سوچھ فنڈس : بی بی ایم پی افسروں کو اے سی بی تحقیق کا سامنا

Source: S.O. News Service | Published on 24th February 2020, 12:08 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،23/فروری(ایس او  نیوز) سوچھ بھارت ابھیان کے تحت مرکز کی جانب سے جاری کردہ فنڈس کے مبینہ غلط استعمال کے معاملے میں حکومت کرناٹک نے بی بی ایم کے متعلقہ افسروں کے خلاف ایک اے سی بی تحقیق کا حکم دیا ہے۔

محکمہ شہری ترقیات (یو ڈی ڈی) کی ایک رپورٹ کی بنیاد پرحکومت نے انسدادِ رشوت خوری قانون کے تحت تحقیق کا حکم دیا ہے۔2016/17اور 2017/18کے دوران مرکز نے سوچھ بھارت ابھیان پروگراموں کے لئے بی بی ایم پی کو108کروڑ روپے جاری کئے تھے۔ لیکن بی بی ایم پی نے مبینہ طورپر صر ف 16کروڑ روپئے اس کے لئے خرچ کئے اوربقیہ ر قم ترقیات اور فٹ پاتھوں کی ری ماڈلنگ کے لئے موڑ دی گئی۔

بنگلور و شہر کے بی جے پی کے ترجمان رمیش نے فنڈس کے مبینہ موڑے جانے کے خلاف یو ڈی ڈی میں شکایت کی تھی۔ انہوں نے افسروں کو فنڈس موڑنے مجبور کرنے کا کچھ سابق وزر اء پر الزام لگایا۔یو ڈی ڈی نے ایک اندرونی تحقیق کی اور پایاکہ بی بی ایم پی نے دیگر مقاصد کے لئے مالیہ کا استعمال کیا۔تاہم اس نے صرف افسروں کو خاطی ٹھہرایااور یہ کہتے ہوئے منتخب نمائندوں کے نام خارج کردئیے کہ نہ رمیش نہ ہی بی بی ایم پی نے ان کے ملوث ہونے کے تعلق سے کوئی ٹھوس ثبوت پیش کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں عالمی وباء سے ایک ہی دن 54 ؍افراد لقمہ اجل، 24 گھنٹوں کے دوران بنگلورو میں 1148 سمیت ریاست بھر میں 2062 پوزیٹیو کیس

عالمی وباء کو رونا وائرس کا قہر ہنوز جاری ہے ریاست میں ایک ہی دن کورونا وائرس کے 2062 کیس درج ہوئے ہیں۔ اب تک کی یہ ریکارڈ تعداد ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کووڈ۔19 کی زد میں آکر بنگلورو میں 13 سمیت ریاست بھر 54 ؍افراد لقمہ اجل بن گئے ہیں۔

اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر سے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

جنوبی کینرا بنٹوال تعلقہ کے سجی پانڈو دیہات میں ہر سال بارش کے موسم میں گزشتہ 30 برسوں سے لوگوں کو ہمیشہ  پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ علاقہ اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر کے حلقہ میں آتا ہے اور یہاں مسلمانوں کی کثیر آباد ی ہے۔

منگلورو۔کاسرگوڈ سرحد پر مسافروں کیلئے پریشانی

ریاست میں گزشتہ ماہ اپریل سے ہی کورونا وائرس پھیلنے کے نتیجہ میں کیرالہ ۔ کرناٹک کی سرحد پر واقع کاسرگوڈ اور منگلورو کے درمیان روازنہ ملازمت اور تعلیم کے سلسلہ میں آنے جانے والے لوگوں کیلئے ہر دن نت نئی پریشانیوں کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔

کرناٹک میں کووڈ۔19 کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں، مرکزی ٹیم کا چیف منسٹر و عہدیداروں کے ساتھ تبادلہ خیال؛ سری راملو کی پریس کانفرنس

کرناٹک نے منگل کے روز مرکز ی ٹیم کو بتایا کہ ریاست میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں ہے۔ریاستی وزیر صحت و خاندانی بہبود بی سری راملو نے میڈیا سے کہا ’’ ہم نے یہ واضح کردیا ہے کہ یہاں کمیونٹی پھیلاؤ کا امکان نہیں ہے۔ ہم ، دوسرے اور تیسرے مرحلہ کے درمیان ہیں‘‘۔

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری؛ پھر 1498 نئے معاملات، صرف بنگلور سے ہی سامنے آئے 800 پوزیٹیو

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری ہے اور ریاست  میں روز بروز کورونا کے معاملات میں اضافہ دیکھا جارہا ہے، ریاست کی راجدھانی اس وقت  کورونا کا ہاٹ اسپاٹ بنا ہوا ہے جہاں ہر روز  سب سے زیادہ معاملات درج کئے جارہے ہیں۔ آج منگل کو پھر ایک بار کورونا کے سب سے زیادہ معاملات بنگلور سے ہی ...

کورونا: ہندوستان میں ’کمیونٹی اسپریڈ‘ کا خطرہ، اموات کی تعداد 20 ہزار سے زائد

  ہندوستان میں کورونا انفیکشن کے بڑھتے معاملوں کے درمیان کمیونٹی اسپریڈ یعنی طبقاتی پھیلاؤ کا  اندیشہ بڑھتا نظر آرہا ہے۔ بالخصوص کرناٹک  میں کورونا انفیکشن کے کمیونٹی اسپریڈ کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ کرناٹک کے علاوہ گوا، پنجاب و مغربی بنگال کے نئے ہاٹ اسپاٹ بننے کے ...