وادی کشمیر میں بند پڑے مندروں کے دروازے پھر سے کھلیں گے:کشن ریڈی

Source: S.O. News Service | Published on 24th September 2019, 12:13 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو،24؍ستمبر(ایس او نیوز؍یواین آئی) جموں و کشمیر کا خصوصی درجہ ختم کرنے اور آرٹیکل370کے کچھ التزامات کو ہٹائے جانے کے بعد مرکزی حکومت ریاست میں برسوں سے بند پڑے مندروں کے دروازے پھرسے کھولنے کی تیاری کررہی ہے -مرکزی وزیرمملکت برائے داخلہ جی کشن ریڈی نے پیر کو یہاں میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ وادی کشمیر میں گزشتہ کئی برسوں سے تقریباً 50ہزار مندروں کے دروازے بند پڑے ہیں -ان مندروں میں سے کچھ کا ڈھانچہ بھی توڑ دیا گیا تھا اور مورتیوں کو بھی نقصان پہنچایا گیاتھا-مرکزی حکومت وادی کشمیر میں ایسے مندروں کا جلد ہی سروے کرانے جارہی ہے اور جلد ہی ان کو پھر سے کھولنے پر کام شروع کیاجائے گا-ریڈی نے بتایا کہ کشمیر میں بند پڑے اسکولوں کو پھر سے کھولے جانے پر بھی کام شروع کیا جائے گا-وادی میں بندپڑے اسکولوں کی صحیح معلومات کے لئے سروے کرایا جارہا ہے -سروے کے لئے کمیٹی تشکیل دی گئی ہے -کمیٹی کی رپورٹ کے بعد اسکولوں کو پھرسے کھولنے کے لئے قدم اٹھائے جائیں گے -ریڈی نے بتایا کہ دہائیوں تک وادی میں دہشت گردی کی وجہ سے ہزاروں کی تعداد میں پنڈتوں کو منتقل ہونے کے لئے مجبور ہونا پڑا تھا-دہشت گردوں نے بڑی تعداد میں کشمیری پنڈتوں کو قتل بھی کیاتھا-اس دوران وہاں کے کئی مشہور مندروں سمیت ہزاروں مندروں کے ڈھانچے اور مورتیوں کو نقصان پہنچایا گیا تھا-انہوں نے کہاکہ مرکزی حکومت جموں و کشمیر میں دہشت گردی کے خاتمے کے لئے پرعزم ہے -دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئے مہم بھی جاری ہے -حکومت وادی سے نفرت کے جذبے کو جڑ سے ختم کرکے ہی چپ بیٹھے گی- واضح رہے کہ90کی دہائی میں جموں و کشمیر میں دہشت گردی کا دور شروع ہونے کے بعدوہاں رہنے والے کشمیری پنڈتوں کو منتقل ہونا پڑا تھا-کشمیری پنڈتوں کو مارنے کے علاوہ دہشت گردوں نے مندروں کو بھی نقصان پہنچایا تھا-بند پڑے مندروں میں کئی مشہور ہیں -

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹکا اسمبلی کے سابق باغی اراکین کی نااہلیت برقرار۔ لیکن انتخاب لڑ نے پر نہیں ہوگی پابندی۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ

سابقہ اسمبلی میں جن 17 کانگریس اور جے ڈی ایس اراکین نے بغاوت کی تھی، انہیں سپریم کورٹ سے تھوڑی سے راحت ملی ہے جس کا اثر ریاستی بی جے پی حکومت پر بھی پڑنے والا ہے۔

نا اہل اراکین اسمبلی کے مستقبل پر سپریم کورٹ کا فیصلہ، نااہلی کا فیصلہ درست قرار پائے گا یا معاملہ دوبارہ اسمبلی اسپیکر کے حوالے ہوگا؟

ریاستی اسمبلی سے نا اہل قرار پانے والے 17اراکین اسمبلی کے متعلق سپریم کورٹ چہارشنبہ کے روز اپنا فیصلہ سنائے گی۔اسمبلی اسپیکر رمیش کمار کی طرف سے نا اہل قرار دئیے جانے کے فیصلے کو ان 17اراکین نے سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔ عدالت عظمیٰ میں اس عرضی کی سماعت پوری ہو چکی ہے اور عدالت ...

بھٹکل شرالی کی دختر انجمن ڈاکٹر انیسہ شیخ کو ملی ڈینٹل شعبہ میں اعلیٰ ترین کامیابی : جملہ مضامین کے علاوہ مینگلور کالج کی بہترین طالبہ کے ایوارڈ سے بھی نوازا گیا

دختر ِ انجمن  کاگولڈ میڈل اور رابطہ گولڈ میڈل ایوارڈ سے سرفراز  بھٹکل  کی  ڈاکٹر انیسہ شیخ طبی میدان میں بھی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ پیش کرتے ہوئے اے جے اسپتال مینگلورو میں بھی  امتیازی نمبرات سے کامیاب  ہونے کا سلسلہ جاری رکھا ہے اور کالج کی بہترین طالبہ کا ایوارڈ حاصل ...

کرناٹکا اسمبلی کے سابق باغی اراکین کی نااہلیت برقرار۔ لیکن انتخاب لڑ نے پر نہیں ہوگی پابندی۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ

سابقہ اسمبلی میں جن 17 کانگریس اور جے ڈی ایس اراکین نے بغاوت کی تھی، انہیں سپریم کورٹ سے تھوڑی سے راحت ملی ہے جس کا اثر ریاستی بی جے پی حکومت پر بھی پڑنے والا ہے۔

ایودھیا معاملہ سے منسلک وہ شخصیات، جن کےکام کی وفاداری مذہب پربھاری ثابت ہوئی

سپریم کورٹ کے فیصلےکے بعد ایودھیا معاملے(مندر- مسجد تنازعہ) کا خاتمہ ہوگیا ہے۔ 135 سال پہلے1885 میں شروع ہوئےایودھیا تنازعہ کی قانونی لڑائی میں کچھ کردارایسے رہے ہیں، جنہیں ان کی ڈیوٹی کے فرائض کولےکرہمیشہ یاد رکھا جائےگا،

مہاراشٹر: کانگریس - این سی پی نےصدر راج کوغیرضروری بتایا، مودی حکومت پرعائد کیا بڑا الزام

  کا نگریس اور این سی پی نے آج یہاں ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران مرکزی حکومت پر بڑا الزام عائد کرتے ہوئے مہاراشٹرمیں صدرراج کوغیرضروری قرار دیتے ہوئےاسے جلد بازی میں لیا گیا فیصلہ قراردیاہے۔ دونوں جماعتوں نے یہ بھی کہا کہ  شیوسینا کے ساتھ سمجھوتہ پرابھی غورنہیں ...

اسدالدین اویسی نےکہا- بابری مسجد کے لئے پانچ ایکڑ زمین کے حق میں نہیں ہے مجلس اتحاد المسلمین

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدراوررکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے منگل کو کہا کہ ان کی پارٹی ایودھیا معاملے پرسپریم کورٹ کے فیصلے کے تحت ایک مسجد کی تعمیر کے لئے دی جانے والی پانچ ایکڑ کی اراضی کے حق میں نہیں ہے

نمونیا ایک ایسا مرض، جس کا علاج موجود، پھر بھی مہلک ترین مرض؛ ایک سال میں آٹھ لاکھ بچے جاں بحق

عالمی ادارہ صحت نے ایک رپورٹ جاری کی ہے، جس کے مطابق نمونیا کے مرض میں مبتلا ہو کر گزشتہ برس آٹھ لاکھ شیر خوار اور کم عمر بچے ہلاک ہوئے۔ پاکستان، نائجیریا، بھارت، جمہوریہ کانگو اور ایتھوپیا کا شمار ان ممالک میں ہوتا ہے، جہاں نمونیا کے باعث ہلاک ہونے بچوں کی تعداد تقریباً چار ...