جمال خاشقجی کے قتل کا الزام گمراہ کن ہے: سعودی عرب

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 13th October 2018, 8:51 PM | خلیجی خبریں |

دبئی /ر یاض 13اکتوبر ( آئی این ایس انڈیا ؍ایس او نیوز) سعودی عرب نے ترکی کے شہر استنبول میں سینیر صحافی اور تجزیہ نگار جمال خاشقجی کے قتل کی منصوبہ بندی اور اس میں? حکومت کے ملوث ہونے کے الزامات کو بے بنیاد قرار دے کر مسترد کر دیا ہے۔سعودی عرب کے وزیر داخلہ شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن نایف بن عبدالعزیز نے بعض ذرائع ابلاغ اور حکومتوں کی طرف سے خاشقجی کے معاملے میں سعودی عرب کو بدنام کرنے کی شدید مذمت کی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ جمال خاشقجی کی گم شدگی کے حوالے سے خود سعودی عرب کو بھی تشویش ہے۔ خاشقجی کو دھوکے سے استنبول کے سفارت خانے میں بلانے، اسے اغواکرنے اور اس کے بعد تشدد کر کے قتل کرنے کے تمام الزامات جھوٹ کا پلندہ ہیں۔ ان میں کوئی صداقت نہیں۔ سعودی عرب اپنے شہریوں کے تحفظ کی خواہاں ہے۔ خاشقجی کی گم شدگی کے حوالے سے جلد ہی حقائق سامنے لائے جائیں گی۔سعودی وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ مملکت پر جمال خاشقجی کے قتل کا الزام عالمی سطح پر نفرت پھیلانے کی مذموم کوشش اور بین الاقوامی اصولوں، معاہدوں اور عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہے۔انہوں نے کہا کہ ریاض حکومت انقرہ کے ساتھ مل کر خاشقجی کی پراسرار گم شدگی کا پتا چلانے کی کوششیں کر رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ذرائع ابلاغ کو من گھڑت کہانیوں اور افواہوں کو پھیلا کر کسی ایک ملک کے خلاف مذموم مہم کا حصہ نہیں بننا چاہیے۔خیال رہے کہ جمال خاشقجی دو اکتوبر کو استنبول میں سعودی عرب کے قونصل خانے میں داخل ہوئے اور اس کے بعد سے وہ غائب ہیں۔ بعض ذرائع ابلاغ کے مطابق خاشقجی کو دھوکے سے قونصل خانے بلا کر قتل کردیا گیا ہے۔ ان پر سعودی عرب کی حکومت پر تنقید کا الزام بھی عاید کیا جاتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سعودی عرب: ٹرانسپورٹ سے متعلق جُرمانوں کی نئی فہرست میں 221 خلاف ورزیوں کا تعین

سعودی عرب میں ٹریفک کے نظام کی بہتری کے لیے نئے اقدامات کا سلسلہ جاری ہے۔ اس حوالے سے تازہ ترین پیش رفت میں ٹرانسپورٹ اور بسوں کو کرائے پر دیے جانے کی سرگرمیوں سے متعلق 221 خلاف ورزیوں کا تعین کیا گیا ہے۔ ٹریفک کے نظام کے تحت ان میں سے بعض خلاف ورزیوں پر جرمانے کی رقم 5 ہزار ریال تک ...

 کیا نئے قطری وزیراعظم بدعنوانی کے کیس میں ماخوذ ہیں؟

قطر کے نئے وزیراعظم شیخ خالد بن خلیفہ آل ثانی کامبیّنہ طور پر ملک میں کھیلوں کے عالمی مقابلوں کے انعقاد کے لیے بدعنوانی کی ایک ڈیل سے تعلق رہا ہے۔شیخ خالد قطر کے شاہی خاندان کے رکن ہیں۔وہ ملک کے وزیر داخلہ بھی رہ چکے ہیں۔فرانسیسی آن لائن تحقیقاتی جریدے میڈیا پارٹ اور برطانوی ...

سعودی وزارت ثقافت کی جانب سے’نیشنل تھیٹر پروجیکٹ‘کا آغاز

سعودی عرب میں وزارت ثقافت کے زیر انتظام ’نیشنل تھیٹر پروجیکٹ‘ کا آغاز ہو گیا ہے۔ پروجیکٹ کے آغاز کا اعلان منگل کی شام درالحکومت ریاض کے ’کنگ فہد کلچرل سینٹر‘ میں وزیر ثقافت شہزادہ بدر بن عبداللہ بن فرحان کی سرپرستی میں ہوا۔ اس موقع پر نامور فن کاروں، دانش وروں اور سعودی عرب ...

داعشی بچوں سے ملاقات کرنا تیونسی صدر کو پڑگیا مہنگا ؛ سخت تنقید کا سامنا

لیبیا سے لائے گئے'داعشی' جنگجوؤں کے بچوں سے ملاقات پر تیونس کے صدر پروفیسر قیس سعید کو سیاسی حلقوں کی طرف سے سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے۔تیونس میں قرطاج پیلس میں مقتول داعشی جنگجوؤں کے بچوں سے ملاقات پر نہ صرف سیاسی حلقوں کی طرف سے شدید رد عمل سامنے آیا ہے بلکہ 'داعش' کے ...

سعودی عربیہ کے جدہ میں بھی منایا گیا یوم جمہوریہ کا جشن؛ بھٹکل کمیونٹی کے ذمہ داران کی کونسل جنرل سے ملاقات

ملک بھر میں جہاں 71 ویں یوم جمہوریہ کا جشن منایا جارہا ہے ، وہیں سعودی عربیہ کے جدہ میں مقیم بھٹکل کے عوام نے بھی  یوم جمہوریہ کی تقریب میں شرکت کرتے ہوئے  جشن میں شرکت کی ہے اور موقع پرموجود کونسل جنرل محمد نور رحمن شیخ کے ساتھ ملاقات کرتے ہوئے  مبارکبادیوں کا  تبادلہ کیا ہے۔