ایس پی لیڈر کے قتل معاملہ میں تین گرفتار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th June 2019, 12:19 PM | ملکی خبریں |

نوئیڈا  13/جون (ایس او نیوز/ آئی این ایس انڈیا) ایس پی لیڈر رام ٹیک کٹاریا کا 31 مئی کو دن دہاڑے گولی مار کر کئے گئے قتل کے معاملے میں پولیس نے بدھ کو تین لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ یہ قتل پرانی رنجش کی وجہ سے کیا گیا تھا۔ایس پی دیہی ونیت جیسوال نے بتایا کہ 31 مئی کو تھانہ دادری علاقے میں سماج وادی پارٹی کے دادری اسمبلی اسپیکر رام ٹیک کٹاریا کا گولی مار کر قتل کر دیا گیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ اس معاملے میں سات افراد کو نامزد کرتے ہوئے مہلوک کے لواحقین نے تھانہ دادری میں قتل کا مقدمہ درج کرایا تھا۔ایس پی نے بتایا کہ معاملے کی تحقیقات کر رہی تھانہ دادری پولیس نے اس واقعہ میں شامل مبینہ تین افراد کو گرفتار کیا ہے۔ اس واقعہ میں کچھ اور لوگ بھی شامل ہیں، جن کی پولیس تلاش کر رہی ہے۔ایس پی نے بتایا کہ گرفتار ملزمان کے پاس سے پولیس نے قتل میں استعمال کیا جانے والا آلہئ قتل(ہتھیار) بھی برآمد کر لیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تفتیش کے دوران پولیس کو پتہ چلا ہے کہ سال 2019   کے جنوری ماہ میں اہم ملزم بلیسر کے بھائی رمیش کی لاش ڈسٹرکٹ علی گڑھ میں ریلوے ٹریک پر ملی تھی۔اس صورت میں بلیسر نے رام ٹیک کٹاریا اور ان کے لواحقین کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرایا تھا، لیکن پولیس نے تحقیقات میں یہ معاملہ ایکسیڈنٹ کا پایا۔ انہوں نے بتایا کہ بلیسر اس بات کو لے رام ٹیک سے نالاں تھا، اسے شک تھا کہ اپنے سیاسی رسوخ کے  باعث رام ٹیک اس کابھی قتل کروا دے گا۔ انہوں نے بتایا کہ بھائی کی موت کا بدلہ لینے  کی غرض سے  ہی بلیسر نے قتل کا منصوبہ بنایا تھا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

روی داس مندر گرائے جانے کے خلاف دلت کمیونٹی کے ہزاروں لوگوں نے کیامظاہرہ

شہر میں حال ہی میں ایک روی داس مندر کو گرائے جانے کی مخالفت میں ملک کے مختلف حصوں سے آئے دلت کمیونٹی کے لوگوں نے ہاتھوں میں نیلے رنگ کے جھنڈے لے کر جھنڈے والان سے رام لیلا میدان تک بدھ کو احتجاجی مظاہرہ کیا۔

خواتین اور نابالغ لڑکیوں کے ساتھ جنسی استحصال کے الزام میں ایک اور بابا گرفتار

ہندوستان کے کئی مشہور و معروف بابا خواتین کے ساتھ جنسی استحصال اور نابالغوں کے ساتھ مبینہ طور پر عصمت دری کے الزام میں یا تو گرفتار کر لیے گئے ہیں یا پھر انھیں گرفتار کرنے کا حکم جاری ہو چکا ہے۔

این ڈی ٹی وی کے بانیان کے خلاف سی بی ائی نے نیا مقدمہ درج کیا‘ چیانل نے کاروائی کو ”مضحکہ خیز“ قراردیا

ایف ائی آر میں دعوی کیاگیا ہے کہ ٹی وی چیانل نے 2004اور2010کے درمیان جورقم اکٹھا کی ہے وہ ”وہ ایک بدنام لین دین کی ایک جال کے ذریعہ نامعلوم سرکاری عہدیدیروں کے پیسے کو لانے میں اعتراض ہے“