ملک میں اب بھی غلامی کے دور کا قانونی نظام رائج ہے: چیف جسٹس رمنا

Source: S.O. News Service | Published on 19th September 2021, 11:30 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 19؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی)چیف جسٹس آف انڈیا(سی جے آئی)این وی رمنا نے ملک کے عدالتی نظام پر تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں غلامی کے دور کے انصاف کا نظام اب بھی موجود ہے۔ شاید یہ ملک کے لوگوں کیلئے اچھا نہیں ہے۔ کرناٹک اسٹیٹ بار کونسل کے جسٹس ایم ایم شانتناگودر کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے چیف جسٹس نے قانونی نظام کو ہندوستانی بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان کے مسائل پر عدالتوں کا موجودہ کام کرنے کا انداز درست نہیں ہے۔

بار اور بنچ کے مطابق چیف جسٹس رمنا نے کہا کہ دیہی علاقوں کے لوگ قانونی کارروائی کو انگریزی میں نہیں سمجھتے۔ اس لیے انہیں زیادہ پیسہ ضائع کرنا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام آدمی کوعدالتوں اور ججوں سے نہیں ڈرنا چاہیے۔رمنا نے کہا کہ کسی بھی عدالتی نظام میں سب سے اہم مقام مقدمہ دائر کرنے والے شخص کا ہوتا ہے۔ عدالتی کارروائی شفاف اور جوابدہ ہونی چاہیے۔ ججوں اور وکلاء کا فرض ہے کہ وہ ایسا ماحول بنائیں جو آرام دہ ہو۔

جسٹس رمنا نے جسٹس شانتنا گودر کو یادکرتے ہوئے کہا کہ جسٹس شانتنا گودر عام لوگوں کی ضروریات کو سمجھتے تھے۔ انہوں نے جسٹس شانتنا گودر کے اہل خانہ سے تعزیت کا اظہار کیا۔چیف جسٹس نے کہا کہ جسٹس شانتنا گودر کا ملک کی عدلیہ میں اہم کردار ہے۔ملک نے ایک ایسے جج کو کھو دیا ہے جو لوگوں کا خیال رکھتا تھا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ملک نے ایک ایسے جج کو کھو دیا ہے جو عام آدمی کے مفاد کا خیال رکھتا تھا۔ انہوں نے پریکٹس کرتے ہوئے غریب اور پسماندہ افراد کے کیس اٹھانے میں دلچسپی ظاہر کی۔ ان کا فیصلہ سادہ اور عملی تھا۔ وہ ہمیشہ سننے کیلئے تیار رہتے تھے۔ ان کی حس مزاح بھی بہترین تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

تریپورہ  میں مسلمانوں اور اُن کی عبادت گاہوں پر شرپسندوں کے حملے؛ جماعت اسلامی ہند کا تریپورا کے شر انگیز عناصر کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ

گذشتہ دو تین دنوں سے ریاست تریپورہ  میں مسلمانوں پر اور اُن کی عبادت گاہوں پر شرپسندعناصرکی جانب سے مسلسل حملوں کی اطلاعات مل رہی ہیں۔ مسجدوں میں آگ زنی، مسلمان مرد و خواتین پر تشدد،  انہیں ہراساں کرنے اور گھروں پر بھگوا جھنڈے لہرانے کے واقعات کی اطلاعات  ہیں۔اشرار بلاخوف ...

100 ؍کروڑ ٹیکوں پر ملک میں جشن لیکن سوالات برقرار

  ملک میں 100؍ کروڑ ٹیکے لگائے جانے پر جشن کا ماحول ہونے کا دعویٰ حکومت کررہی ہے۔ اسی لئے وزیر اعظم مودی نے جمعہ کو صبح 10؍ بجے قوم سے خطاب کرتے  100؍ کروڑ ٹیکوں کو غیر معمولی کارنامہ قرار دیا۔

جے این یو طلبا شرجیل امام کی ضمانت عرضی خارج

دہلی کی ساکیت عدالت نے سٹیزن شپ امینڈمنٹ ایکٹ (سی اے اے) اور قومی شہریت رجسٹر (این سی آر) کے خلاف دہلی میں تحریک کے دوران اشتعال انگیز تقریر دینے کے الزام میں بند جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے طالب علم شرجیل امام کی ضمانت کی عرضی جمعہ کو خارج کردی۔ عدالت نے کہا کہ شرجیل ...

آئندہ لوک سبھا انتخاب کو لے کر کانگریس نے کیا بڑا اعلان، بہار کی تمام 40 سیٹوں پر تنہا انتخاب لڑے گی

 بہار میں اسمبلی کی دو سیٹوں پر ہو رہے ضمنی انتخاب کے مابین راشٹریہ جنتادل (آرجے ڈی) زیر قیادت مہا گٹھ بندھن سے ناراض حلیف کانگریس نے آج واضح کر دیا کہ آئندہ لوک سبھا انتخاب پارٹی سبھی سیٹوں پر تنہا لڑے گی ۔