بھٹکل میں آوارہ کتوں کی بڑھتی ہوئی تعدادسے عوام پریشان

Source: S.O. News Service | Published on 5th September 2019, 5:57 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل5/ستمبر (ایس او نیوز)بھٹکل تعلقہ میں ایک طرف عوام بارش سے پریشان ہیں۔ دوسری طرف مچھروں کی وجہ وبائی امراض کا خدشہ سر پر منڈلارہا ہے۔ تیسری طرف سڑکوں اور گلیوں میں آوارہ کتوں کے جھنڈ نے عوام کو خوفزدہ کردیا ہے۔

بھٹکل تعلقہ کے دیہاتوں اور شہروں میں ہرجگہ کتوں کے جھنڈ دوڑتے پھرتے نظر آتے ہیں۔ پیدل چلنے والوں اور بچوں پر غراتے ہوئے ان کا پیچھا کرتے ہیں جس سے خوفزدہ ہوکر لوگوں کے گرنے اور زخمی ہوجانے کے واقعات بھی ہورہے ہیں اور کتوں کے کاٹنے وجہ سے لوگوں کو علاج معالجے کے لئے بھٹکل سے باہر بڑے اسپتالوں میں بھیجنے تک کی نوبت آچکی ہے۔ اس وجہ سے اسکول جانے والے طلبہ کے اندر بھی خوف وہراس کی کیفیت دیکھی جاسکتی ہے۔ اکثر وبیشتر ہائی وے اور نیشنل ہائی وے پر اچانک ان کتوں کے درمیان میں آجانے کی وجہ سے کئی حادثات رونما ہوچکے ہیں۔

سڑک کنارے پھینکے گئے کچرے کی تھیلیوں کی چھین جھپٹ اورسڑکوں پر گندگی پھیلانے کے منظر بھی اکثر مقامات پر دیکھے جاسکتے ہیں۔پورا دن سڑکوں اور گلیوں میں آوارہ گردی اور ہنگامہ مچانے کے بعد یہ کتے گروپس بناکر کسی مکان، خالی میدان یا دکانوں کے شیڈس میں پناہ لیتے ہیں اور رات بھر چیخ وپکار اور اودھم مچاتے رہتے ہیں۔گھروں کے باہر رکھی گئی چپلیں اور دیگر اشیاء یہاں سے وہاں لے جانا اور چیر پھاڑ کر دور کہیں پھینک دینارات کے وقت ان کتوں کا محبوب مشغلہ بن گیا ہے۔

حالانکہ اس مسئلے کو کئی بار میڈیا میں اٹھایا گیا ہے۔ بلدیاتی افسران کے علم میں بھی لایا گیا ہے مگرکتوں کی ا س آوارگی اور ہراسانی کے سلسلے میں تعلقہ انتظامیہ کی طرف سے کوئی خاص کارروائی نہیں کی جارہی ہے۔ البتہ زبانی جمع خرچ دکھاتے ہوئے انتظامیہ کی طرف سے یقین دہانی کی جاتی ہے کہ آوارہ کتوں سے ہونے والی ہراسانی پر قابو پالیا گیا مگر حقیقت میں اب تک ایسا کچھ بھی نظر نہیں آتا۔ الٹے دن بدن یہ مسئلہ اور زیادہ گمبھیر ہوتا جارہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں بجلیوں کی چمک اور بادلوں کی گرج کے ساتھ موسلادھار بارش؛ بینگرے میں ایک گھرکو نقصان، ماولی میں الیکٹرانک اشیاء جل کر راکھ؛ الیکٹرک سٹی سپلائی بری طرح متاثر

آج منگل دوپہر کو ہوئی موسلادھار بارش اور بجلیاں گرنے سے ایک مکان کو نقصان پہنچا وہیں دوسرے ایک مکان کی الیکٹرانک اشیاء جل کر خاک ہوگئی۔

بھٹکل: جے این یو کے لاپتہ متعلم نجیب احمد کو ڈھونڈ نکالنے  اور اُس کے ساتھ انصاف کرنے  کا مطالبہ لے کر ایس آئی اؤ آف انڈیا کا ملک گیر احتجاج : بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کو بھی دیا گیا میمورنڈم

15اکتوبر 2016کو جواہر لال یونیورسٹی میں ایم ایس سی کےفرسٹ ائیر میں زیر تعلیم نجیب  احمد یونیورسٹی کے ہاسٹل سے لاپتہ ہوئے تین سال ہورہےہیں ،گمشدگی کی پہلی رات کو ہاسٹل میں اے بی وی پی کے کارکنان نے حملہ کیا تھا، مگر اس معاملے میں ابھی تک کوئی پیش رفت نہیں ہونے پر اسٹوڈنٹس اسلامک ...

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا کا تبادلہ :ایماندار آفسران کے تبادلوں پر عوام میں حیرت ؛کے اے ایس آفیسر  اے رگھو ہونگے نئے اے سی

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا کا تبادلہ کرتےہوئے ریاستی حکومت نے حکم نامہ جاری کیا ہے، ساجد ملا کے عہدے پر کے اے ایس جونئیر گریڈ کے پروبیشنری افسر اے رگھو کا تقر ر کیاگیا ہے۔ اس طرح تعلقہ کے اہم کلیدی عہدوں پر فائز ایماندار افسران کے تبادلوں کولے کرعوام تعجب کا اظہار کیا ہے۔

محکمہ جنگلات کے افسران کے خلاف بھٹکل پولس اسٹیشن کے باہر احتجاج؛ اے ایس پی کو دی گئی تحریری شکایت

جنگلاتی زمین کے حقوق کے لئے لڑنے والی ہوراٹا سمیتی کے کارکنان نے آج بھٹکل ٹاون پولس تھانہ کے باہر جمع ہوکر محکمہ جنگلات کے اہلکاروں کے خلاف کاروائی کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاج کیا اور بھٹکل سب ڈیویژن کے اسسٹنٹ ایس پی  کے نام میمورنڈم پیش کیا۔ 

ضلع شمالی کینرا میں آج بھی 24ہزار خاندان گھروں سے محروم ! کیا آشریہ اسکیم کے ذریعے صرف دعوے کئے جاتے ہیں ؟

حکومت کی طرف سے بے گھروں کو مکانات فراہم کرنے کی اسکیمیں برسہابرس سے چل رہی ہیں۔ اس میں سے ایک آشریہ اسکیم بھی ہے۔ سرکاری کی طرف سے ہر بار دعوے کیے جاتے ہیں کہ بے گھروں اور غریبو ں کا چھت فراہم کرنے کے منصوبے پوری طرح کامیاب ہوئے ہیں۔

بھٹکل کے آٹو رکشہ ڈرائیور بھی ایماندار؛ بھٹکل میں تین لاکھ مالیت کے زیورات سے بھری بیگ لے کر رکشہ ڈرائیور پہنچا پولس اسٹیشن

  بھٹکل میں  راستے پر  کوئی  قیمتی چیز کسی کو گری ہوئی ملتی ہے  تو اکثر لوگ  اُسے اُس کے اصل مالک تک  پہنچانے کی کوشش کرنا عام بات ہے،  بالخصوص مسلمانوں کو راستے میں پڑی ہوئی  کوئی قیمتی چیز مل جاتی ہے تو     لوگ یا تو خود سے سوشیل میڈیا  میں پیغام وائرل کرکے  اُسے اُس کے اصل ...