ایودھیا پر عدالت کے فیصلے کا احترام کیا جانا چاہئے: مایاوتی

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 7th November 2019, 8:36 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،07/نومبر(آئی این ایس انڈیا) ایودھیا تنازع پر سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے سے پہلے بہوجن سماج پارٹی کی سربراہ مایاوتی نے جمعرات کو کہا کہ عدالت کا ہر حال میں احترام کیا جانا چاہیے۔ساتھ ہی مایاوتی نے حکومت سے لوگوں کے جان مال کی حفاظت کی ضمانت کو یقینی بنانے کی بھی درخواست کی ۔

بی ایس پی سپریمو نے آج صبح ایک ٹویٹ میں کہاکہ ایودھیا معاملے میں جلد ہی سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے کا امکان ہے جسے لے کر عام لوگوں میں بے چینی فطری ہے۔ایسے میں تمام ہم وطنوں سے خصوصی اپیل ہے کہ وہ عدالت کے فیصلے کا ہر حال میں احترام کریں۔یہی ملک کے مفاد اور عوامی مفاد میں بہتر طریقہ ہے۔

مایاوتی نے ایک اور ٹویٹ میں کہا ساتھ ہی حکمراں پارٹی اور مرکز اور ریاستی حکومتوں کی بھی یہ آئینی اور قانونی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اس موقع پر لوگوں کے جان مال کی حفاظت کی ضمانت یقینی بنائیں اور معمولات زندگی کو متاثر نہ ہونے دیں۔

غور طلب ہے کہ عدالت مذہبی جذبات اور سیاست کے لحاظ سے انتہائی حساس مانے جانے والے رام جنم بھومی بابری مسجد زمین تنازعہ معاملے میں 17 نومبر سے پہلے فیصلہ سنا سکتی ہے کیونکہ چیف جسٹس رنجن گوگوئی اسی دن ریٹائرڈ ہو رہے ہیں۔وہ  بابری مسجد زمین تنازعہ معاملے میں آئین بنچ کی قیادت کر رہے ہیں۔چیف جسٹس کی سربراہی میں پانچ ججوں کی آئین بنچ نے 40 دن سے چلی آرہی سماعت 16 اکتوبر کو مکمل کرنے کے بعد ایودھیا زمین تنازعہ معاملے میں اپنا فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔


 

ایک نظر اس پر بھی

بابری مسجد انہدام معاملہ میں بی جے پی لیڈران سی بی آئی عدالت میں ہوئے پیش

 ایودھیا میں 6 دسمبر 1992کو متنازعہ ڈھانچہ (بابری مسجد) گرائے جانے کے معاملہ میں جمعرات کو بھارتیہ جنتا پارٹی کے ونے کٹیار، رام ولاس ویدانتی سمیت چھ لیڈر مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کی عدالت میں پیش ہوئے۔

حاملہ ہاتھی کی دردناک موت کے بعد سوشل میڈیا پر لوگ برہم، مرکز نے کیرالہ حکومت سے مانگی رپورٹ

کیرالہ کے پلکڈ ضلع واقع سائلنٹ ویلی فاریسٹ میں ایک حاملہ ہاتھی گزشتہ دنوں انتقال کر گئی۔ اس کی موت انتہائی دردناک طریقے سے ہوئی جس کی خبر سوشل میڈیا پر پھیلنے کے بعد کئی بڑی ہستیوں نے برہمی کا اظہار کیا ہے۔