ٹریفک قانون کی خلاف ورزی پر کانسٹیبل کو جرمانہ لگانے کا اختیار نہیں؛ اے ایس آئی سے اونچے درجے کا پولیس آفیسر کو ہی ہوگا اختیار

Source: S.O. News Service | Published on 12th September 2019, 2:52 PM | ریاستی خبریں | ساحلی خبریں |

بنگلورو12/ستمبر (ایس او نیوز) ٹریفک قوانین میں ترمیم کے بعد پورے ملک میں موٹر گاڑیاں چلانے والے جرمانے میں اضافے کی وجہ سے سخت پریشان ہیں۔ قوانین کی چھوٹی چھوٹی خلاف ورزیوں پر جرمانے میں اضافے کے بعد ٹریفک پولیس کا رویہ بھی عوام کے ساتھ بہت زیادہ سخت اور جابرانہ ہوگیا ہے۔یہاں تک کہ کانسٹیبل سطح کے پولیس والے موٹر گاڑیاں چلانے والوں کے ساتھ ترشی اور بدسلوکی کا رویہ اپنا رہے ہیں۔

عوام کی طرف سے یہ شکایت عام ہوگئی ہے کہ ٹریفک پولیس کے کانسٹیبل اور ہیڈ کانسٹیبل لوگوں سے جرمانہ وصول کرتے ہیں۔جبکہ حقیقت یہ ہے کہ انڈین موٹروہیکل ایکٹ کی 122کے تحت کوئی اسسٹنٹ سب انسپکٹر (1اسٹار)، سب انسپکٹر (2اسٹار) اور پولیس انسپکٹر (3 اسٹار)کے درجے پر فائز آفیسر کو ہی جرمانہ وصول کرنے کا اختیارہے۔کانسٹیبل یا ہیڈ کانسٹیبل کو جرمانہ وصول کرنے کا اختیار نہیں ہے۔ اگر بغیر اسٹار والے کسی پولیس اہلکار نے ان سے جرمانہ وصول کیا ہے توشہریوں کو مذکورہ پولیس والے کے خلاف اپنے علاقے کے اے سی بی یا ڈی سی بی محکمے میں تحریری شکایت درج کروانے کی آزادی حاصل ہے۔اس طرح کی تحریری شکایت میں گاڑی چیک کرنے کا مقام،تاریخ اور وقت کے علاوہ پولیس اہلکار کے یونیفارم پر درج اس کانام بھی شامل کرنا ضروری ہوگا۔

مغربی زون (ٹریفک) کی ڈی سی پی سوم لتا نے بتایا کہ کانسٹیبل یا ہیڈ کانسٹیبل کے ذریعے جرمانہ وصول کیے جانے کی شکایت تاحال ٹریفک پولیس محکمے کو نہیں ملی ہے۔شکایت ملنے کے بعد محکمے کی طرف سے تحقیقات کی جائیں گی اور الزام درست ثابت ہونے پر متعلقہ پولیس اہلکار کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

سولیا: پہاڑی مہم جو ٹیم کا ایک رکن ہوگیا لاپتہ۔قریبی جنگلات میں جاری ہے تلاشی مہم 

بنگلورو کی ایک کمپنی کے ملازمین کی ٹیم سبرامنیا میں واقع پہاڑی ’کمارا پروتا‘ کو سر کرنے کی مہم پر نکلی تھی۔ لیکن واپسی کے وقت ٹیم کا ایک رکن جنگلات میں اچانک لاپتہ ہوگیا ہے، جس کی شناخت سنتوش (25سال) کے طور پر کی گئی ہے۔

سیلاب متاثرین سے وزیر اعظم کو کوئی ہمدردی نہیں منڈیا میں منعقدہ پرتیبھا پرسکار کے جلسہ سے سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا کا خطاب

ملک کے وزیر اعظم کو سیلاب متاثرین سے کوئی ہمدردی نہیں ہے۔ پچھلے ایک سو سال سے کبھی نہ دیکھا گیا سیلاب ریاست میں آیا ہے اور ہزاروں افراد کی زندگی تباہ ہوچکی ہے۔

آئی ایم اے فراڈ کیس کا ایک نیا موڑ، قدآور شخصیات راڈر پر، منصور خان نے سابق وزیر دیش پانڈے پر 5/کروڑ روپئے طلب کرنے کا الزام لگایا 

آئی ایم اے فراڈ کیس دن بدن نیا زاویہ اختیار کرتا جارہا ہے، اس کیس کے کلیدی ملزم اور آئی ایم اے کے سربراہ منصور خان نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق ریاستی وزیر اور سینئر کانگریس لیڈر آر وی دیش پانڈے نے آئی ایم اے کو 600کروڑ روپئے کا قرضہ حاصل کرنے کے لئے نو آبجیکشن سرٹی فکیٹ (این او سی) جاری ...

بھٹکل کے قریب منکی ریلوے پٹری پر پائی گئی نامعلوم شخص کی ٹکڑوں میں بکھری ہوئی نعش؛ تیز رفتار ٹرین کی زد میں آکر ہلاک ہونے کا شبہ

پڑوسی تعلقہ ہوناور کے منکی  پولس اسٹیشن کے عقب میں واقع ریلوے پٹری پر ایک نامعلوم شخص کی  تکڑوں میں بکھری ہوئی نعش پائی گئی ہے جس کے تعلق سے پولس کو  شبہ ہے کہ  رات کے کسی پہر میں   یہ شخص غالباً  ریلوے پٹری کراس کررہا ہوگا جس  کے دوران تیز رفتار ٹرین کی زد میں آکر ہلاک ہوگیا ...

سولیا: پہاڑی مہم جو ٹیم کا ایک رکن ہوگیا لاپتہ۔قریبی جنگلات میں جاری ہے تلاشی مہم 

بنگلورو کی ایک کمپنی کے ملازمین کی ٹیم سبرامنیا میں واقع پہاڑی ’کمارا پروتا‘ کو سر کرنے کی مہم پر نکلی تھی۔ لیکن واپسی کے وقت ٹیم کا ایک رکن جنگلات میں اچانک لاپتہ ہوگیا ہے، جس کی شناخت سنتوش (25سال) کے طور پر کی گئی ہے۔

منڈگوڈ میں بیک وقت کئی گھروں میں چوری کی وارداتیں۔ لاکھوں روپے نقد اور زیورات چور اڑالے گئے

منڈگوڈ کے چیگلّی گرام میں ایک ہی رات میں کئی گھروں میں چوری کی وارداتیں دئے جانے کی اطلاع موصول ہوئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ گزشتہ رات تین بجے کے قریب گاؤں کی مختلف گلیوں میں واقع6 گھروں کے اندر چوروں نے گھسنے اور لوٹ مچانے کی کوشش کی جس میں سے دو گھروں میں انہیں کامیابی ملی اور وہ ...

کاروار: پرائیویٹ اسکولوں میں بھی اسکاؤٹس اینڈ گائڈس کی شاخیں لازماً قائم ہوں: ڈاکٹر ہریش کمار

موجودہ حالات میں بچوں کے درمیان انسانی اقدار کی پرورش کرنا بہت ضروری ہے۔ اس سلسلےمیں پرائیویٹ اسکولوں میں بھی لازماً اسکاؤٹس اینڈ گائڈس کی شاخ کا قیام عمل میں لاکر مختلف سرگرمیوں کو انجام دینے کی اترکنڑا ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے ہدایات جاری کیں۔

کاروار میں ’سوچھ رتھ ‘موبائیل سواری کا اجراء: ضلع کو پاکیزہ بنانا ہم سب کی ذمہ داری ہے: جئے شری موگیر

اترکنڑا ضلع کو ’پاکیزہ ضلع‘ کی حیثیت سے ترقی دینا ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ ضلع کو ریاست کا پہلا گندگی سے پاک ضلع بنانے کے لئے ہم سب کو کام کرنا ہے۔ اترکنڑا ضلع پنچایت کی صدر جئے شری موگیر نے ان خیالات کا اظہار کیا۔