کیا ریاستوں کیلئے جرمانہ”جاں سے زیادہ“ ہے؟گڈکری گجرات کی طرح کرناٹک میں بھی نئے ٹرافک جرمانوں میں تخفیف کرنے ایڈی یورپا کی محکمہ ٹرانسپورٹ کو ہدایت

Source: S.O. News Service | Published on 12th September 2019, 10:48 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی،12؍ستمبر(ایس او نیوز؍یواین آئی) ریاستوں میں موٹر گاڑیوں پر جرمانہ کے تعلق سے جاری بحث ومباحثہ کے بیچ ٹرانسپورٹ کے وزیر نتن گڈکری نے آج کہاکہ ریاستیں چاہیں تو جرمانہ پر نظر ثانی کرسکتی ہیں اور انھیں اس کے تعلق سے پریشانی نہیں ہے -گڈکری نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ ریاستیں چاہیں تو جرمانہ میں تبدیلی کرسکتی ہیں لیکن لوگوں کی زندگی محفوظ ہونی چاہئے -ٹریفک جرمانہ کی رقم بڑھانے پر انہوں نے کہاکہ یہ آمدنی بڑھانے کی اسکیم نہیں ہے -انہوں نے سوال کیا کہ آپ ڈیڑھ لاکھ لوگوں کی موت سے تشویش میں مبتلا نہیں ہیں -لوگوں کو قانون کا احترام کرنا چاہئے اور ان میں قانون کا خوف بھی ہونا چاہئے -انہوں نے کہاکہ آمدنی بڑھانا حکومت کا مقصد نہیں ہے -اس کا مقصد سڑک کو محفوظ بناناہے اور حادثات کو کم کرنا ہے -انہوں نے سوال کیاکہ کسی کی زندگی سے جرمانہ اہم ہے؟لوگ ضابطہ نہیں توڑیں گے تو جرمانہ نہیں لگے گا -دریں اثناء اوڈیشہ کے وزیرا علیٰ نوین پٹنائک نے کہاہے کہ ریاست میں نئے جرمانہ کے پروویژن کو نافذ کرنے کے لیے لوگوں کو تین ماہ کی مہلت دی جانی چاہئے -بھارتیہ جنتاپارٹی کی حکمرانی والی ریاست گجرات کے وزیرا علیٰ وجے روپانی نے کہاہے کہ مرکزی ٹریفک جرمانہ کو کم کیاجاناچاہئے اور ریاستی حکومت16ستمبر کو جرمانہ کی نئی شرحوں کا اعلان کرے گی -نئے ٹرافک قوانین اور بھاری جرمانوں سے پریشان عوام کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے ایک راحت بخش اطلاع یہ ملی ہے کہ حکومت کرناٹک نے بھی گجرات کے طرز پر ٹرافک قوانین کی خلاف ورزیوں پر لاگو ہونے والے جرمانوں میں بھاری پیمانے پر کمی لانے کے لئے احکامات جاری کردئیے ہیں - مرکزی حکومت کی طرف سے نئے موٹر وہیکل ایکٹ کے مطابق ٹرافک قوانین کی پامالی پر بھاری جرمانوں کا نفاذ کیا گیا- ملک گیر پیمانے پر یکم ستمبر سے یہ قانون لاگو کیا گیا لیکن ملک کی تمام ریاستوں میں اس قانون کے نفاذ کو شدید عوامی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے- اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے مرکزی وزیر برائے بری نقل و حمل نتن گڈکری نے کل یہ اعلان کردیا تھا کہ جرمانے کی شرح متعین کرنے کا اختیار ریاستی حکومتوں پر چھوڑ دیا جائے گا- اس اعلان کے فوراً بعد کل گجرات کے وزیر اعلیٰ وجئے روپانی نے اعلان کردیا تھا کہ ان کی ریاست ٹرافک قوانین کی پامالی پر لگنے والے جرمانے میں 90فیصد کمی لائے گی - کرناٹک میں بھی نئے ٹرافک جرمانوں پر عوام کی شدید مزاحمت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے- اپوزیشن لیڈر سدارمیا کے علاوہ ریاستی وزیر سری راملو اور دیگر رہنماؤں نے بھی مطالبہ کیا تھا کہ ٹرافک جرمانوں پر نظر ثانی کی جائے- آج وزیر اعلیٰ ایڈی یورپا نے اس سلسلہ میں محکمہ ٹرانسپورٹ کے افسروں کو طلب کیا او ر ان کے ساتھ میٹنگ کے دوران ہدایت دی کہ ریاست میں ٹرافک جرمانوں کو کس حد تک گھٹایا جا سکتا ہے اس کا جائزہ لے کر انہیں پانچ دن کے اندر رپورٹ پیش کی جائے- اس میٹنگ کے بعد اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے اعلا ن کیا کہ ریاست میں گجرات کے طرز پر ٹرافک جرمانوں میں کمی لانے کا فیصلہ لیا گیا ہے - اس سلسلے میں انہوں نے ٹرانسپورٹ محکمے کے افسروں کو ہدایت دی ہے کہ اضافی جرمانوں کی وصولی فوراً روک دی جائے- انہوں نے کہا کہ بعض سنگین نوعیت کی خلاف ورزیوں پر نیا افزود جرمانہ برقرار رکھا جائے گا البتہ معمولی قسم کی خلاف ورزیوں پر لگنے والے بھاری جرمانے کو گھٹانے کا فیصلہ لیا گیا ہے-وزیر اعلیٰ نے کہا کہ انہوں نے افسروں کو ہدایت دی ہے کہ ٹرافک جرمانوں کے اطلاق کے لئے گجرات ماڈل کاجائزہ لے کرریاست میں بھی وہی لاگو کردیا جائے- نائب وزیر اعلیٰ اور وزیر ٹرانسپورٹ لکشمن ساودی نے بھی اس بات کی تصدیق کی کہ وزیر اعلیٰ نے یہ حکم صادر کیا ہے کہ ریاست میں نئے ٹرافک جرمانوں کو واپس لیا جائے -انہوں نے کہا کہ محکمہ ٹرانسپورٹ کے افسروں کے ساتھ میٹنگ کے دوران وزیر اعلیٰ نے یہ ہدایت جاری کی ہے کہ ریاست میں نئے ٹرافک جرمانوں کی وصولی روک دی جائے اور گجرات حکومت نے جو طریقہ اپنایا ہے اس کا جائزہ لے کر کرناٹک میں بھی اسے لاگو کیا جائے-

ایک نظر اس پر بھی

سولیا: پہاڑی مہم جو ٹیم کا ایک رکن ہوگیا لاپتہ۔قریبی جنگلات میں جاری ہے تلاشی مہم 

بنگلورو کی ایک کمپنی کے ملازمین کی ٹیم سبرامنیا میں واقع پہاڑی ’کمارا پروتا‘ کو سر کرنے کی مہم پر نکلی تھی۔ لیکن واپسی کے وقت ٹیم کا ایک رکن جنگلات میں اچانک لاپتہ ہوگیا ہے، جس کی شناخت سنتوش (25سال) کے طور پر کی گئی ہے۔

سیلاب متاثرین سے وزیر اعظم کو کوئی ہمدردی نہیں منڈیا میں منعقدہ پرتیبھا پرسکار کے جلسہ سے سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا کا خطاب

ملک کے وزیر اعظم کو سیلاب متاثرین سے کوئی ہمدردی نہیں ہے۔ پچھلے ایک سو سال سے کبھی نہ دیکھا گیا سیلاب ریاست میں آیا ہے اور ہزاروں افراد کی زندگی تباہ ہوچکی ہے۔

آئی ایم اے فراڈ کیس کا ایک نیا موڑ، قدآور شخصیات راڈر پر، منصور خان نے سابق وزیر دیش پانڈے پر 5/کروڑ روپئے طلب کرنے کا الزام لگایا 

آئی ایم اے فراڈ کیس دن بدن نیا زاویہ اختیار کرتا جارہا ہے، اس کیس کے کلیدی ملزم اور آئی ایم اے کے سربراہ منصور خان نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق ریاستی وزیر اور سینئر کانگریس لیڈر آر وی دیش پانڈے نے آئی ایم اے کو 600کروڑ روپئے کا قرضہ حاصل کرنے کے لئے نو آبجیکشن سرٹی فکیٹ (این او سی) جاری ...

دہلی میں جماعت اسلامی ہند کا یک روزہ ورکشاپ۔ امیر جماعت نے کہا؛ ہر زمانے میں سخت اور چیلنجنگ حالات میں ہی دعوت دین کا کام انجام دیا گیا ہے

 جماعت اسلامی ہند حلقہ دہلی کا یک روزہ ورکشاپ برائے ذمہ دران حلقہ،انڈین انسٹی ٹیوٹ آف اسلامی اسٹڈیز ابو الفضل انکلیو، اوکھلا میں منعقد ہوا۔ ورکشاپ میں نئی میقات 2019تا2023کی پالیسی پروگرام کی تفہیم کرائی گئی۔ صبح 10  بجے  سے شام تک چلے اس ورکشاپ میں جماعت اسلامی ہند دہلی کے ...

ایک قوم‘ایک زبان معاملہ: سیاسی قائدین کی جانب سے شدید رد عمل کا اظہار

اداکار سے سیاست داں بنے جنوبی ہند چینائی کے کمل ہاسن نے ایک قوم ایک زبان کے معاملہ میں بی جے پی قومی صدر امیت شاہ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان 1950ء میں کثرت وحدت کے وعدے کے ساتھ جمہوریہ بناتھا اور اب کوئی شاہ یا سلطان اس سے انکار نہیں کرسکتا ہے۔

بی جے پی حکومت کی اُلٹی گنتی شروع: کماری شیلجہ

ہریانہ کانگریس کی ریاستی صدر اور رکن پارلیمنٹ کماری شیلجہ نے آج دعوی کیا کہ ریاست کی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوگئی ہے کیونکہ عوام اس حکومت کی بدنظمی سے تنگ آچکے ہیں۔

جموں و کشمیر کے سابق سی ایم فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت حراست میں لیا گیا

جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کی حراست لیا گیا ہے۔ان کے حراست کو لے کر سپریم کورٹ میں داخل عرضی پر سماعت کے دوران عدالت نے مرکزی حکومت کو ایک ہفتے کا نوٹس دے کر جواب دینے کے لئے کہا گیا ہے۔