بھٹکل میں زیر تعمیر عمارت کی ٹائلس چوری کے معاملے میں تین گرفتار؛ چوری کیا ہوا مال برآمد

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 4th August 2019, 9:44 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 4/اگست (ایس او نیوز)  یہاں قدوائی روڈ پر زیر تعمیر اپارٹمنٹ کے ٹائلس اور دیگر اشیاء  کی چوری کے  الزام میں پولس نے  تین لوگوں کو گرفتار کرلیا ہے اور  چوری کیا ہوا مال برآمد کرلیا ہے۔ گرفتار شدگان کی شناخت  بھٹکل کے ہیبلے کا  رہنے والا یوگیش دیواڑیگا (28)، تلاند کا رہنے والا چیتن نائک (20) اور تلاند کا ہی رہنے والا راجیش نائک (22) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ 

 بتایا گیا ہے کہ  قریب  ایک ماہ  قبل قدوائی روڈ پر واقع  ایک چار مالہ اپارٹمنٹ کی تعمیر کے لئے رکھے گئے قریب ڈھائی لاکھ مالیت کے   150 بوکس ٹائلس ، سیمنٹ کے کئی تھیلے اور الیکٹرک وائرس کے کئی بنڈل چوری ہوگئے تھے، اس تعلق سے  کنٹریکٹر اسماعیل جوباپو نے بھٹکل ٹاون پولس تھانہ میں شکایت درج کرائی تھی، اُسی  پر کاروائی کرتے ہوئے پولس نے  آج اتوار کو  تین لوگوں گرفتار کر لیا  اور تینوں کو عدالت میں  پیش کردیا ۔

بتایا جارہا ہے کہ  چوری کے معاملے میں  پولس کو مُنڈلی کے  ناگراج اور مُٹھلی کے  رگھو  کی بھی تلاش تھی ، اطلاع ملی ہے کہ گرفتاری سے پہلے ہی ان دونوں نے عدالت سے رجوع ہوکر   ضمانت حاصل کرلی ہے۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  ناگراج قریب آٹھ  سالوں سے  کنٹریکٹر اسماعیل کے پاس ہی کام کرتا تھا، البتہ دو ماہ قبل   اسے نوکری سے نکالا گیا تھا،  جس کے کچھ ہی دن بعد اس  نے متعلقہ اپارٹمنٹ میں اسٹاک کرکے رکھے ہوئے ٹائلس اور دیگر اشیاء کی چوری کی تھی اور   کسی اور کو فروخت کردیا تھا، بتایا گیا ہے کہ دیگر گرفتارشدگان نے چوری کرنے اور چوری  کئے ہوئے مال کو  فروخت کرنے میں  تعاون کیا تھا۔

بھٹکل سرکل پولس انسپکٹر  کے ایل گنیش کی قیادت میں   پولس نے چوری کی ہوئی تقریبا تمام چیزوں کو برآمد کرلیا ہے ، مزید چھان بین جاری ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کاروارمیں ریڈ الرٹ کے باوجود کوسٹل سیکیوریٹی پولیس کی انٹر سیپٹر کشتیاں نہیں اتریں سمندر میں!

ابھی دو دن پہلے ملک کی خفیہ ایجنسی نے سمندری راستے سے دہشت گردانہ حملہ ہونے کا خدشہ ظاہر کیا تھا جس کے بعد پوری ریاست کرناٹکا میں اور بالخصوص ساحلی کرناٹکا میں ریڈ الرٹ جاری کیا گیا ہے۔