے لیے مسلسل کوششیں جاری رکھنے کی ضرورت پر زوردیا ہے۔

ایردوآن نے یو این میں اٹھایا مسئلہ کشمیر، ’اندرونی معاملات میں دخل نہ دے ترکی‘ انڈیا کی تاکید

 جموں و کشمیر کے حوالہ سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوآن کے بیان پر اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ ٹی ایس ترومورتی نے سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کو دوسرے ممالک کی خودمختاری کا احترام کرنا سیکھنا چاہئے۔