ملک کوفاشزم کی گرفت سے بچانے بے خوف عوامی تحریک کی ضرورت، فسطائیت کے جڑیں برہمنیت سے جاملتی ہیں: مفکر شیو سندر کا اظہارخیال

Source: S.O. News Service | Published on 13th September 2022, 11:37 AM | ریاستی خبریں |

منڈیا،13؍ستمبر(ایس او نیوز)موجودہ ملک کو فاشزم کی گرفت سے بچانے کیلئے ایک نئی تحریک چلانے کی ضرورت ہے۔ سمجھوتہ نہیں کرنے والی اور موت کو آنکھیں دکھانے والی ہمت پر مبنی تحریک ہی یقینا فاشزم کو شکست دے گی۔ ان خیالات کاظہارمعروف مفکر شیو سندر نے کیاہے،ان کادعویٰ ہے کہ اس سے ملک میں تبدیلی آئے گی۔وہ کرناٹک جن شکتی، آل انڈیا لائرز اسوسی ایشن اور ڈیموکریٹک آرگنائزیشنز کے ذریعے سماجی کارکنوں کیلئے منعقدہ ایک روزہ نظریاتی کیمپ سے خطاب کر رہے تھے، اس پروگرام کا موضوع تھا ”بھارت کی کثیر ثقافتی ہم آہنگی کا ورثہ بحران میں، ماضی کی تاریخ اور آگے چیلنجز“۔اس پروگرام میں فاشزم کی اصل، ملک کو درپیش موجودہ خطرہ، جمہوریت کی بقاء وغیرہ کے متبادل پر بات ہوئی۔

اس موقع پرشیوسندرنے کہاکہ فاشزم برہمنیت اور سرمایہ داری کی سب سے سخت اور اعلیٰ ترین شکل ہے۔ فاشزم کی بات کی جائے تو ہٹلر کی جرمن نسل کشی کا ذکر آتا ہے۔ لیکن اس سے پہلے ہندوستان میں فاشزم نے جنم لیا تھا۔ ہمارے ملک میں فاشزم کی جڑیں برہمنیت سے جاملتی ہیں۔ یہ منوسمرتی میں ہے۔ انہوں نے تجزیہ کیا کہ فاشزم کا بنیادی مقصد اس ملک کے شودروں کو غلام بنانا تھا۔ایسی حکومت لانے کیلئے تیاریاں کرنے کی ضرورت ہے جو موجودہ ملک کی مکمل تعمیر نو کرے اور ڈاکٹر امبیڈکر کی خواہشات کو پورا کرے۔ ملک کی تقسیم کے ذمہ دار نہ تو مسلم لیگ تھے اور نہ ہی جناح۔ ہندو قوم پرست خاص طور پر ساورکر اس کی بنیادی وجہ تھے۔ کیونکہ ہندو قوم پرست ہندو مسلم اتحاد کا ملک نہیں چاہتے تھے۔ وہ ایک ایسا ملک چاہتے تھے جس میں مسلمانوں کو چھوڑ دیا جائے۔ تاہم مہاتما گاندھی نے تقسیم سے بچنے کی بھرپور کوشش کی۔ لیکن، یہ ممکن نہیں تھا۔

انہوں نے کہا کہ ہندو قوم پرست آخر کار ملک کی تقسیم سے بہت خوش ہوئے۔شیوسندرنے نہایت حساس بات کرتے ہوئے کہاکہ ہم نے ابھی کلائی میکس کو چھوا تک نہیں ہے۔ یہ نہیں کہا جا سکتا کہ مودی دوبارہ اقتدار میں نہیں آئیں گے۔ کچھ جگہوں پر، صرف کانگریس اور آپ کے اقتدار میں آنے سے مسئلہ حل نہیں ہوگا۔ تبدیلی لانے کیلئے لوگوں کو آگاہ کیا جائے۔ تحریکوں سے لوگوں میں اعتماد پیدا ہونا چاہیے۔ صرف بے لوث، نفرت سے پاک، اورموت سے بے خوف ہمت کی تحریک ہی ملک کو بچائے گی۔

اس گفتگو میں مفکر پروفیسر ہلکیرے مہادیو، آل انڈیا بار اسوسی ایشن کے ضلع صدر بی ٹی وشواناتھ، مفکر، ملولی کے ریٹائرڈ پرنسپل ایم وی کرشنا، کرناٹک جن شکتی سنگٹھن کے بی کرشنا پرکاش، سداراج اور دیگر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بجٹ 2023: ’کوئی امید نہیں، بجٹ ایک بار پھر ادھورے وعدوں سے بھرا ہوگا‘، سدارمیا کا اظہارِ خیال

یکم فروری کو مرکز کی مودی حکومت رواں مدت کار کا آخری مکمل بجٹ پیش کرنے والی ہے۔ مرکزی وزیر مالیات نرملا سیتارمن کے ذریعہ بجٹ پیش کیے جانے سے قبل بجٹ 2023 کو لے کر کانگریس کے کچھ لیڈران نے اپنے خیالات ظاہر کیے ہیں۔

کرناٹک ہائی کورٹ کی وارننگ، کہا: چیف سکریٹری دو ہفتوں میں لاگو کرائیں حکم

کرناٹک ہائی کورٹ نے منگل کو انتباہ دیا کہ اگر ریاستی حکومت دو ہفتوں کے اندر سبھی گاؤں اور قصبوں میں قبرستان کے لئے زمین فراہم کرانے کے اس کے حکم پر عمل درآمد کرنے میں ناکام رہتی ہے تو وہ چیف سکریٹری کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی شروع کرنے پر مجبور ہوجائے گا ۔

منگلورو: محمد فاضل قتل میں ہندوتوا عناصر ملوث ہونے کا دعویٰ - اپوزیشن پارٹیوں نےکیا کیس کی دوبارہ جانچ کامطالبہ 

بی جے پی یووا مورچہ لیڈر پروین نیٹارو قتل کے بدلے میں عناصر کی طرف سے سورتکل میں محمد فاضل کو قتل کرنے کا کھلے عام دعویٰ کرنے والے وی ایچ پی اور بجرنگ دل لیڈر شرن پمپ ویل کے خلاف کانگریس ، جے ڈی ایس اور ایس ڈی پی آئی جیسی اپوزیشن پارٹیوں نے اس قتل کیس کی ازسر نو جانچ کا مطالبہ کیا ...

ٹمکورو میں اشتعال انگیز بیان دینے والے شرن پمپ ویل سمیت دیگر ہندوتوا لیڈروں کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ لے کر اے پی سی آر نے ایس پی کو دیا میمورنڈم

حال ہی میں ریاست کرناٹک کے  ٹمکور میں  منعقدہ شوریہ یاترا کے دوران وی ایچ پی لیڈر شرن پمپ ویل نے جو متنازع اور اشتعال انگیز بیان دیا  تھا ، اس پر کٹھن کارروائی کرتے ہوئے اسے گرفتارکرنے کا مطالبہ لے کر  ایسوسی ایشن فار پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) کے  ایک وفد نے ٹمکورو ...