کنڑا میں بات کرنے پر طلباء پر جرمانہ عائد کرنے والے اسکول کی منظوری رد کرنے وزیر تعلیم سے کنڑا اتھارٹی کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | Published on 19th February 2020, 11:30 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،19/فروری (ایس او نیوز) کنڑا ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے چیرمین ٹی ایس ناگ بھرنا نے وزیر برائے پرائمری وسکینڈری تعلیم سریش کمار کو مکتوب روانہ کرکے اسکول میں کنڑا میں بات کرنے پر جرمانہ لگانے والے چنسندرا کے ایس ایل ایس انٹرنیشنل گروکل اسکول کی منظوری منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔اپنے مکتوب میں انہوں نے بتایا ہے کہ اتھارٹی کو اس تعلق سے کئی شکایتیں ملی ہیں۔ ماہر تعلیم ڈاکٹروی پی نرنجن آرادھیا محکمہ تعلیم کے افسر اور اتھارٹی کے سکریٹری پر مشتمل ایک ٹیم نے مذکورہ اسکول کا دورہ کیا۔ وہاں پتہ چلا کہ اسکول میں کنڑا میں بات کرنے پر پہلی مرتبہ 50/ روپئے اور دوبارہ بات کرنے پر 100/روپئے کا جرمانہ لگایا جاتا ہے۔انہوں نے بتایا ہے کہ اسکول انتظامیہ نے کنڑا میں بات کرنے والے بچوں کے والدین کو بھی نوٹس جاری کرکے وارنگ دی ہے کہ ان کے بچے اسکول میں دوبارہ کنڑا زبان میں بات چیت نہ کریں۔انہوں نے بتایا ہے کہ اسکول کے خلاف حق تعلیم ایکٹ کے 23,13,16,17,23,29,/ کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہے۔ مذکورہ اسکول میں فیس داخلہ کا طریقہ کو بھی خفیہ رکھا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اسکول کے تمام بچے خوف کے ماحول میں تعلیم حاصل کررہے ہیں۔ اسکول نے حق تعلیم ایکٹ 2009ء اور حق تعلیم قانون (2012) اور کنڑا لرنگ ایکٹ 2015/ اور کنڑا لرنگ ضابطہ 2017/ کے تحت خلاف ورزی کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کورونا وائرس معاملہ؛ انتظامیہ نے جاری کیا وبائی مرض اور ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لئے سرکاری فنڈ؛ فاقہ کشی پر مجبور افراد کے لئے بھی  کھانے کا انتظام

ضلع شمالی کینرا کے ڈپٹی کمشنر نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قدرتی آفت سے پیدا شدہ صورتحال سے نپٹنے کے لئے ضلع انتظامیہ نے سرکاری فنڈ جاری کردیا ہے۔

بھٹکل ہیلتھ ایمرجنسی:گھروں تک پہنچائی جائیں گی ضروری اشیاء اور دوائیاں؛ گھروں سے باہر نکلنا بند کریں، اب گاڑیاں ضبط کی جائیں گی

ضلع انتظامیہ کی طرف سے بھٹکل میں ’ہیلتھ ایمرجنسی‘ لاگو کیے جانے کے بعد تعلقہ انتظامیہ نے عوام کو سہولیات فراہم کرنے کے لئے مختلف نوڈل افسران کو نامز د کیا ہے، جو اس بات کا خیال رکھیں گے کہ سماجی رابطے سے دور رکھنے کے لئے عوام کو گھروں میں جو بند کرکے رکھا گیا ہے اس سے  بنیادی ...

کورونا وائرس: ڈاکٹر اور طبی عملہ کو گھروں سے بے دخل نہ کریں؛ مکان مالکین کو ریاستی حکومت کی وارننگ۔ 15 زمروں کے ملازمین کو پاسس جاری کرنے کا فیصلہ

ریاستی حکومت نے سبھی مکان مالکوں کو وارننگ دی ہے کہ کورونا وائرس کے بڑھتے قہر کی وجہ سے اپنے یہاں کرایہ پر مقیم طبی شعبہ کے افراد کو گھروں سے نہ نکالیں۔

کورونا وائرس کی سنگینی کو سمجھنے کی اشد ضرورت ہے؛ بازاروں میں غیر ضروری گھومنے سے پرہیز اور سرکاری ہدایات پر سختی سے عمل کریں

ہندوستان میں کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے، اس وقت اس خطرناک وائرس سے متاثر لوگوں کی تعداد کے حساب سے مہاراشٹرا نمبر ایک کیرالہ نمبر2 جبکہ کرناٹک نمبر 3 پر ہے۔