سوشانت خودکشی معاملہ: جانچ سی بی آئی کے حوالہ، بہار حکومت کا مطالبہ مرکز نے کیا قبول

Source: S.O. News Service | Published on 5th August 2020, 8:33 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،5؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) سوشانت سنگھ راجپوت کی موت معاملہ میں مرکز نے بہار حکومت کی سی بی آئی جانچ کی سفارش کو قبول کر لیا ہے۔ بہار حکومت نے پیر کے روز مرکز کے پاس سی بی آئی جانچ کے لئے سفارش بھیجی تھی۔ مرکزی حکومت نے سپریم کورٹ کو مطلع کرتے ہوئے بتایا کہ سوشانت سنگھ معاملہ سی بی آئی کو سونپ دیا گیا ہے۔

سپریم کورٹ کی طرف سے بدھ کے روز ایک عرضی پر سماعت کے دوران مرکز کی جانب سے سالیسٹر جنرل تشار مہتہ بھی موجود تھے۔ سالیسٹر جنرل نے بتایا کہ مرکز نے بہار حکومت کی سی بی آئی جانچ کی سفارش قبول کر لی ہے اور معاملہ سی بی آئی کو منتقل کر دیا گیا ہے۔

تشار مہتہ نے کہا کہ اس عرضی کے اب کوئی معنی نہیں ہیں کیونکہ کیس سی بی آئی کو ٹرانسفر ہو چکا ہے۔ مہتہ نے کہا کہ ایک فریق کی خواہش ہے کہ جانچ بہار پولیس کرے جبکہ دوسرا فریق چاہتا ہے کہ جانچ ممبئی پولیس کرے۔ ایسے حالات میں مرکز خود ہی جانچ کرے گا، تاکہ کوئی ثبوت ختم نہ ہوں۔ انہوں نے ممبئی پولیس کی جانچ پر کہا، ’’اب سی بی آئی کو اس معاملہ کی جانچ سونپ دی گئی ہے، لہذا اب مہاراشٹر پولیس کچھ نہ کرے، کیونہ ایسا کرنے پر وہ ثبوتوں کو نقصان پہنچانے کا کام کر سکتی ہے۔

واضح رہے کہ بدھ کے روز سوشانت راجپوت معاملہ میں سپریم کورٹ میں جسٹس رشی کیش رائے کی بنچ نے سماعت شروع کی ہے۔ اس معاملہ میں سی بی آئی جانچ کے لئے عرضی بھیجی گئی تھی۔ سماعت کے دوران سوشانت کے والد کرشن کمار سنگھ کے وکیل وکاس سنگھ نے کہا کہ سوشانت کے والد یہ چاہتے ہیں کہ کیس سی بی آئی کو سونپا جائے۔ وکاس نے کہا کہ بہار پولیس ممبئی میں جانچ کے لئے گئی تھی جہاں ایک افسر کو کوارنٹائن کر دیا گیا۔ ایسے میں ممبئی پولیس کے ذریعے انصاف کی فراہمی کی امید کم ہے۔

وکاس سنگھ نے کہا کہ عدالت اس معاملہ میں ممبئی پولیس کو بہار پولیس کا تعاون کرنے کی ہدایت جاری کرے۔ سنگھ نے کہا کہ موت کی وجوہات کی جانچ ہونی چاہیے۔ افسر کو کوارنٹائن صرف ثبوتوں کو ختم کرنے کے لئے ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ جس شخص نے اداکار کی لاش کو پھانسی سے نیچے اتارا تھا اسے ممبئی پولیس نے حیدرآباد جانے کی اجازت فراہم کر دی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

چین کیلئے جاسوسی کرتے پکڑے گئے راجیو شرما کے پیچھے اور بھی بڑے ہاتھ ہوسکتے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی نے غیر جانبدارانہ تحقیقات کا کیا مطالبہ

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی جنر ل سکریٹری عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری اعلامیہ میں کہا ہے کہ چین کیلئے جاسوسی کرتے چینی خاتون کے ساتھ پکڑے گئے راجیو شرما کے پیچھے اور بھی بڑے ہاتھ ہوسکتے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی نے مطالبہ کیا ہے کہ شرما کے تعلق سے  غیر ...