رائل سیما لفٹ اریگیشن پروجیکٹ: آندھرا کے خلاف تلنگانہ حکومت پہنچی سپریم کورٹ

Source: S.O. News Service | Published on 5th August 2020, 9:38 PM | ملکی خبریں |

حیدرآباد،5؍اگست(ایس او نیوز؍ایجنسی)تلنگانہ حکومت اے پی حکومت کے رائل سیما لفٹ اریگیشن پروجیکٹ کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع ہوئی۔ حکومت نے عدالت عظمی سے خواہش کی کہ وہ اس پروجیکٹ کے احکام منسوخ کرے اور ٹنڈر کے عمل کو بھی روکا جائے۔

اے پی حکومت اس پروجیکٹ کے ذریعہ سری سیلم ریزروائر سے دریائے کرشنا کے پانی سے استفادہ کرنا چاہتی ہے۔ وہ اس پروجیکٹ کو جلد شروع کرنا چاہتی ہے۔ اے پی حکومت جس نے قبل ازیں اس سلسلہ میں احکام جاری کیے نے ٹنڈر کے عمل کو شروع کردیا۔ تلنگانہ حکومت نے اس مسئلہ پر کرشناریور مینجمنٹ بورڈ سے شکایت کی اور کہا کہ اے پی کی جانب سے اس پروجیکٹ کی شروعات سے تلنگانہ سے شدید ناانصافی ہوگی اور اس کا رنگاریڈی پروجیکٹ متاثر ہوگا۔

تلنگانہ حکومت کی عرضی کی سماعت کرتے ہوئے بورڈ نے اے پی حکومت کو ہدایت دی تھی کہ وہ بغیر کسی قبل ازیں اجازت کے کوئی نیا پروجیکٹ شروع نہ کرے۔ مرکزی وزارت آبی وسائل نے بدھ کو ایپکس کونسل کے اجلاس کی تجویز رکھی تھی تاہم وزیراعلی کے چندرشیکھرراو نے واضح کردیا کہ وہ اس اجلاس میں پہلے سے طئے شدہ مختلف پروگراموں کی وجہ سے شریک نہیں ہوسکیں گے۔

واضح رہے کہ وزیراعلی کے چندرشیکھرراو نے اے پی حکومت نے ایک جائزہ اجلاس کے دوران اس مسئلہ پر عدالت عظمی سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا تھا۔ ریاست کی اصل اپوزیشن کانگریس نے گزشتہ روز ریاستی حکومت پر اس مسئلہ پر نکتہ چینی کی تھی۔ ریاستی پارٹی سربراہ کیپٹن اتم کمارریڈی نے وزیراعلی کو ایک کھلا مکتوب روانہ کرتے ہوئے ان سے خواہش کی تھی کہ وہ پڑوسی ریاست کو اس پروجیکٹ کی شروعات سے روکے۔

ایک نظر اس پر بھی

چین کیلئے جاسوسی کرتے پکڑے گئے راجیو شرما کے پیچھے اور بھی بڑے ہاتھ ہوسکتے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی نے غیر جانبدارانہ تحقیقات کا کیا مطالبہ

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی جنر ل سکریٹری عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری اعلامیہ میں کہا ہے کہ چین کیلئے جاسوسی کرتے چینی خاتون کے ساتھ پکڑے گئے راجیو شرما کے پیچھے اور بھی بڑے ہاتھ ہوسکتے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی نے مطالبہ کیا ہے کہ شرما کے تعلق سے  غیر ...