بھٹکل قومی شاہراہ سے متصل دنڈین دُرگا مندر میں چوری : ایرانی گروہ پر شبہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 7th August 2019, 9:30 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل :7؍اگست   (ایس اؤ نیوز) میونسپالٹی حدود میں قومی شاہراہ سےمتصل دنڈن دُرگا مندر کے عطیہ ڈبے کو توڑ کر رقم لوٹنے کا واقعہ بدھ کی صبح پیش آیاہے۔ایک بھگت سے بات کرنے کے بعد چور فرا ر ہونے پر شہر میں ایرانی گروہ پر شبہ جتایاجارہاہے۔ 

مندر کے عطیہ ڈبے کو توڑا گیا ہے، ڈبے کے نیچے والی زمین پر خون کے دھبے پائے گئےہیں۔عطیہ ڈبے کو توڑنےکے دوران چوروں کے ہاتھ ، پیر زخم ہونے کا شبہ جتایاگیا ہے۔چوروں نے  عطیہ ڈبے میں جمع قریب 2500-3000روپئے لوٹ کر فرار ہوئے ہیں۔ پولس جائے وقوع پہنچ کر معائنہ کی ہے۔ اس وقت نارائن شیرور، ماروتی پاؤسکر،جگدیش مہالے وغیرہ موجود تھے۔ معاملے کو لےکر مندر انتطامیہ کے صدر موہن شرالیکر نے پولس کو شکایت سونپی ہے۔بھٹکل شہری پولس تھانےمیں کیس درج کرلینے کے بعد جانچ کی جارہی ہے۔

بدھ کی صبح 30-08بجے مندرکے پجاری راجیش بھٹ مندرمیں پوجا کرکے لوٹے ہیں۔تھوڑی دیر بعد مندر انتظامیہ کے صدر موہن شرالیکر اور جگدیش مہالے مندر سے نکل گئے۔ قریب 10بجے پاس کی گیاریج میں اسپرے پینٹنگ کا کام کرنے والا تلاند کا مکین وینکٹ رمن نائک مندر میں پوجا کے لئے پہنچاتو اسی دوران ایک فرد کو مندر سے نکلتا ہوادیکھا ہے۔ اس انجان آدمی کو سفید جاکٹ میں ملبوس ،پیٹھ پر بیاگ ڈالے ہونے کی نشاندہی کی ہے۔ انجان فرد نے وینکٹ رمن سے پوچھا بھی ہے کہ ’تم مندر والے ہیں یا بھگت ہیں ؟‘ ۔جواب میں وینکٹ رمن بھگت بتایا۔ پھر اس نے پوچھا کہ یہاں وینکٹ رمن مندر کہا ں ہے۔ تب وینکٹ رمن نے انجان فرد کو آسارکیری راستے کی نشاندہی کرنے کے بعدمندر میں داخل ہوا۔ مندر کے اندر کی تصویر دیکھ کر باہر آنے سے پہلے ہی وہ لاپتہ ہوگیا۔ اس کے بعد وینکٹ رمن نے بائک کے ذریعے اس کوتلاش بھی کیا ہے۔ نہیں ملے تو پولس کو اطلاع دی گئی ۔ اس کے علاوہ وینکٹ رمن نے بتایا کہ جب میں انجان فرد سے بات کررہاتھاتو وہ ایک ہاتھ اپنی کمر میں چھپایاہواتھا۔  وینکٹ رمن نے شبہ جتایاہےکہ اس کے ساتھ اور ایک فرد تھا جو اس کو فرار ہونےمیں مدد کی ہے۔

ایرانی گروہ پر شبہ : ڈکیتی ، چوری ، لوٹ مار کے لئے بدنام ایرانی گروہ کرناٹکا کے ساحلی پٹی پر گھومنے کی اطلاعات ہیں۔ دن کے اجالے میں مندر میں ہوئی چوری کو لےکر اسی گروہ کی طرف شک جتایاگیاہے۔ عام طورپر اس گروہ کی کارستانیاں شاہراہ سے متصل منادر اور گھرہی ٹارگیٹ ہونے کا شبہ ہے۔ خیال رہے کہ  چند برس پہلے مبینہ ایرانی گروہ بھٹکل میں پیدل چل رہی ایک خاتون کے گلے سے چین لے کر فرار ہوئے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل تعلقہ بیلکے ہائی اسکول میں ایندھن کے صحیح استعمال پر آئیل کمپنی بیلگام کے ریجنل مینجر کا خطاب

جہاں بھی ایندھن کا استعمال کریں ہم ضرورت کے تحت کریں آج کل ایندھن کازیادہ تر غلط استعمال ہورہاہے جس کے نتیجے  میں آئندہ حالات  بگڑ سکتےہی۔ آئی اؤ سی ایل  بیلگام کے چیف ریجنل مینجر وی رمیش بابو نے ان خیالات کا اظہار کیا۔

کاروار: ای۔جائیداد کے متعلق الجھن اور پیچیدگی پیدا نہ کریں : وڈیوکانفرنس کے ذریعے ڈی سی کی ضلع و تعلقہ جات افسران کو ہدایت

اترکنڑا ضلع کے شہری علاقوں میں 95فی صد ای ۔ جائیداد کا سافٹ وئیر تیار ہے۔ مقامی افسران کسی بھی پیچیدگی کو جگہ نہ دیتے ہوئے سرگرم ہونے کی ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے ہدایات جاری کی ہیں۔

ضلع پنچایت سی ای او کے حکم پر بھٹکل تحصیلدار نے ہٹائیں مرڈیشور میں غیرقانونی دکانیں

ترکنڑا ضلع پنچایت چیف ایکزی کوٹیو آفسر(سی ای او)  محمد روشن کے حکم پر عمل درآمد کرتے ہوئے بھٹکل تحصیلدارکی قیادت میں ریوینیو ڈپارٹمنٹ کے افسران نے جمعرات کو دکانداروں کی مخالفت کے باوجود مرڈیشور کے سڑک کنارے بنی ہوئی غیر قانونی دکانوں کو ہٹانے کی کارروائی انجام دی۔

بھٹکل کاراسٹریٹ پر رات کے اندھیرے میں کچرا پھینکنے والوں کا بالاخر پتہ چل گیا، سی سی ٹی وی میں قید ہوگیا منظر

یہاں کار اسٹریٹ جیسی مصروف سڑک پر رات کے اندھیرے میں کچرے کا ڈھیر لگانے والوں سے عوام اور دکاندار بہت ہی زیادہ پریشان تھے اور کچرہ پھینکنے والوں کا پتہ لگانے کی کوششوں میں مصروف تھے، مگر بدھ کی شام کو بالاخر ایک رکشہ سے کچرہ پھینکنے کا منظر قریب میں واقع سی سی  ٹی وی کیمرے میں ...

بھٹکل نوائط کالونی کے عوام کی ہیسکام سے شکایت؛ 15 دنوں کی زائد میٹر ریڈنگ کے ساتھ تھمایاجارہا ہے بِل

بھٹکل ہیسکام کی جانب سے ہر ماہ 4, 5 اور 6  تاریخ کو گھروں میں دیا جانے والا بِل 18, 19 اور 20 تاریخوں کو دیا جاتا ہے جس کے نتیجے میں  12 سے 15 دنوں کی میٹر  Reading زائد ہوجاتی ہے اور ریڈنگ مطلوبہ یونٹ سے زائد ہونے کی صورت میں ہیسکام کی طرف سے پینالٹی بھی ڈالی  جاتی ہے، اس طرح کی شکایتیں ...

اترکنڑا ضلع میں موسلادھار بارش اور سیلاب سے سڑکیں خستہ : مسافر، عوام اورڈرائیور پریشان

اترکنڑا ضلع میں موسلادھار بارش اور سیلاب و طغیانی کی وجہ سے سب سے زیادہ سڑکوں کو نقصان پہنچا ہے ۔ عام زندگی معمول پر لوٹ کر ایک ماہ ہونےکو ہے لیکن راستوں کی حالت اب بھی خستہ حال ہے جس سے مسافروں کو کافی پریشانی ہونے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں۔