توہین عدالت معاملہ میں پرشانت بھوشن کی وضاحت نامنظور

Source: S.O. News Service | Published on 10th August 2020, 1:24 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،10؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) سپریم کورٹ نے 11 سال پرانے توہین عدالت معاملے کے معروف وکیل پرشانت بھوشن کی وضاحت کو نامنظور کرتے ہوئے میرٹ کی بنیاد پر سماعت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی پرشانت بھوشن کے خلاف توہین عدالت کا کیس جاری رہے گا۔ اب اس معاملے پر 17 اگست کو سماعت ہوگی۔

جسٹس ارون مشرا، جسٹس بی آر گوئی اور جسٹس کرشنا مراری پر مشتمل ایک ڈویژن بنچ نے اپنے حکم میں کہا کہ ’’ہمیں اس بات کو (قانون کہ کسوٹی پر) پرکھنے کی ضرورت ہے کہ پرشانت بھوشن کا بدعنوانی سے متعلق دیا گیا بیان توہین عدالت کا معاملہ بنتا ہے یا نہیں؟ اس لئے اس معاملے کی سماعت کرنا ضروری ہے۔‘‘

عدالت نے کیس کی اگلی سماعت کے لئے 17 اگست کی تاریخ مقررکی ہے۔ پرشانت بھوشن نے عدالت کے کمرے میں دوبارہ روایتی طریقے سے سماعت دوبارہ شروع ہونے کے بعد اس کیس کو درج کرنے کی درخواست کی، لیکن اس سے انکار کردیا گیا۔

پرشانت بھوشن کے والد اور سابق وزیر قانون شانتی بھوشن نے عدالت سے اپنی بات رکھنے کی اجازت طلب کی، لیکن جسٹس مشرا نے کہا کہ وہ انہیں 17 اگست کو سماعت کے دوران اپنی بات رکھنے کا موقع دیں گے۔ عدالت نے گزشتہ چار اگست کو اس معاملے میں حکم کو محفوظ رکھ لیا تھا۔ یہ معاملہ تہلکہ میگزین میں شائع پرشانت بھوشن کے انٹرویو سے متعلق ہے، جس میں انہوں نے عدلیہ میں بدعنوانی سے متعلق بیان دیئے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

چین کیلئے جاسوسی کرتے پکڑے گئے راجیو شرما کے پیچھے اور بھی بڑے ہاتھ ہوسکتے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی نے غیر جانبدارانہ تحقیقات کا کیا مطالبہ

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی جنر ل سکریٹری عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری اعلامیہ میں کہا ہے کہ چین کیلئے جاسوسی کرتے چینی خاتون کے ساتھ پکڑے گئے راجیو شرما کے پیچھے اور بھی بڑے ہاتھ ہوسکتے ہیں۔ ایس ڈی پی آئی نے مطالبہ کیا ہے کہ شرما کے تعلق سے  غیر ...