ترکی جس فوجی حل کا خواہاں ہے اس سے مصائب بڑھیں گے: قرقاش

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 11th June 2020, 7:08 PM | عالمی خبریں |

 دبئی،۱۱/جون (آئی این ایس انڈیا) متحدہ عرب امارات کے وزیر مملکت برائے خارجہ امور انور قرقاش کا کہنا ہے کہ انقرہ لیبیا میں جس عسکری حل کے لیے کوشاں ہے وہ لیبیا کے عوام کے مصائب کو طول دے گا،اور یہ بین الاقوامی اتفاق رائے کے مخالف ہے۔

جمعرات کے روز ٹویٹر پر اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ لیبیا کے حوالے سے مصری منصوبہ، لیبیا میں امن و استحکام کی واپسی کے لیے عرب اور بین الاقوامی سیاسی عمل کی ٹھوس بنیاد بن چکا ہے۔اماراتی وزیر نے زور دیا کہ ان کا ملک لیبیا میں فوری فائر بندی اور سیاسی راستے کو متحرک کرنے کے لیے قاہرہ کی کوششوں کے ساتھ تعاون جاری رکھے گا۔

اس سے قبل مصر اور امارات نے بدھ کے روز باور کرایا کہ لیبیا میں صرف سیاسی حل ہی واحد قابل قبول راستہ ہے۔ دونوں ملکوں نے لیبیا میں عسکری کارروائیوں کے روکنے اور اقوام متحدہ کی سرپرستی میں بات چیت دوبارہ شروع کرنے کا مطالبہ کیا۔مصر اور امارات نے خبردار کیا کہ بیرونی طاقتوں کی حمایت یافتہ مسلح جماعتیں لیبیا کے شہر سرت میں عوام کے لیے سنگین خطرہ ہیں۔ یاد رہے کہ مصری صدر عبدالفتاح السیسی نے ہفتے کے روز ایک سیاسی منصوبے کا اعلان کیا تھا۔ اس کا مقصد لیبیا میں معمول کی زندگی کی طرف واپسی کے لیے راہ ہموار کرنا ہے۔ السیسی نے بحران کے حل کے لیے عسکری آپشن کو پکڑے رہنے سے خبردار کیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ سیاسی حل اس بحران کے حل کا واحد راستہ ہے۔ یہ منصوبہ ’اعلانِ قاہرہ‘ کے نام سے سامنے آیا ہے۔ منصوبے میں زور دیا گیا ہے کہ لیبیا کی یک جہتی کے حوالے سے تمام تر بین الاقوامی قرار دادوں اور پیر 8 جون سے فائر بندی کا احترام کیا جائے۔

ایک نظر اس پر بھی

ترک حکومت پر حماس کی اعلی قیادت کو ترکی کی شہریت دینے کا الزام

برطانوی اخبار "ٹیلی گراف" نے دعویٰ کیا ہے کہ ترکی نے فلسطین کی اسلامی تحریک مزاحمت "حماس" کے سینیر رہ نماؤں کو ترکی کی شہریت دینے کا عمل شروع کیا ہے، جس سے یہ خدشہ پیدا ہوا ہے کہ فلسطینی گروپ دنیا بھر میں اسرائیلی شہریوں پر حملوں کی منصوبہ بندی میں مزید آزادی حاصل کرے گا۔

ایران سے متعلق قرارداد مسترد ہونے پر امریکہ کی سیکیورٹی کونسل پر تنقید

ایران پر ہتھیاروں کی خرید و فروخت پر پابندی کی قرارداد کی توثیق نہ ہونے پر امریکہ نے اقوامِ متحدہ کی سیکیورٹی کونسل پر تنقید کی ہے۔ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی کونسل دْنیا میں قیامِ امن یقینی بنانے کی کوششوں میں ناکام ہو گئی۔ اپنے بیان میں مائیک ...

ڈیموکریٹک کنونشن کی تیاریاں مکمل، ٹرمپ سوئنگ اسٹیٹس کا دورہ کریں گے

امریکہ کی سیاست میں 'سوئنگ اسٹیٹس' ان ریاستوں کو کہا جاتا ہے جہاں ملک کی دونوں بڑی سیاسی جماعتوں ری پبلکن اور ڈیموکریٹس میں سے کسی کو بھی واضح اکثریت حاصل نہیں ہے اور یہاں سے کبھی ایک تو کبھی دوسری جماعت کے امیدوار کامیاب ہوتے ہیں۔