انکولہ کے ڈونگری دیہات کے طلبا جان ہتھیلی پرلے کرتعلیم حاصل کرنے پر مجبور؛ ایک ماہ کے اندر بریج تعمیر کرکے دینے کا ایم ایل اے نے کیا وعدہ

Source: S.O. News Service | Published on 3rd February 2021, 12:06 AM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

انکولہ:2؍فروری (ایس اؤ نیوز)انکولہ تعلقہ کے  ڈونگری  دیہات کے طلبا کےلئے تعلیم حاصل کرنا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے۔ یہاں کے طلبہ کو  ہر روز خطرناک حالت میں جان ہتھیلی پر لےکر ندی پارکرتےہوئے  اسکول پہنچنا ہوتاہے۔

ساحل آن لائن کے نمائندے نے اس دیہات میں جاکر عوام سے بات چیت کی ہے  جس سے پتہ چلا ہے کہ  اس علاقہ کے پڑوس کے سنکسال میں ہائی اسکول ہے، کالج پہنچنے کے لئے قریب کی  شاہراہ سے انکولہ پہنچنے  کےلئے بس کا انتظام ہے ،سنکسال ہائی اسکول میں زیر تعلیم ڈونگری، ہیگرنی ، بدرلی  جیسے پاس پڑوس مضافات کے  40سے زائد طلبا ہیں ، لیکن   دونوں دیہاتوں  کے درمیان بہنے والی گنگاولی ندی  تعلیم کے حصول میں سدراہ بنی ہوئی ہے۔ طلبا اس مشکل کو دورکرنے کےلئے بانس کو جوڑ کر ایک  تختی کی طرح بناکر اُس پر سوار ہوتے ہیں اور   ندی کو پار کر کے  اسکول پہنچتے ہیں ۔ کیونکہ اس ترقی یافتہ ملک میں ابھی تک ان طلبا کو اسکول پہنچنےکےلئے کوئی دوسرا سہارا نہیں ہے۔

آنکھوں کو نظر آنے والے گاؤں کو پہنچنے کے لئے 20کلومیٹر لمبا چکر کاٹنے پر مجبور ہیں، ہرروز صبح 15-7 بجے  ایک بس نکلتی ہے تو شام  30-5بجے ہالٹنگ بس کا انتطام ہے۔ اسی لئے طلبا بانس  کی تختی بناکر  اُس پر سوار ہوتے ہیں  اور  گنگاولی ندی کے اس پار پہنچ کر ہائی اسکول اور کالج جاتےہیں۔

سنکسال کے قریب گنگاولی ندی پر 2016میں ایک جھولے والا برج تعمیر کیاگیا تھا۔ جس کے نتیجےمیں طلبا کو بڑی سہولت میسر تھی۔ لیکن جھولے والا برج 2019کے سیلاب میں بہہ گیا  جس کے بعد  ابھی تک نہ اس کی درستی ہوئی اور نہ ہی کوئی متبادل انتظام کیا جاسکا۔  اس دن سے طلبا  پریشانی میں مبتلا ہیں اورلکڑی کے بنے ایک تختے  پر کپکپاتے  ہوئے اور ایڑیوں پر بیٹھ کر کسی طرح ندی پار کرلیتے ہیں ، اس تختے پر مسئلہ یہ بھی ہے کہ دو تین سے لوگوں سے زیادہ اس میں سوار  نہیں ہوسکتے۔

رکن اسمبلی کا  کیا کہنا ہے:  واقعے کی جانکاری ملنے پر کاروار۔انکولہ رکن اسمبلی  روپالی نائک نے بتایا کہ  وہ اس تعلق سے فکرمندہیں اور فوری طور پر تحصیلدار اور دیگر آفسران کو متعلقہ دیہات جاکر رپورٹ دینے اور بریج کی تعمیر کے لئے پلان بنا کر  بجٹ تیار کرنے کی ہدایت جاری کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ  یہاں ایک جھولے والا بریج (ھینگنگ بریج) تعمیر کرنے کےلئے فوری طور پر ایک کروڑ روپئے  انہوں نے حکومت سے  منظور کرائے  ہیں، لیکن اسمبلی میں  تین کروڑ روپئے جاری کرنے کی بات رکھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگلے ایک ماہ کے اندر وہ یہاں بریج کا کام شروع کریں گی۔

اس سلسلےمیں اترکنڑا ضلع پنچایت سی ای اؤ پریانگا ایم نےبھی  کہا ہے کہ انکولہ تعلقہ کے سنکسال میں طلبا جن مشکلات کا سامنا کررہے ہیں اس تعلق سے وہ ضروری جانکاری لیں گی اور  فوری طورپر کارروائی کریں گی۔

ایک نظر اس پر بھی

مینگلور کے قریب کڈبا میں دو نوجوان ندی میں ڈوب کر جاں بحق

مینگلور سے قریب  85 کلو میٹر دور کڈبا تعلقہ کے اِچیلم پانڈے کی ایک ندی میں غرق ہوکر دو نوجوان جاں بحق ہوگئے جن کی نعشیں ندی سے برآمد کرلی گئی ہیں۔ حادثہ پیر کی شام کو پیش آیا جب یہ دونوں ندی میں نہانے کےلئے اُترے تھے۔

بھٹکل: ریاست میں کورونا کے بڑھتے معاملات سےپریشان طلبہ نے پیر سے شروع ہونے والے امتحانات منسوخ کرنے ٹوئیٹر پر چلائی مہم

کورونا کی دوسری لہر میں  بڑھتے کیسس کے دوران ایک طرف  میٹرک اور سکینڈ پی یوسی کے امتحانات ملتوی اور منسوخ کئے جارہےہیں تو وہیں دوسری طرف ویشویشوریا ٹیکنالوجیکل یونیورسٹی (وی ٹی یو) کے تحت آنے والی کالجس میں کل  پیر سے فرسٹ سیمسٹر کے امتحانات شروع ہورہےہیں۔

بھٹکل میں ماسک نہ پہننے والوں پر کاروائی؛ صبح سے دوپہر تک 68 لوگوں پر عائد کیا گیا جرمانہ؛ باہر سے بھٹکل آنے والوں پر رکھی جارہی ہے نگاہ

بھٹکل ٹاون میونسپالٹی اور جالی پٹن پنچایت کے آفسران نے  ماسک نہ پہننے والوں کے خلاف آج اتوار کو مشترکہ مہم چلاتے ہوئے  68 لوگوں سے 6800 روپیہ جرمانہ وصول کیا ہے۔

سرسی میں آتی کرم ہوراٹا سمیتی کی جانب سے منظوری حق قانون کے متعلق ورکشاپ

فاریسٹ حقوق قانون کی منظوری کی  متعینہ مدت کے اندر منظوری کارروائی کو انجام دیا جائے۔ آج عوامی نمائندوں میں حوصلہ کی کمی کی وجہ سے فاریسٹ حقوق قانون نافذ نہیں ہورہاہے۔ عوامی نمائندے صرف انتخابات کے دوران فاریسٹ کے اتی کرم داروں کے مسائل پر بات کرتے ہیں انتخابات ختم ہوتے ہی ...

 کیا شمالی کینرا میں کانگریس پارٹی کی اندرونی گروہ بندی ختم ہوگئی ؟

ضلع شمالی کینرا کو ایک زمانہ میں پورری ریاست کے اندر کانگریس کا سب سے بڑا گڑھ مانا جاتا تھا، لیکن آج ضلع میں کانگریس پارٹی کا وجود ہی ختم ہوتا نظر آرہا ہے، کیونکہ ضلع کی چھ اسمبلی سیٹوں میں سے صرف ہلیال ڈانڈیلی حلقہ چھوڑیں تو بقیہ پانچوں سیٹوں کے علاوہ پارلیمان کی ایک سیٹ پر بی ...

 کیا شمالی کینرا میں کانگریس پارٹی کی اندرونی گروہ بندی ختم ہوگئی ؟

ضلع شمالی کینرا کو ایک زمانہ میں پورری ریاست کے اندر کانگریس کا سب سے بڑا گڑھ مانا جاتا تھا، لیکن آج ضلع میں کانگریس پارٹی کا وجود ہی ختم ہوتا نظر آرہا ہے، کیونکہ ضلع کی چھ اسمبلی سیٹوں میں سے صرف ہلیال ڈانڈیلی حلقہ چھوڑیں تو بقیہ پانچوں سیٹوں کے علاوہ پارلیمان کی ایک سیٹ پر بی ...

منگلورو: قانونی پابندی کے باوجود دستیاب ہیں ویڈیو گیمس. نئی نسل ہو رہی ہے برباد۔ ماہرین کا خیال

ویڈیو گیم میں ہار جیت کے مسئلہ پر منگلورو میں ایک نوعمر لڑکے کے ہاتھوں دوسرے کم عمر لڑکے عاکف کے قتل کے بعد ویڈیو گیمس اور خاص کر پبجی کا موضوع پھر سے گرما گیا ہے اور کئی ماہرین نے ان ویڈیو گیمس کو نئی نسل کے لئے تباہ کن قرار دیا ہے۔

انکولہ : کون کھیل رہا ہے 'چور پولیس' کا کھیل؟ ایڈیشنل ایس پی پر جان لیوا حملہ ۔ غنڈوں پر درج نہیں ہوا اقدامِ قتل کا کیس!

دو دن پہلے انکولہ تعلقہ کے ہٹّی کیری ٹول گیٹ پر ہنگامہ آرائی کرنے اور ایک پولیس آفیسر پر حملہ کی کوشش کیے جانے کی رپورٹ میڈیا میں آئی تھی۔ اور یہ بھی بتایا گیا تھا کہ پولیس نے  ہنگامہ کرنے والوں کی خوب دھلائی کی ہے اور ان پر پولیس آفیسر کو اپنے فرائض انجام دینے سے روکنے کا کیس ...

کاروار: تعلقہ پنچایت کی تازہ حلقہ بندی کے لئے ریاستی الیکشن کمیشن کی ہدایات سے پیدا ہوئی الجھن ۔ ڈانڈیلی کی 10 ہزار آبادی کے لئے 11 سیٹیں ۔ بھٹکل کی 1 لاکھ آبادی کے لئے 9 سیٹیں !

کاروار: تعلقہ پنچایت کی تازہ حلقہ بندی کے لئے ریاستی الیکشن کمیشن کی ہدایات سے پیدا ہوئی الجھن ۔ ڈانڈیلی کی 10 ہزار آبادی کے لئے 11 سیٹیں ۔ بھٹکل کی 1 لاکھ آبادی کے لئے 9 سیٹیں !