مسلم حضرات توجہ دیں ؛ ضلع شمالی کینرا میں ٹورزم ڈپارٹمنٹ کی طرف سے اقلیتی بے روزگاروں کو فراہم کی جائے گی ٹیکسیوں کے لئے امداد

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 9th June 2019, 10:02 PM | ساحلی خبریں |

کاروار 9/جون (ایس او نیوز) ضلع شمالی کینرا میں محکمہ سیاحت کی طرف سے سال 2019-20کے لئے پسماندہ طبقات اور اقلیتی بے روزگاروں کو ٹیکسیاں خریدنے کے لئے مالی امداد فراہم کی جائے گی۔ 

ٹورسٹ ٹیکسیاں خریدنے کے لئے مالی تعاون چاہنے والے اہل امیدواروں کو 5/جولائی   تک اپنی درخواستیں جمع کرنا ہوگا۔ امسال کُل 12 درخواست گزاروں کوفی کس3لاکھ روپے کے حساب سے امداد فراہم کی جائے گی۔درخواست دینے کے لئے ضروری شرائط مندرجہ ذیل ہونگی۔

عرضی گزار کی عمر 20سے 40 سال کے اندر ہو۔ کم از کم میٹرک پاس ہونا ضروری ہے۔ہلکی موٹر گاڑیاں (لائٹ وہیکل) چلانے کا لائسنس حاصل کرکے ایک سال کا عرصہ گزرچکا ہو۔اس کے علاوہ ٹیکسی چلانے کا بیاچ بھی ہو۔شہروں میں رہنے والے درخواست گزاروں کی سالانہ آمدنی 55000/ہزار روپے اور دیہاتوں میں رہنے والوں کی سالانہ آمدنی 40000/-روپوں سے زیادہ نہیں ہونی چاہیے۔ درخواست گزار جس ضلع کے رہائشی ہوں اسی ضلع میں درخواست دینی ہوگی۔ ایک خاندان میں صرف ایک شخص کو امداد فراہم کی جائے گی۔اس کے علاوہ ذات اور آمدنی کے ساتھ سرٹی فکیٹ میونسپالٹی سے حاصل کیا گیا تصدیق شدہ رہائشی سرٹفکیٹ، ڈرائیونگ لائسنس اور آر ٹی او سے حاصل کیاگیا ڈی ایل ایکسٹراکٹ، ایس ایس ایل سی مارکس کارڈ درخواست کے ساتھ جمع کرنا ہوگا۔

درخواست گزار کو چاہیے کہ وہ کسی سرکاری محکمے یا کارپوریشن میں مستقل ملازم نہ ہونے یا بلدی اداروں سے روزگار منصوبے کے تحت کسی قسم کی امداد حاصل نہ کرنے یا پھرمحکمہ سیاحت سے اس کے خاندان کے کسی فرد کوٹیکسی کے لئے امداد حاصل نہ ہونے کے تعلق سے 50/-روپے کے اسٹامپ پیپر پر خود ہی تصدیق کردہ حلف نامہ داخل کرے۔ درخواست پر فون نمبر درج کرنا لازمی ہوگا۔

خواہشمند وں کے لئے مقررہ درخواست فارم ڈپٹی ڈائریکٹر ٹورزم ڈپارٹمنٹ کاروار کے دفتر میں دستیاب ہے۔ تمام ضروری دستاویزات کے ساتھ پُر کی گئی درخواست کاروار میں نیشنل ہائی وے 66پرواقع محکمہ سیاحت کے دفتر میں آخری تاریخ سے قبل جمع کی جانی چاہیے۔

ایک نظر اس پر بھی

علاج کے لئے منگلور جانے والے توجہ دیں: منگلورو اور اڈپی کے اسپتالوں میں کل 17جون کو او پی ڈی خدمات رہیں گی بند

 بھٹکل اور اطراف سے کافی لوگ  علاج معالجہ کے لئے پڑوسی ضلع اُڈپی اور مینگلور کے اسپتالوں کا رُخ کرتے ہیں،  ان کے لئے  بری  خبر یہ ہے کہ کل  ڈاکٹروں کے احتجاج کے پیش نظر  مینگلور اور اُڈپی کے اسپتالوں میں باہری  مریضوں  کا علاج  نہیں ہوگا۔

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی مدد کے لئے اے پی سی آر کی خدمات دستیاب

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی رہنمائی اور اُن کی  مدد کے لئے  اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس  (اے پی سی آر)  کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہے۔جن  لوگوں نے  اپنی چھوٹی چھوٹی سرمایہ  کاری  اس کمپنی میں کی تھی اور اب وہ کنگال ہوچکے ہیں، اے پی ...