ٹینس اسٹار ماریا شارا پووا نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا

Source: S.O. News Service | Published on 28th February 2020, 1:04 AM | اسپورٹس |

لندن،27/فروری (ایس او نیوز) روس کی سرکردہ ٹینس اسٹار ماریا شاراپووا نے مسلسل انجری کی وجہ سے ٹینس کو خیرباد کہہ دیا ہے۔ انہوں نے اپنی ریٹائرمنٹ کا اعلان فیشن میگزین ’ووگ‘ اور ’وینیٹی فیئر‘ میں لکھےگئے مضامین میں کیا۔ شاراپووا پانچ گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ جیتنے میں کامیاب رہیں۔ وہ مختلف اوقات میں مجموعی طور پر 17 ہفتوں تک عالمی نمبر ایک بھی رہی تھیں۔ ان کو سال 2016 میں ممنوعہ دوا استعمال کرنے پر 15 مہینے کی پابندی کا بھی سامنا کرنا پڑا۔ اس پابندی کے ختم ہونے کے بعد وہ پوری طرح کھیل میں واپس آنے کی جد وجہد تو کرتی رہیں لیکن کوئی بڑی کارکردگی دکھانے سے قاصر رہیں۔

ماریا شاراپووا کی ریٹائرمنٹ کے اعلان کے بعد ہی ان کے ساتھی کھلاڑیوں نے انہیں بھرپور انداز میں خراج تحسین پیش کرتے ہوئے انہیں لیجنڈ اور گریٹ چمپئن کے الفاظ سے نوازا۔ سربیا سے تعلق رکھنے والے مشہور کھلاڑی نوواک جوکووچ نے انہیں ٹینس کی ایک اسمارٹ کھلاڑی قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ ذہنی طور پر چمپئن بننےکی سوچ رکھتی تھیں اور یہ انہوں نے عملی طور پر بھی ثابت کیا۔ مختلف انجری کی وجہ سےگزشتہ دو تین برسوں میں روسی کھلاڑی کے کھیل میں گراوٹ پیدا ہونا شروع ہو گئی اور بتدریج اُن کی عالمی پوزیشن میں کمی آتی گئی۔ وہ ریٹائرمنٹ پرجانے سے قبل 373ویں پوزیشن پر تھیں۔ رواں برس کے پہلے گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ آسٹریلین اوپن میں بھی وہ بہتر کارکردگی دکھانے سے محروم رہی تھیں۔ رواں برس کے دوران ٹینس کو خیربادکہنے والی وہ دوسری عالمی نمبر ایک ہیں۔

قبل ازیں کیرولین ووزنیاکی بھی انجری کی وجہ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر چکی ہیں۔ ماریا شارا پوووا کو ٹینس کھیل میں شہرت اُس وقت حاصل ہوئی جب سال 2004 میں 17 برس کی عمر میں انہوں نے لندن میں کھیلا جانے والا گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ ومبلڈن جیتا تھا۔ وہ سال 2005 میں 18 برس کی عمرمیں عالمی نمبر ایک بن گئیں۔ اسی سال وہ یو ایس اوپن بھی جیتنےمیں کامیاب رہی تھیں۔ سال 2012 میں وہ ایک ہی وقت میں چاروں گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ جیتے والی کھلاڑی بن گئی تھیں۔ روسی علاقے سائبیریا میں پیدا ہونے والی شاراپووا نے 4 برس کی عمر میں ٹینس کا ریکٹ پکڑکر سوچی شہر میں کھیلنےکی ابتداء کی تھی۔ اُن کے والدین چرنوبیل جوہری حادثے کے بعد نقل مکانی کرکےسوچی شہر میں آباد ہوئے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

آئرلینڈ نے عالمی چیمپئن انگلینڈ کو سیریز کے تیسرے اور آخری یک روزہ میچ میں 7 وکٹوں سے شکست دی

  کپتان اینڈی بال برنی (113) اور افتتاحی بلے باز پال اسٹارلنگ (142) کی شاندار سنچریوں کی بدولت آئرلینڈ نے عالمی چیمپئن انگلینڈ کو سیریز کے تیسرے اور آخری یک روزہ میچ میں سات وکٹوں سے ہراکر زبردست کامیابی حاصل کی ہے۔