کاروارکے بیت کول میں آدھی رات کو ٹرک ڈرائیوروں پر حملہ۔ نقدی اور موبائل لوٹنے کے ساتھ لاریوں کو پہنچایاگیا نقصان۔پولیس اسٹیشن سے قریب ہی پیش آئی واردات

Source: S.O. News Service | Published on 19th October 2019, 1:36 PM | ساحلی خبریں |

کاروار 19/اکتوبر (ایس او نیوز)بیت کول ماہی گیری بندر کے علاقے میں پولیس اسٹیشن سے چار قدم کے فاصلے پر جمعرات کی شب میں شرپسندوں کے ذریعے بیرونی ریاستوں سے تعلق رکھنے والے ٹرک ڈرائیوروں کو لوٹنے اور گاڑیوں کو نقصان پہنچانے کی واردات پیش آئی ہے۔

 موصولہ رپورٹ کے مطابق شرپسندوں نے بندر علاقے میں پارک کی گئی بیرونی ریاستوں کی لاریوں کو آدھی رات کے وقت نشانہ بنایااور وہے سلاخوں، چاقو اور ڈنڈوں سے ڈرائیوروں پر حملہ کیا۔تملناڈو سے تعلق رکھنے والے ایک ڈرائیور رام جیم نے بتایا کہ کچھ شرپسندوں نے گلے پر چاقو رکھ کر جان سے مارنے کی دھمکی دیتے ہوئے نقدی اور موبائل فون چھین لیے۔لاری کو بھی نقصان پہنچایا ہے۔ ہم نے محنت سے جو کمائی کی تھی وہ گاڑی کی مرمت پر خرچ کرنا پڑے گا۔اس وجہ سے آئندہ کاروار کی طرف آنے سے خوف محسوس ہونے لگا ہے۔

  کہاجاتا ہے کہ یہاں پر اسٹوریج کی گئی اشیاء کو دوسری ریاستوں تک لے جانے کے لئے ہر رات عام طور پر200سے زائد ٹینکر بیت کول بندر کے احاطے میں پارک کیے جاتے ہیں۔ ان لاریوں کے لوٹنے والی ایک گینگ اس علاقے میں سرگرم ہے اوراکثر بیرونی ریاستوں کے ڈرائیوروں کو لوٹنے کی وارداتیں انجام دی جاتی ہیں،لیکن متاثرہ ڈرائیوروں کی طرف سے پولیس کو تحریری شکایات نہیں دی جارہی ہیں۔اس سے لٹیروں کو اپنا یہ غیر قانونی کاروبار آگے بڑھانا آسان ہوگیا ہے۔اس کا نتیجہ یہ ہوا کہ ان لٹیروں سے خوف کھاکر ٹینکر ٹرک والے کاروار کی طر ف آنے سے ہچکچاتے ہیں۔اسی لئے اسٹوریج کمپنی والے کاروار کے بجائے منگلورو کا رخ کرنے کو زیادہ ترجیح دیتے ہیں۔ جس کی وجہ سے بیت کول بندر کی آمدنی بڑے پیمانے پر متاثر ہوئی ہے۔

 ڈی وائی ایس پی شنکر ماریہال نے بتایا کہ بیت کول میں کچھ شرپسندوں کی طرف سے لاری ڈرائیوروں کو لوٹنے کی شکایات زبانی طور پر سننے میں آرہی ہیں۔ قانونی حدود پار کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔بندر علاقے میں رات کے وقت گشت کرنے کے لئے مزید پولیس اہلکاروں کو ذمہ داری دی گئی ہے۔پی ایس آئی کو بھی رات کے وقت راؤنڈ اَپ کرنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا میں پھرسامنے آئے کورونا کے معاملات؛ کمٹہ میں چار اور سداپور میں ایک کی رپورٹ کورونا پوزیٹو

ضلع اُترکنڑا میں کورونا پوزیٹو کے معاملات ہر روز سامنے آرہے ہیں، آج تازہ رپورٹ کمٹہ اور سداپور سے سامنے آئی ہے جہاں بالترتیب چار اور ایک کیس کورونا پوزیٹو موصول ہوئی ہے۔

بھٹکل سرکاری اسپتال میں معروف سماجی کارکن نثار احمد ٹاپ کی تہنیت

بھٹکل کے معروف سماجی کارکن جناب نثار احمد رکن الدین عرف نثار ٹاپ کی آج اتوار کو بھٹکل تعلقہ سرکاری اسپتال میں  تہنیت کی گئی اور بھٹکل میں کورونا وباء پر قابو پانے میں تعلقہ انتظامیہ  کو بھرپور تعاون فراہم کرنے پر  ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفسر سمیت تعلقہ اسپتال کے دیگر ڈاکٹروں  نے ان ...

دبئی سے مینگلور جانے کے لئے350 سے زائد درخواستیں موصول،کن کن کو کریں روانہ ؟ ذمہ داران کے سامنے اہم سوال

چارٹرڈ فلائٹ پر دبئی میں پھنسے بھٹکل اور اطراف کے لوگوں کو مینگلور روانہ کرنے کے تعلق سے سینکڑوں  لوگوں کے رابطہ کرنے پر دبئی میں موجود بھٹکل کے ذمہ داران سوچ میں پڑ گئے ہیں کہ اتنی بڑی تعداد میں لوگ دبئی لاک ڈاون میں پھنسے ہیں تو اُنہیں انڈیا روانہ کرنے کے لئے کس طرح کے ...

منگلورو: جانچ رپورٹ آنے سے پہلے ہی مہاراشٹرا سے لوٹنے والےشخص کو کوارنٹین سینٹرسے چھٹی دیناپڑا مہنگا۔ رپورٹ آئی پوزیٹیو!

ممبئی سے لوٹے ہوئے ایک شخص کو کوارنٹین سینٹر میں رکھنے کے بعد جانچ رپورٹ ملنے سے پہلے ہی اس کو گھر جانے کی اجازت دینا ضلع انتظامیہ کو بڑا مہنگا پڑا ہے کیونکہ اس شخص کی جانچ رپورٹ کووِڈ پوزیٹیو آئی ہے۔